’’یس سر نہیں، اب مدھیہ پردیش کے اسکولوں میں’’جے ہندسر‘‘بولیں گے بچے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th September 2017, 9:51 PM | ملکی خبریں |

بھوپال،13؍ستمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)مدھیہ پردیش کے سرکاری اسکول آہستہ آہستہ روز نئے استعمال کے اسکول بنتے جارہے ہیں۔ریاست کے سکول تعلیم وزیر وزیر وجے شاہ نے پہلے اسکولوں کو زیادہ پیسہ دینے والی کمپنیوں کے نام کرنے کااعلان کیاتھا،تواب کہاہے کہ طالب علم حاضری کے دوران ’’یس سر‘‘بلکہ ’’جے ہندسر‘‘بولیں گے۔اس کاآغازیکم اکتوبر سے تجرباتی طورپر ستنا ضلع سے ہوگا۔اسکول وزیر شاہ منگل کو ستناضلع کے چترکوٹ میں تھے،یہاں ضمنی اسمبلی الیکشن ہونے والاہے،اس لئے وزراء کی دلچسپی بڑھی ہوئی ہے۔اس حکم میں شاہ نے اسکول کے تعلیمی سیکشن کے افسران سے ملاقات کی۔انہوں نے کہا کہ نئی نسل میں حب وطن کاجذبہ بڑھے، اس کے لئے تمام سرکاری اسکولوں میں ہر روز شروع میں قومی گیت گانے کے احکامات دئے گئے ہیں۔
 

ایک نظر اس پر بھی

بہارمیں مورتی وسرجن پربی جے پی ،جدیومیں ٹھنی

محرم کے دن مجسمہ کابھسان نہیں کیا جانا چاہئے، مغربی بنگال حکومت کے اس حکم پروزیراعلیٰ ممتا بنرجی کی طرف سے تنقیدکی گئی ہے۔ اب اسی طرح کا حکم بہار کے وزیراعلیٰ نیتش کمار نے دیاہے۔

جتندر سنگھ نے کی جموں و کشمیر کے طلباء سے ملاقات

شمال مشرقی خطے کی ترقی کے وزیر جتیندر سنگھ نے دارالحکومت کے دورے پر آئے جموں و کشمیر کے طلبہ کے ایک گروپ کے ساتھ آج بات چیت کی اور نوجوانوں پر مرکوز مرکزی حکومت کے بہت سے اقدامات کے بارے میں تفصیل سے بتایا۔