شامی فوجی اہداف پر امریکی حملے کی مکمل تائید کرتے ہیں: ریاض

Source: S.O. News Service | Published on 7th April 2017, 4:43 PM | خلیجی خبریں |

ریاض،7اپریل(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)سعودی عرب کی وزارت خارجہ کے ایک ذمہ دار نے شامی حکومت کی جانب سے نہتے معصوم شہریوں کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے جواب میں شامی فوجی اہداف پر امریکا کے کروز میزائل حملوں کی مکمل حمایت کا اعلان کیا ہے۔ شامی فوج کے کیمیائی حملوں میں بچوں، خواتین سمیت دسیوں معصوم شامی شہری انتہائی کربناک انداز میں لقمہ اجل بنے۔حالیہ حملے شامی حکومت کے برادر شامی عوام کے خلاف مظالم کا ہولناک تسلسل تھے جنہیں بشار الاسد حکومت کئی برسوں سے اپنے ہی عوام کے خلاف جاری رکھے ہوئے ہے۔مملکت کی وزارت خارجہ کے اعلی عہدیدار نے امریکا کے حالیہ فوجی حملے کی ذمہ اری شامی حکومت پر ڈالتے ہوئے کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دلیرانہ فیصلہ دراصل شامی حکومت کے مسلسل جرائم کا جواب ہے کیونکہ عالمی برادری اب تک بشار الاسد کو اپنے جرائم روکنے میں بری طرح ناکام دکھائی دیتی تھی۔
جمعہ کو علی الصباح دو امریکی بحری جہازوں سے شامی شہر حمص میں الشیعرات فوجی ہوائی اڈے پر ٹوم ہاک میزائلوں کی بارش کی گئی۔ شامی آبزرویٹری نے بتایا ہے امریکی فوجی کارروائی میں شامی فوج کے چار اہلکار ہلاک ہوئے جبکہ ایئر بیس کو بری طرح نقصان پہنچا۔

ایک نظر اس پر بھی

ولی عہد دبئی کی جانب سے’فٹ نس چیلنج‘ میں شرکت کی دعوت

متحدہ عرب امارات کی قیادت بڑے بڑے چیلنجز کا خود مقابلہ کرنے کے ساتھ مملکت کے عوام اور امارات میں مقیم شہریوں کو نئے چیلنجز کا مقابلہ کرنے اور انہیں زندگی کے ہرشعبے میں آگے نکلنے کی صلاحیت پیدا کرنے کے لیے کوشاں ہے۔

اخوانی پروفیسروں پر سعودی یونیورسٹیوں کے دروازے بند،اخوانی نظریات سے دہشت گرد پیدا ہو رہے ہیں: ڈاکٹر سلیمان ابا الخلیل

سعودی عرب کی ایک بڑی دینی درس گاہ جامعہ الامام کے ڈائریکٹر اور سپریم علماء کونسل کے رکن ڈاکٹر سلیمان ابا الخلیل نے کہا ہے کہ یونیورسٹی نے اخوان المسلمون کے افکار سے متاثر تمام شخصیات سے معاہدے ختم کردیے ہیں۔

ولی عہد کا فلاحی تنظیموں کو 50 لاکھ ریال کا عطیہ

سعودی عرب کے ولی عہد، نائب وزیراعظم اور وزیر دفاع شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز نے اپنے ذاتی جیب سے حائل کے علاقے میں فلاحی شعبے میں سرگرم تنظیموں کو پچاس لاکھ ریال کی رقم عطیہ کی ہے۔