سعودی عرب کی ادلب میں کیمیائی حملے کی شدید مذمت;ادلب میں کیمیائی حملہ، اسد رجیم کا سفاک چہرہ بے نقاب

Source: S.O. News Service | Published on 6th April 2017, 4:29 PM | خلیجی خبریں |

ریاض،6اپریل(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)سعودی عرب نے شام کے شمالی شہر ادلب کے نواحی علاقے خان الشیخون میں گذشتہ منگل کے روز کیے گئے کیمیائی گیس کے مہلک حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔سعودی وزارت خارجہ کے ایک اہم عہدیدار نے اپنے بیان میں کہا کہ ادلب میں مہلک کیمیائی گیس کے حملے کے نتیجے میں بے گناہ بچے اور عورتیں جاں بحق ہوئی ہیں۔ اس واقعے نے اسد رجیم کے مکروہ اور سفاک چہرے کو ایک بار پھر دنیا کے سامنے بے نقاب کردیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ادلب میں کیمیائی حملہ شام میں جاری انسانی المیے کی بدترین مثال ہے۔ اس مجرمانہ جارحیت کی ذمہ داری اسد رجیم پرعاید ہوتی ہے جو گذشتہ کئی سال سے اپنے ہی عوام کا قتل عام کررہی ہے۔سعودی عرب کا کہنا ہے کہ اسد رجیم کی طرف سے شہریوں کے خلاف کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال سنگین جرم ہونے کے ساتھ ساتھ عالمی قوانین، بین الاقوامی انسانی ضابطوں، اخلاقی اصولوں اور اقوام متحدہ کی قراردادوں بالخصوص سلامتی کونسل کی قرارداد 2118 اورکیمیائی ہتھیاروں کے استعمال پر پابندی کی قرارداد 2209 کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

یمن : حوثیوں کے لیے کام کرنے والے ایرانی جاسوس عرب اتحاد کے نشانے پر

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے تعز شہر کے مشرقی حصّے میں جاسوسی کے ایک مرکز کو نشانہ بنایا۔ اس مرکز میں ایرانی ماہرین بھی موجود ہوتے ہیں جو باغی حوثی ملیشیا کے لیے کام کرتے ہیں۔

شاہ سلمان اور صدر السیسی کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

سعودی عرب کے فرمانروا خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور مصری صدر عبدالفتاح السیسی کے درمیان ٹیلیفون پر رابطہ ہوا ہے۔ اس موقع پر شاہ سلمان نے مصر کی سلامتی اور استحکام کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔