سعودی عرب : 50 سے زیادہ بڑی عالمی فرموں کو کاروبار کے اجازت ناموں کا اجراء

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 22nd September 2017, 11:43 PM | خلیجی خبریں |

نیویارک،22؍ستمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)سعودی عرب کی وزارت تجارت اور سرمایہ کاری نے گذشتہ نو ماہ کے دوران میں پچاس سے زیادہ بڑی عالمی کمپنیوں اور فرموں کو مملکت میں کاروبار کے لیے لائسنس جاری کردیے ہیں۔

سعودی وزیر برائے تجارت اور سرمایہ کاری ماجد القصبی نے نیویارک میں گلوبل بزنس فورم کے موقع پر ایک انٹرویو میں بتایا ہے کہ جن کمپنیوں کو کام کے اجازت نامے جاری کیے گیے ہیں،ان میں 23 امریکی ہیں اور ان میں ایچ پی اور بوئنگ بھی شامل ہیں۔انھوں نے بتایا ہے کہ آیندہ دو ہفتوں میں وزارت تجارت اور سرمایہ کاری چھے مزید کمپنیوں کو سعودی عرب میں کام کے اجازت نامے جاری کردے گی۔ان میں سے دو کمپنیاں ٹیکنالوجی کے شعبے میں کام کرتی ہیں، تین آپریشنز اور مرمت کا کام کرتی ہیں اور ایک دواساز کمپنی ہے۔

انھوں نے کہا کہ سعودی عرب نجی شعبے کی شراکت بڑھانے اور غیرملکی سرمایہ کاری کو راغب کرنے کی کوششوں کے ضمن میں بنک دیوالیہ کے ایک قانون اور تجارتی قرضوں کے نظام سمیت مختلف قوانین نافذ کرنے کے لیے اقدامات کررہی ہے۔سعودی وزیر نے بتایا ہے کہ بنک دیوالیہ قانون منظوری کے لیے شوریٰ کونسل کو بھیج دیا گیا ہے اور ہمیں امید ہے کہ اس پر 2018ء کی پہلی سہ ماہی میں عمل درآمد کا آغاز ہوجائے گا۔تجارتی قرضوں کے نظام سے متعلق قانون کو بھی دو سے تین ہفتوں میں شوریٰ کونسل کو بھیج دیا جائے گا۔اس کے بعد تجارتی فر نچائز کے نظام کا قانون بھی تیار کرکے منظوری کے لیے بھیجا جائے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

عاسکر فرنانڈیز کریں گے منکی کو اڈوپٹ ؛ منکی کی بنیادی مسائل حل کرنے اور ترقیاتی کاموں کو انجام دینے اتحاد و ملن پروگرام میں اعلان

منکی کے ساتھ میرا خاص تعلق رہا ہے اور منکی والوں کے ساتھ بھی میرے ہمیشہ سے اچھے تعلقات رہے ہیں، شیرور کو میں نے اڈوپٹ کیا تھا اور اپنے فنڈ سے شیرور میں ترقیاتی کام کئے تھے، اب میں منکی کے بنیادی مسائل حل کرنے اور وہاں ترقیاتی کاموں کو انجام دینے منکی کو اپنے اختیار میں لے رہا ...

ولی عہد دبئی کی جانب سے’فٹ نس چیلنج‘ میں شرکت کی دعوت

متحدہ عرب امارات کی قیادت بڑے بڑے چیلنجز کا خود مقابلہ کرنے کے ساتھ مملکت کے عوام اور امارات میں مقیم شہریوں کو نئے چیلنجز کا مقابلہ کرنے اور انہیں زندگی کے ہرشعبے میں آگے نکلنے کی صلاحیت پیدا کرنے کے لیے کوشاں ہے۔

اخوانی پروفیسروں پر سعودی یونیورسٹیوں کے دروازے بند،اخوانی نظریات سے دہشت گرد پیدا ہو رہے ہیں: ڈاکٹر سلیمان ابا الخلیل

سعودی عرب کی ایک بڑی دینی درس گاہ جامعہ الامام کے ڈائریکٹر اور سپریم علماء کونسل کے رکن ڈاکٹر سلیمان ابا الخلیل نے کہا ہے کہ یونیورسٹی نے اخوان المسلمون کے افکار سے متاثر تمام شخصیات سے معاہدے ختم کردیے ہیں۔