سعودیہ:انٹیلی جنس کی عمارت پربم مارنے والے دہشت گرد کو 20 سال قید

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th February 2018, 8:59 PM | خلیجی خبریں |

دمام12فروری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا )سعودی عرب کے دارالحکومت الریاض میں قائم ایک فوج داری عدالت نے قطیف شہر میں جنرل انٹیلی جنس ادارے کی عمارت پر بم پھینکنے کے الزام میں گرفتار دہشت گرد کو 20 سال قید اور اس کے بعد 20 سال کے لیے بیرون ملک سفر پر پابندی کی سزا سنائی ہے۔العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق سعودی عرب کی عدالت کی طرف سے ملزم کے خلاف پیش کردہ فرد جرم میں انٹیلی جنس ادارے کی عمارت پر بم پھینکنے کے علاوہ دیگر الزامات بھی عاید کیے گئے، اس پر ولی الامر کے حکم سے بغاوت، ملک میں فساد پھیلانے، بدامنی کو ہوا دینے، جنرل انٹیلی جنس ایجنسی کی عمارت پر پٹرول بم پھینکنے، بدنظمی پھیلانے کے لیے گاڑیوں کے ٹائر جلانے، سیکیورٹی حکام کے امور میں مداخلت کرنے، متنازع اجتماعات منعقدہ کرنے اور آٹھ بار القطیف گورنری میں بد نظمی پھیلانے کے الزامات عاید کیے گئے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

یمن : حوثیوں کے لیے کام کرنے والے ایرانی جاسوس عرب اتحاد کے نشانے پر

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے تعز شہر کے مشرقی حصّے میں جاسوسی کے ایک مرکز کو نشانہ بنایا۔ اس مرکز میں ایرانی ماہرین بھی موجود ہوتے ہیں جو باغی حوثی ملیشیا کے لیے کام کرتے ہیں۔

شاہ سلمان اور صدر السیسی کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

سعودی عرب کے فرمانروا خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور مصری صدر عبدالفتاح السیسی کے درمیان ٹیلیفون پر رابطہ ہوا ہے۔ اس موقع پر شاہ سلمان نے مصر کی سلامتی اور استحکام کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔