ہینسی کرونئے کاسامناکرنے سے ڈرتے تھے ’’کرکٹ کے بھگوان‘‘ سچن تندولکر

Source: S.O. News Service | By Sheikh Zabih | Published on 18th May 2017, 12:35 PM | اسپورٹس |

ممبئی، 17مئی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)سچن ہینسی کرونئے کا سامنا کرنے سے گھبراتے تھے ۔ماسٹر بلاسٹر سچن تندولکر نے اپنے 24 سال کے طویل کیریئر کے دوران کئی عالمی بالروں کا سامنا کیا اور وہ سب کے سب پر حاوی رہے لیکن ایک بالر ایسا بھی تھا جس سے ’’کرکٹ کا بھگوان‘‘ بھی خوف کھاتا تھا۔ سچن نے حال ہی میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے اس راز سے پردہ اٹھایا۔ ویسے تو سچن وسیم اکرم، وقار یونس، گلین میک گراتھ، شین وارن، ایلن ڈونلڈ اورکرٹلی ایمبروز جیسے عظیم گیند بازوں کے خلاف کھیل چکے ہیں لیکن وہ ایک ایسے بولر کا سامنا کرنے سے ڈرتے تھے جس کا شاید کسی نے تصوربھی نہیں کیاہوگا۔
ماسٹر بلاسٹر نے ممبئی میں ہوئے ایک ’’پروموشنل ایونٹ‘‘ میں انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ وہ جنوبی افریقہ کے سابق کپتان ہینسی کرونئے کا سامنا کرنے سے کافی گھبراتے تھے۔ انہوں نے کہاکہ 1989 میں جب سے میں نے کھیلنا شروع کیا تب سے کم از کم 25 عالمی بالر کا میں نے سامنا کیا لیکن جن کے خلاف بلے بازی کرنے سے میں کتراتا تھا وہ ہینسی کرونئے تھے، کسی نہ کسی وجہ سے میں ان کی گیند پر آؤٹ ہو جاتا تھا اور مجھے محسوس ہونے لگا تھا کہ میں بولنگ سرے پر کھڑا ہی اچھا ہوں، پچ پر جو بھی دوسرا بلے باز ہوتا تھا میں اس سے کہتا تھا کہ اگر گیند بازی کے لئے شان پولاک یا ایلن ڈونالڈ آئیں تو میں ان کو ہینڈل کر لوں گا لیکن کرونئے کی گیند پر اسٹرائیک تجھے ہی مبارک ہو۔160
کرونئے نے سچن تندولکر کو 32 ون ڈے میچوں میں تین بار آؤٹ کیا جبکہ 11 ٹیسٹ میچوں میں انہوں نے سچن کو 5 بار پویلین کی راہ دکھائی تھی، حالانکہ کرونئے ایک پارٹ ٹائم میڈیم پیسر تھے لیکن اپنی اچھی لائن اور لینتھ سے وہ بلے بازوں کو خوب چھکاتے تھے۔ ہینسی کرونئے پر سن 2000 میں میچ فکسنگ کے الزامات کے ثابت ہونے کے بعد زندگی بھر پابندی لگا دی گئی تھی۔ انہوں نے میچ فکسنگ کی بات اور بچولیوں کے ساتھ رابطے کی بات قبول کی۔ 2002 میں وہ ہوائی جہاز حادثے میں ہلاک ہو گئے۔

ایک نظر اس پر بھی

ہندوستان نے مسلسل نویں سیریز جیتی، عالمی ریکارڈ کی برابری کی

سری لنکا نے دھننجے ڈيسلوا (119 ریٹائرڈ ہرٹ) کی ذمہ دارانہ اننگز کی بدولت ہندوستان کے خلاف دوسرا اور آخری کرکٹ ٹسٹ بدھ کو یہاں ڈرا کرا لیا جبکہ دنیا کی نمبر ایک ٹیم ہندوستان نے مسلسل نویں ٹسٹ سیریز جیتنے کے ساتھ عالمی ریکارڈ کی برابری کر لی۔

ایڈیلیڈ میں آسٹریلیا 120رنز سے فاتح، ایشز سیریز میں دو صفر کی برتری

دوسری اننگز میں جیت کے لیے انگلینڈ کو 354رنز کا ہدف درکار تھا تاہم جو روٹ کی ٹیم صرف 233رنز بنا کر آؤٹ ہوگئی۔ آسٹریلیا کی جانب سے مچل اسٹارک نے پانچ، ہیزل وڈ اور لیون نے دو دو جبکہ پال کمنگز نے ایک وکٹ حاصل کی۔

ہندوستان نے دوسرے ٹیسٹ میں سری لنکا کو ایک اننگ اور 239 رنوں سے شکست دی

اسپنروں اور تیز گیندبازوں کے شاندار کھیل کی بدولت ہندستان نے سری لنکا کی ٹیم کو دوسرے کرکٹ ٹیسٹ میچ کے چوتھے دن ہی لنچ سے تھوڑی دیر بعد 166 رن کے معمولی اسکور پر آؤٹ کرکے میچ ایک باری اور 239 رنوں سے جیت لیا

ہندوستان اور سری لنکا کے درمیان پہلا ٹیسٹ میچ ڈرا

ہندوستان اور سری لنکا کے درمیان تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کا پہلا ٹیسٹ بغیر کسی نتیجے کے اختتام پذیر ہوگیا، آخری روز سری لنکا کی ٹیم 231 رنز کے تعاقب میں سات وکٹوں کے نقصان پر 75 رنز بنا سکی اور کم روشنی کی وجہ سے میچ مقررہ وقت سے پہلے ختم کر دیا گیا جس کی بدولت سری لنکا یقینی شکست سے ...