کنداپور: یتیم خانہ اور بزرگوں کا گھرچلانے والا عیاش سوشیل ورکر اور اس کا ساتھی گرفتار

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 15th March 2019, 8:11 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

کنداپور 15؍مارچ (ایس او نیوز) سپورتھی دھاما نامی یتیم خانہ چلانے والے ٹرسٹ کے سیکریٹری اور اس کے دوسرے ساتھی کو چھوٹے بچوں کے ساتھ جنسی ہراسانی کرنے کے الزام میں اڈپی پولیس نے گرفتار کرلیا ہے۔

کوٹا پولیس افسران کے مطابق ایک دس سالہ لڑکی سپورتی دھاما سے بھاگ کراپنے رشتے داروں کو تلاش کرتی ہوئی شہر میں پہنچی تھی۔ پولیس نے اس سے پوچھ تاچھ کی تو اس نے بتایا کہ وہ سپورتھی دھاما میں قیام کرنا پسند نہیں کرتی کیوں کہ وہاں پر نوجوان مرد آتے ہیں اور بچوں کے ساتھ جنسی ہراسانی کرتے ہیں۔ اس معاملے کی تفتیش کرنے پر سپورتی دھاما کے دیگر یتیم بچوں نے بھی اس بات کی تصدیق کی اور بتایا کہ ہنومنتپّا نامی شخص سپورتی دھاما میں آتا ہے اور بچوں کو بریانی کھلانے کے بعد ان کے ساتھ جنسی فعل کیا کرتا ہے۔پانچ بچوں میں سے ایک نے ٹرسٹ کے سیکریٹری کوٹاکیشوا پر بھی جنسی ہراسانی کا الزام لگایا۔

پولیس نے جب ہنومنتپّا کو گرفتار کرلیا اور اس سے کڑی پوچھ تاچھ کی تواس نے ٹرسٹ کے سیکریٹری کوٹا کیشوا کے بارے میں بھی تصدیق کی وہ بھی بچوں کو اپنی جنسی تسکین کے لئے استعما ل کرتا ہے۔تب پولیس نے کیشوا کو بھی گرفتار کرلیااوردونوں پر پوکسو ایکٹ کی مختلف دفعات کے تحت کیس درج کردیا۔سوشیل ورکر کی حیثیت سے اپنی پہچان بنانے والے کیشوا کے بارے میں عوام کے اندرپہلے سے بدگمانیاں پھیلی ہوئی تھی۔مقامی یووک منڈلا کے اراکین کا کہنا ہے کہ کیشوا ایک جرائم پیشہ شخص ہے۔ کورگا طبقے کے لئے بزرگوں کاگھر چلانے کے لئے بھی وہ سرکاری فنڈ حاصل کرتاہے اور اسے اپنے مقاصد پورا کرنے کے لئے استعما ل کیا کرتاہے۔ بزرگوں کے گھر میں مقیم افراد کو صحیح ڈھنگ کھانے پینے کا سامان فراہم نہیں کیاکرتاتھا۔ عوام کا کہنا ہے کہ پچھلے کئی برسوں سے اس ٹرسٹ کے پردے میں غیر قانونی سرگرمیاں انجام دی جارہی تھیں، لیکن افسران نے اپنی آنکھیں بند کررکھی تھیں۔خود کوٹا کیشواکی بیوی پرمیلا واز نے اس پر اپنی طالبات کے ساتھ ناجائز جنسی تعلقات رکھنے کا الزام لگایا ہے۔کیشوا پر ایک دلت خاتون کی عصمت دری کا کیس بھی چل رہاہے، جس کی سماعت عدالت میں جاری ہے۔

کوٹا پولیس نے یتیم خانے کے بچوں کے ساتھ جنسی زیادتی اور عصمت دری کے معاملات میں کیس درج کرکے دونوں ملزمین کو گرفتار کرنے کے بعد عدالت میں پیش کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

اُترکنڑا سے چھٹی مرتبہ جیت درج کرنے والے اننت کمار ہیگڑے کی جیت کا فرق ریاست میں سب سے زیادہ؛ اسنوٹیکر کو سب سے زیادہ ووٹ بھٹکل میں حاصل ہوئے

پارلیمانی انتخابات میں شمالی کینرا کے بی جے پی امیدوار اننت کمار ہیگڈے نے پوری ریاست کرناٹک میں سب سے زیادہ ووٹوں سے کامیابی حاصل کی ہے۔ انہوں نے 479649 ووٹوں کی اکثریت سے کانگریس  جے ڈی ایس مشترکہ اُمیدور  آنند اسنوٹیکر  کو شکست دی ۔

ریاست میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے سیاسی لیڈروں کی ذلت بھری شکست

ریاست کرناٹکا میں انتخابی میدان میں کبھی ہار کا منھ نہ دیکھنے والے چند نامورسیاسی لیڈران جیسے ملیکا ارجن کھرگے، دیوے گوڈا، ویرپا موئیلی اورکے ایچ منی اَپا وغیرہ کو اس مرتبہ پارلیمانی انتخاب میں انتہائی ذلت آمیز شکست سے دوچار ہونا پڑا ہے۔ 

منگلورو:کلاس میں اسکارف پہننے پر سینٹ ایگنیس کالج نے طالبہ کو دیا ٹرانسفر سرٹفکیٹ۔طالبہ نے ظاہر کیاہائی کورٹ سے رجوع ہونے اور احتجاجی مظاہرے کاارادہ

کلاس روم میں اسکارف پہن کر حاضر رہنے کی پاداش میں منگلورومیں واقع سینٹ ایگنیس کالج نے پی یو سی سال دوم کی طالبہ فاطمہ فضیلا کو ٹرانسفر سرٹفکیٹ دیتے ہوئے کالج سے باہر کا راستہ دکھا دیا ہے۔

بھٹکل میں رمضان باکڑہ کی نیلامی؛ 40 باکڑوں کے لئے میونسپالٹی کو 1126 درخواستیں

رمضان کے آخری عشرہ کے لئے بھٹکل  میں لگنے والے رمضان باکڑہ کی آج میونسپالٹی کی جانب سے  نیلامی کی گئی۔ بتایا گیاہے کہ 40 باکڑوں کی نیلامی کے لئے  میونسپالٹی کے جملہ 1126 درخواست فارمس فروخت ہوئے تھے۔ 

مسلمانوں کے خلاف اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کی بھاری اکثریت کے ساتھ جیت

مسلمانوں کے خلاف ہمیشہ اشتعال انگیز بیانات دینے والوں کو اس مرتبہ لوک سبھا انتخابات میں بھاری اکثریت کے ساتھ کامیابی حاصل ہوئی ہے۔ اترکنڑا لوک سبھا حلقے کے بی جے پی اُمیدوار اننت کمار ہیگڈے جنہوں نے کہا تھا کہ جب تک اسلام رہے گا دہشت گردی رہے گی،اسی طرح انہوں نے  دستور کی ...

ایچ کے پاٹل نے راہل گاندھی کو بھیجا استعفیٰ

ریاست میں کانگریس کے تشہیری مہم کمیٹی کے صدر ایچ کے پاٹل نے لوک سبھا انتخابات میں ریاست میں پارٹی کی شکست کی اخلاقی ذمہ داری لیتے ہوئے اپنے عہدے سے استعفی دینے کی پیشکش کی ہے۔