عرب اتحادی طیاروں کی صنعاء کے ہوائی اڈے پر بم بمباری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 15th November 2017, 8:44 PM | خلیجی خبریں | عالمی خبریں |

تہران، 15نومبر (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)سعودی قیادت میں عرب اتحادی طیاروں نے منگل کے روز یمن میں ایران نواز شیعہ حوثی باغیوں کے زیرقبضہ ہوائی اڈے پر بمباری کی۔ بتایا گیا ہے کہ دارالحکومت صنعاء کے ہوائی اڈے پر ہونے والی کارروائی کے نتیجے میں نقصان سے متعلق متضاد خبریں سامنے آ رہی ہیں۔ اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ اس حملے کے باوجود ہوائی اڈے کا بیشتر حصہ قابل استعمال ہے اور وہ امدادی طیاروں کے لیے استعمال کیا جاتا رہے گا۔ تاہم یمنی حکام کے مطابق اس حملے میں ہوائی اڈے کے رن وے اور نیوی گیشن ٹاور کو نقصان پہنچا ہے۔ سعودی قیادت میں عرب اتحاد مارچ 2015 سے یمن میں حوثی باغیوں کے خلاف عسکری کارروائیاں جاری رکھے ہوئے ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

یمن : حوثیوں کے لیے کام کرنے والے ایرانی جاسوس عرب اتحاد کے نشانے پر

یمن میں آئینی حکومت کو سپورٹ کرنے والے عرب اتحاد کے لڑاکا طیاروں نے تعز شہر کے مشرقی حصّے میں جاسوسی کے ایک مرکز کو نشانہ بنایا۔ اس مرکز میں ایرانی ماہرین بھی موجود ہوتے ہیں جو باغی حوثی ملیشیا کے لیے کام کرتے ہیں۔

شاہ سلمان اور صدر السیسی کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ

سعودی عرب کے فرمانروا خادم الحرمین الشریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور مصری صدر عبدالفتاح السیسی کے درمیان ٹیلیفون پر رابطہ ہوا ہے۔ اس موقع پر شاہ سلمان نے مصر کی سلامتی اور استحکام کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔

کرد ملیشیا کی عفرین میں ترکی کے خلاف اسدی فوج سے معاہدے کی تردید

شام کے علاقے عفرین میں ترک فوج کا مقابلہ کرنے والی کردملیشیا ’کرد پروٹیکشن یونٹ‘ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں ان خبروں کی سختی سے تردید کی ہے جن میں دعویٰ کیا گیا تھا کہ کرد ملیشیا نے ترکی کا مقابلہ کرنے کے لیے اسدی فوج کے ساتھ ساز باز کرلیا ہے۔