سی برڈ منصوبے کے لئے زمین گنوانے والوں کو 250کروڑ روپے معاوضہ ادا ہوچکا ہے:ڈپٹی کمشنر نکول

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th February 2018, 8:30 PM | ساحلی خبریں |

کاروار، 19؍فروری(ایس او نیوز) ضلع ڈپٹی کمشنر ایس ایس نکول کے مطابق بحری اڈے سی برڈ منصوبے کے ضمن میں جوزمینیں تحویل میں لی گئی تھیں، ان کے مالکان کو دیے جانے والے معاوضے کا مسئلہ جو گزشتہ تیس برسوں سے اٹکا پڑا تھا اب مرکزی حکومت کے محکمۂ دفاع کے ذریعے حل ہوگیا ہے۔

ڈی سی نے کاروار میں کمرشیل پورٹ کے دوسرے مرحلے کی توسیع کے سلسلے میں منعقدہ ایک میٹنگ کے دوران یہ بات بتائی۔پورٹ کی توسیع کے تعلق سے عوام کی طرف سے حمایت اور مخالفت میں پیش کیے گئے خیالات کو جاننے کے بعد انہوں نے اپنے تاثرات بیان کیے۔اور کہا کہ ضلع انتظامیہ عوامی مفاد کو سامنے رکھ کر منصوبوں پر عمل کرتی ہے۔جہاں تک سی برڈ منصوبے سے بے گھر ہونے والوں کا معاملہ ہے اس میں اب تک 250کروڑ روپے معاوضہ اداکیا جا چکا ہے جبکہ حکومت نے 220کروڑ روپے عدالت میں جمع کروائے ہیں۔

انہوں نے مزید بتایا کہ ضلع میں روایتی ماہی گیری کو نقصان نہ پہنچنے جیسے انتظامات کیے گئے ہیں۔پورے ملک میں ضلع شمالی کینرا ہی ایک ایسا ضلع ہے جہاں پر ’لائٹ فشنگ‘ پر پابندی لگائی گئی ہے۔اس کے علاوہ ضلع میں بے روزگاروں کو روزگار دلانے کے لئے کئی مرتبہ ’روزگار میلہ‘کا انعقاد کیا گیا مگر یہاں کے بے روزگاروں کی طرف سے اس ضمن میں زیادہ تعاون اور دلچسپی کا مظاہرہ نہیں ہوا۔ضلع کے باہر سے نوجوان ان میلوں میں شرکت کرتے ہیں، مگر ہمارے اپنے ضلع سے بے روزگار نوجوان اس میں اپنے آپ کو رجسٹر نہیں کرواتے ۔ڈی سی نے نوجوانوں سے اپیل کی کہ صرف نوکری نہ ملنے کی بات کہہ کر بے روزگار رہنے کے بجائے کوئی فن او رہنر سیکھ کر خودروزگار کی طرف قدم بڑھائیں کیونکہ اس کی بڑی اہمیت ہوا کرتی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار میں مسلسل بارش کے نتیجےمیں ماہی گیری ٹھپ : ماہی گیر بری طرح متاثر

ہرسال اگست کے مہینےمیں ماہی گیر سمندر میں مچھلی شکار کے لئے نکلتےہیں، لیکن امسال اگست کے دوسرے ہفتےسے جاری طوفانی ہواؤں کے ساتھ موسلا دھار بارش  نےجہاں رہائشی علاقوں ، زراعت وغیرہ کو متاثر کیا ہے وہیں ماہی گیر پر بھی اس کے کافی اثرات نظر آرہے ہیں۔ دوتین کی بارش کو دیکھتے ہوئے ...

اترکنڑا ضلع میں مسلسل بارش : ضلع کے سرسی ، سداپور اور یلاپور زیادہ متاثر ،کئی گھروں کو نقصان

ضلع بھر میں گذشتہ دو تین دنوں سےجاری طوفانی ہواؤں اور موسلا دھار بارش  سے ضلع کے کئی مقامات متاثر ہوئے ہیں۔ موصولہ اطلاع کے مطابق سرسی،سداپور اور یلاپور میں زیادہ نقصانات ہوئے ہیں مزید دو تین دن بارش جاری رہنے کے پیش نظر پیشگی اقدامات کئے گئے ہیں۔ اور پرائمری اور ہائی اسکولس ...

مرڈیشور کلسٹر لیول پرتیبھا کارنجی مقابلہ جات میں نیو شمس اسکول کے طلبا کا بہترین مظاہرہ

محکمہ تعلیمات عامہ کاروار، بی ای اؤ دفتر بھٹکل کے اشتراک سے ہیبلے پنچایت حدود کی بی بی منٹسری اسکول میں مرڈیشور نیشنل کالونی کلسٹر لیول اردو پرائمری اسکول پرتیبھا کارنجی مقابلہ جات میں تربیت ایجوکیشن سوسائٹی کے نیو شمس اسکول کے طلبا نے بہتر ین کارکردگی کا مظاہرہ پیش کیا ہے۔

بھٹکل کےقریب آننت واڑی میں دل کو دہلادینے والا حادثہ؛ ٹمپو سے ٹکر لگتے ہی بائک دھماکے کے ساتھ پھٹ پڑی؛ تین کی موقع پر موت

یہاں سے قریب 30 کلو میٹر دور آننت واڑی نیشنل ہائی وے  پر ہوئے ایک دل کو دہلا دینے والے سڑک حادثے میں تین لوگوں کی اُس وقت موت واقع ہوگئی جب ان کی بائک ایک ٹمپو سے ٹکراتے ہی دھماکے کے ساتھ پھٹ پڑی۔ حادثہ ہوناور تعلقہ کے منکی پولس تھانہ حدود میں منگل شام قریب چار بجے پیش آیا۔

ساحلی علاقوں میں زبردست بارش جاری؛ یلاپور میں چٹان کھسک گئی؛ چار گھنٹوں تک نیشنل ہائی وے بند؛ بس پر گرتے گرتے بچی چٹان

ساحلی علاقوں میں بھاری بارش کا سلسلہ جاری ہے اور پوری رات ان علاقوں میں زبردست بارش ہوئی ہے۔ آج صبح ویسے کچھ دیر کے لئے بارش رُکتے رُکتے گررہی ہے، مگر اسمان مکمل طور پر ابرآلود ہے۔