شامی فوجی اہداف پر امریکی حملے کی مکمل تائید کرتے ہیں: ریاض

Source: S.O. News Service | Published on 7th April 2017, 4:43 PM | خلیجی خبریں |

ریاض،7اپریل(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)سعودی عرب کی وزارت خارجہ کے ایک ذمہ دار نے شامی حکومت کی جانب سے نہتے معصوم شہریوں کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کے جواب میں شامی فوجی اہداف پر امریکا کے کروز میزائل حملوں کی مکمل حمایت کا اعلان کیا ہے۔ شامی فوج کے کیمیائی حملوں میں بچوں، خواتین سمیت دسیوں معصوم شامی شہری انتہائی کربناک انداز میں لقمہ اجل بنے۔حالیہ حملے شامی حکومت کے برادر شامی عوام کے خلاف مظالم کا ہولناک تسلسل تھے جنہیں بشار الاسد حکومت کئی برسوں سے اپنے ہی عوام کے خلاف جاری رکھے ہوئے ہے۔مملکت کی وزارت خارجہ کے اعلی عہدیدار نے امریکا کے حالیہ فوجی حملے کی ذمہ اری شامی حکومت پر ڈالتے ہوئے کہا کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے دلیرانہ فیصلہ دراصل شامی حکومت کے مسلسل جرائم کا جواب ہے کیونکہ عالمی برادری اب تک بشار الاسد کو اپنے جرائم روکنے میں بری طرح ناکام دکھائی دیتی تھی۔
جمعہ کو علی الصباح دو امریکی بحری جہازوں سے شامی شہر حمص میں الشیعرات فوجی ہوائی اڈے پر ٹوم ہاک میزائلوں کی بارش کی گئی۔ شامی آبزرویٹری نے بتایا ہے امریکی فوجی کارروائی میں شامی فوج کے چار اہلکار ہلاک ہوئے جبکہ ایئر بیس کو بری طرح نقصان پہنچا۔

ایک نظر اس پر بھی

یمن : حوثیوں کے لیے کام کرنے والے ایرانی جاسوس عرب اتحاد کے نشانے پر

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے تعز شہر کے مشرقی حصّے میں جاسوسی کے ایک مرکز کو نشانہ بنایا۔ اس مرکز میں ایرانی ماہرین بھی موجود ہوتے ہیں جو باغی حوثی ملیشیا کے لیے کام کرتے ہیں۔

شاہ سلمان اور صدر السیسی کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

سعودی عرب کے فرمانروا خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور مصری صدر عبدالفتاح السیسی کے درمیان ٹیلیفون پر رابطہ ہوا ہے۔ اس موقع پر شاہ سلمان نے مصر کی سلامتی اور استحکام کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔