ایس اے یو نے 34 واں سارک چارٹر ڈے منایا

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 8th December 2018, 2:30 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:7/دسمبر (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)جنوبی ایشیائی یونیورسٹی نے جمعہ کو 34 واں سارک چارٹر ڈے منایا اور امدادی کوششوں کے لئے پارٹنر ممالک کے شراکت کے لئے ان کا شکریہ اداکیاہے۔ وزیر اعظم نریندر مودی نے ایک پیغام میں کہا کہ سارک کے بانی رکن کے طور پر بھارت علاقائی تعاون اور انضمام کو مضبوط کرنے کے لیے مصروف عمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ کچھ سالوں میں ہماری اقدامات ، جیسے جنوبی ایشیا سیٹلائٹ کی پروجیکشن، جنوبی ایشیائی ممالک تک بھارت کے این کے این کی توسیع اور جنوبی ایشیائی یونیورسٹی اور سارک ڈیزاسٹر مینجمنٹ سینٹر کی مسلسل حمایت باہمی رابطہ کے ساتھ کی جار رہی ہے ۔ آج ہی کے دن 1985 میں ارکان ممالک کے ایک چارٹر پر دستخط کرنے کے بعد یہ علاقائی باڈی وجود میں آیا۔جنوبی ایشیائی یونیورسٹی کی صدر کویتا شرما نے کہا کہ یونیورسٹی کی جانب سے کثر بین الاقوامی تعاون میں شامل ہونے اور سارک کے ہر ملک کے کم از کم ایک اعلی تعلیمی ادارے کے ساتھ بھی تعاون بڑھانے کی کوشش جاری ہیں جیسا کہ اب تک 17 یونیورسٹیوں، اداروں کے ساتھ دستخط اور رضامندی کے خطوط سے صاف ہے جن میں سے کچھ سارک علاقے سے باہر کے بھی ہیں۔ ایس اے یو ایک بین الاقوامی یونیورسٹی ہے جس کا فنانسنگ اور انتظام جنوبی ایشیائی علاقائی تعاون کی تنظیم (سارک) کے آٹھ رکن ہوتے ہیں۔ ان میں افغانستان، بنگلہ دیش، بھوٹان، بھارت، مالدیپ، نیپال، پاکستان اور سری لنکا شامل ہیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

شہیدوں کے گھر ’درد کے دریا کا سیلاب‘ تھا اور مودی دریا میں شوٹنگ کر رہے تھے: راہل گاندھی

کانگریس صدر راہل گاندھی نے پلوامہ دہشت گردانہ حملے والے دن وزیر اعظم نریندر مودی کے ایک چینل کے لئے فلم کی شوٹنگ کرنے سے متعلق خبروں کو لے کر جمعہ کو ان پر حملہ بولا اور الزام لگایا کہ جب شہیدوں کے گھر دردکے دریا کا سیلاب تھا تو پرائم ٹائم منسٹر 'ہنستے ہوئے دریا میں شوٹنگ کر رہے ...

عظیم اتحادملک کے لیے اچھانہیں،اپوزیشن کے پاس کوئی نظریہ اورکوئی لیڈرنہیں ہے، امت شاہ کوپھرمہاگٹھ بندھن سے شکایت،کانگریس اورلیفٹ کونشانہ بنایا

جھک کرلوجپا،شیوسینا،جدیواورڈی ایم کے کے ساتھ اتحادکرنے والی بی جے پی صدر امت شاہ نے جمعہ کو اپوزیشن پارٹیوں کے مجوزہ مہاگٹھ بندھن پر حملہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ ملک کے لیے اچھا نہیں ہے۔

بہار کے سابق وزیرالیاس حسین کو 22 سال پرانے کول تار گھوٹالے میں 5 سال کی سزا

مرکزی تفتیشی بیورو(سی بی آئی) کی خصوصی عدالت نے جمعہ کو کول تار گھوٹالے میں بہارکے سابق وزیرالیاس حسین اورچاردیگر کو پانچ سال قید کی سزا سنائی اور ایک ٹھیکیدار کو اس معاملے میں سات سال کی سزا سنائی۔