ٹیکسٹائل اور دستکاری کے فروغ کے لیے اسکیمیں اوراقدامات جاری:حکومت 

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 10th August 2018, 3:29 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:9/ اگست (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)حکومت ٹیکسٹائل اور دستی مصنوعات خاص طور پرٹیکنالوجی کا درجہ بڑھانے ، بنیادی ڈھانچہ کی تشکیل، صلاحیت سازی جس میں ترمیم شدہ ٹکنالوجی کا درجہ بڑھانے کے فنڈ کی اسکیم (اے ٹی یوایف ایس) پاور ٹیکس انڈیا اسکیم بھی شامل ہیں۔ ٹیکسٹائل پارکوں کی یکجہتی کی اسکیم ، سمرتھ -ٹیکسٹائل سیکٹر میں صلاحیت سازی کی اسکیم ، سلک سماگرا یعنی ریشم کو ترقی دینے کی اسکیم، شمال مشرقی خطے کی ٹیکسٹائل کو فروغ دینے کی اسکیم (این ای آر ٹی پی ایس ) نیشنل ہنڈی کرافٹ ڈیولپمنٹ پروگرام (این ایچ ڈی پی) اور کمپریہنسیو ہنڈی کرافٹس کلسٹر ڈیولپمنٹ اسکیم (سی ایچ سی ڈی ایس) پر بھی عمل کیا جارہا ہے۔حکومت نے کپڑا سازی اور اس سے متعلق شعبے میں سرمایہ کاری ، روزگار اور برآمدات کو بڑھاوا دینے کے لئے ایک خصوصی پیکج شروع کیا ہے۔ ا س خصوصی پیکج کا مقصد روزگار کے ایک کروڑ تک مواقع پیدا کرنا اور امریکہ کی طرف سے برآمدات کو 31 ارب ڈالر تک بڑھانا اور تین سال میں 80 ہزار کروڑ کا سرمایہ راغب کرنا تھا۔ اب تک اس پیکج کے ذریعہ 5728 کروڑ روپے کی فاضل برآمدات ہوچکی ہیں اور 25345 کروڑ روپے کی فاضل سرمایہ کاری حاصل کی جاسکی ہے۔اے ٹی یو ایف ایس کے تحت 7 سال کے لئے یعنی 16-2015 سے 22-2021 تک مجاز مشینری کے لئے ایک بار کا سرمایہ فراہم کرنے کے لئے 17822 کروڑ روپے منظور کئے گئے ہیں۔حکومت نے این ای آر ٹی پی ایس کے تحت 18.18 کروڑ روپے کی لاگت سے بودھ جونگ نگر، اگرتلہ میں کپڑا سازی کا ایک مرکز قائم کیا ہے (یہ تین یونٹو ں پر مشتمل ہے جس میں سے ہر ایک میں سلائی کی 100-100 مشینیں لگی ہوئی ہیں۔ این ای آر ٹی پی ایس کے تحت اگرتلہ میں 3.71 کروڑ روپے کی لاگت سے سلک کاایک پرنٹنگ یونٹ بھی قائم کیا ہے۔ اس کی صلاحیت تقریباً 1.5 لاکھ میٹر سلک کے کپڑے کی سالانہ پرنٹنگ کرنا ہے ۔ حکومت نے تریپورہ میں ہنڈلوم سیکٹر کو فروغ دینے کے لئے بلاک کی سطح پر تین کلسٹر قائم کئے ہیں۔ ان پر 4.28 کروڑ روپے لاگت آئی ہے۔ٹیکسٹائل کے وزیر مملکت جناب اجے ٹمٹا نے آج لوک سبھا میں ایک سوال کے تحریری جواب میں یہ اطلاع فراہم کی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی آفس کے پاس پھر سوامی اگنی ویش کی پٹائی

بی جے پی آفس کے پاس جمعہ کو سوامی اگنی ویش کی پھر سے پٹائی ہوئی ۔ ایک خاتون نے ان کے اوپر چپل پھینک کر مارا جبکہ کئی لوگ انہیں مارنے کی کوشش کر رہی رہے تھے کہ پولس نے بچاو کرتے ہوئے انہیں اپنی گاڑی میں بیٹھا کرلے کر چلی گئی۔

کووند ،مودی ،پرنب ،منموہن ،سونیا نے واجپئی کو خراج عقیدت پیش کیا

صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند،وزیراعظم نریندرمودی ،سابق صدرجمہوریہ پرنب مکھرجی ،سابق وزیراعظم منموہن سنگھ ،سابق نائب وزیراعظم لال کرشن اڈوانی ،ترقی پسند اتحاد کی چیئرپرسن سونیاگاندھی ،مرکزی وزیرداخلہ راج ناتھ سنگھ ،وزیرخارجہ سشما سوراج ،کئی وزرائے اعلی ،رہنماؤں اور سرکردہ ...

بتیامیں شرپسندوں کے ذریعہ مسجدومدرسہ پر حملہ قابل مذمت:مولانااسرارالحق قاسمی

ممبرپارلیمنٹ مولانا اسرارالحق قاسمی نے یوم آزادی کے موقع پر چمپار ن کے بتیاکی ہاتھی خانہ مسجد ومدرسہ پرشرپسندوں کے ذریعہ کئے گئے حملے کی سخت الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے ملزمین کے خلاف سخت کارروائی کامطالبہ کیاہے۔انہوں نے کہاکہ آج کے دن جبکہ پورا ملک آزادی کا جشن منارہاہے اور ہر ...

وینکیانائیڈونے واجپئی کوآزادہندوستان کاسب سے بڑالیڈربتاکرخراج عقیدت پیش کیا

نائب صدر ایم وینکیا نائیڈونے سابق وزیر اعظم اٹل بہاری واجپئی کے انتقال پر گہرے غم کا اظہار کرتے ہوئے ان کے انتقال کوملک کے لیے ناقابل تلافی نقصان بتایا ہے۔نائیڈو نے اپنے تعزیتی پیغام میں کہاکہ یہ خبرانتہائی افسوسناک ہے کہ اٹل جی نہیں رہے۔میں آج صبح ہی ان کی صحت کی معلومات لینے ...

ڈاکٹر ستیہ پال سنگھ نے شکرتال گھاٹ پر بہاؤ میں تیزی لانے پر تبادلہ خیال کی خاطر میٹنگ کی 

آبی وسائل، دریا کی ترقی اور گنگا کے احیاء کے وزیر مملکت ڈاکٹر ستیہ پال سنگھ نے آج شکرتال گھاٹ پر پانی کے بہاؤ میں تیزی لانے کے معاملے پر ایک میٹنگ کی صدارت کرتیہوئے اترپردیش اور اتراکھنڈ کے آبپاشی کے محکموں کے عہدیداروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ دریائے گنگا کی معاون ندی سلونی میں ...