سعودی عرب، کرپشن الزامات میں گرفتار 2 شہزادے رہا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 30th December 2017, 12:31 PM | خلیجی خبریں |

ریاض،29/دسمبر(ایجنسی) سعودی عرب میں کرپشن الزامات میں گرفتار مزید 2 شہزادوں کو رہا کردیا گیا۔ غیر ملکی خبر ایجنسی کے مطابق شہزادہ مشعال بن عبداللہ اور شہزادہ فیصل بن عبداللہ کو مالی معاہدے کے بعد رہا کیا گیا ہے۔ دونوں شہزادے سعودی عرب کے سابق فرمانروا شاہ عبداللہ کے بیٹے ہیں اور انہیں دارالحکومت ریاض کے کارلٹن ہوٹل میں قید کیا گیا تھا۔ سعودی اٹارنی جنرل نے شہزادوں کی رہائی کی منظوری دی۔ شاہ عبداللہ کے تیسرے بیٹے شہزادہ ترکی بن عبداللہ تاحال زیر حراست ہیں اور اٹارنی جنرل نے تاحال ان کی رہائی کا فیصلہ نہیں کیا۔ واضح رہے کہ گزشتہ ماہ سعودی حکومت نے انسداد بدعنوانی کی کارروائیوں کے دوران ارب پتی شہزادہ الولید بن طلال سمیت درجنوں شہزادوں اور اعلیٰ حکام کو گرفتار کرلیا تھا جس کے بعد گرفتار افراد کو مشروط طور پر رہا کرنے کا سلسلہ جاری ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

ایرانیوں کا پیغام واضح ہے، وہ نظام کی تبدیلی چاہتے ہیں : شہزادہ رضا پہلوی

سابق شاہ ایران کے بیٹے شہزادہ رضا پہلوی نے ایران میں مظاہروں کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے باور کرایا ہے کہ ایرانی عوام 40 برس تک مذہبی آمریت کے نظام کے تحت زندگی گزارنے کے بعد اس بات پر قائل ہو چکے ہیں کہ اس نظام کی اصلاح ممکن نہیں۔

اب سو فیصد ڈیجیٹل حج؛ آن لائن اور ایپ کے ذریعے3.60 لاکھ درخواستیں موصول؛ سعودی میں مرکزی وزیر مختار عباس نقوی کا بیان

امسال سے حج سو فی صد  دیجٹل  ہوگا اور لوگوں کے ابآن لائن اور موبائل ایپ کے ذریعے درخواستیں موصول کئے جارہے ہیں، اب تک  آن لائن  اور موبائیل ایپ کے ذریعہ تین لاکھ  60 ہزار درخواستیں  حج کمیٹی کو موصول ہوچکی  ہیں۔  ہمارا حج کوٹہ پچھلے سال کی طرح امسال بھی پرایویٹ ٹور اپریٹرس ...