کیرالہ میں ”لوجہاد“ معاملے کی جانچ کرے این آئی اے: سپریم کورٹ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th August 2017, 11:47 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،11/اگست(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)سپریم کورٹ نے کیرل پولیس کو حکم دیا کہ کیرالہ میں ”لوجہاد“ معاملے کی جانچ کی تفصیلات قومی جانچ ایجنسی (این آئی اے) کے ساتھ شیئر کرے۔ اس معاملے میں ہائی کورٹ نے ایک مسلمان کی ہندو عورت سے شادی کو ”لو جہاد“ قرار دیا تھا۔ کیرل ہائی کورٹ سے شادی منسوخ ہونے کے بعد شفین جہان اسے سپریم کورٹ تک لے کر گیا۔بتا دیں کہ ہائی کورٹ نے کیرل پولیس کو ایسے معاملات کی تفتیش کا حکم دیا تھا۔ عدالت نے کہا کہ وہ پوری تصویر سمجھنے اور یہ جاننے کے لئے این آئی اے کو تحقیقات کا کام سونپا گیا۔کیرل رہائشی شفین جہان کے وکیل نے این آئی اے کو پولیس کے انکوائری ریکارڈ کا جائزہ کرنے پر اعتراض کیا ہے۔ چیف جسٹس جسٹس جگدیش سنگھ کھیہر اور جسٹس دھننجے وائی چندرچوڈ کی بنچ نے اسے سنجیدگی سے لیا۔

بنچ نے کہا کہ اسے محسوس ہوتا ہے کہ درخواست گزار (جہان) نہیں چاہتا کہ اس تنازعہ کے بارے میں عدالت کے سامنے صحیح اور آزادانہ نقطہ نظر سامنے آئے۔ انہوں نے کہا کہ کیرل پولیس کو این آئی اے کو تمام تعاون دینے کی ہدایت دی جاتی ہے۔اس نے کہا کہ اس کے حکم کی فی کیرالہ پولیس کو دی جائے۔این آئی اے کے وکیل ایڈیشنل سالسٹر جنرل مندر سنگھ نے عدالت سے درخواست کی کہ این آئی اے کو ریاستی پولیس کی طرف سے کی گئی تحقیقات کے ریکارڈ کو دیکھنے دیا جائے، ساتھ ہی عدالت نے کہا کہ مرکزی تفتیشی ایجنسی کیرالہ پولیس کو منصفانہ طریقے سے مدد نہیں کر پائے گی اگر اس کی انکوائری ریکارڈ نہیں دیکھنے دیا جاتا ہے۔بنچ نے تبصرہ کیا کہ ہم پوری تصویر جاننا چاہتے ہیں، این آئی اے پر کسی کو شک کیوں ہونا چاہئے؟ کیا آپ قومی جانچ ایجنسی پر شک کر رہے ہیں؟ اگر این آئی اے کو ریکارڈ دکھایا جاتا ہے تو ہمیں کوئی اعتراض نہیں ہے۔ اس سے پہلے، جانچ ایجنسی نے عدالت میں کیرالہ پولیس کو اس معاملے کی جانچ کا ریکارڈ ظاہر کی ہدایت دینے کے لئے ایک عرضی دائر کی۔بتا دیں کہ جہان نے گزشتہ سال دسمبر میں ایک ہندو عورت سے نکاح کیا تھا۔ کیرل ہائی کورٹ نے اس کا نکاح منسوخ کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ ملک میں خواتین کی آزادی کی توہین ہے۔ ہندو خاتون نے اسلام قبول کرنے کے بعد جہان سے نکاح کیاتھا۔ الزام ہے کہ خاتون کو شام میں اسلامک اسٹیٹ کے مشن نے بھرتی کیا تھا اور جہان صرف اس کے لیے کام کرتاتھا۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیر اعلیٰ نتیش کمارکا کشن گنج کے سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ;ایم پی مولانااسرارالحق قاسمی نے میمورنڈم سونپ کر سیلاب متاثرین کی فوری بازآبادکاری کامطالبہ کیا

بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار نے آج کشن گنج کے سیلاب زدہ علاقوں کا دورہ کرکے سیلاب متاثرین سے ملاقات کی اورراحت وامداد کے کاموں کا جائزہ لیا۔اس موقع پر علاقے کے ایم مولانا اسرارالحق

حادثات سے دکھی پربھونے کہا;ریلوے کے لئے خون اور پسینہ ایک کیا، استعفی پرمودی نے انتظارکرنے کوکہا

گزشتہ پانچ دنوں میں اتر پردیش میں دو ٹرینوں کے حادثات کی اخلاقی ذمہ داری لے کر ریلوے وزیر سریش پربھو استعفی دینے کی پیشکش کی ہے،اگرچہ ان کا استعفی ابھی تک قبول نہیں ہوا تھا۔

حکومت ہماری خاموشی کو بزدلی نہ سمجھے: سید عالمگیر اشرف;رائے پور میں بورڈ کی ہنگامی میٹنگ طلب، ملک بھر میں جاری کیا پیغام،مذہب میں دخل اندازی نا قابل برداشت

مرکزی حکومت کی مسلسل مذہب میں غیر قانونی دخل اندازی حکومت کے لئے اچھا نہیں ہے۔ اپنی ناکامیوں اورمجرموں کو شہ دینے کی مجراانہ سازشوں پر پردہ ڈالنے کے لئے ملک کے