ہیگڈے کے خلاف پھر ایک بار دیش پانڈے نے کھولی زبان، کہا؛ جھوٹے بیانات کے سہارے عوام کو گمراہ کرنے کا کام بند کیا جانا چاہئے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th March 2019, 12:24 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

ڈانڈیلی 6؍مارچ (ایس او نیوز) ضلع انچارج اور ریوینیو وزیر آر وی دیشپانڈے پر عوام الزام لگارہے تھے کہ  وہ    کنیرا ایم پی اور مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈےکے خلاف کبھی اپنا منہ نہیں کھولتے، مگر اب  غالباً دوسری دیش پانڈے نے  ہیگڈے  پر نشانہ سادھتے ہوئے کہا ہے کہ گزشتہ پانچ سالوں میں کسی بھی قسم کا ترقیاتی کام انجام نہ دینے والے مرکزی وزیر کو پارلیمانی انتخابات قریب آنے پر جھوٹے بیانات کے سہارے عوام کو گمراہ کرنے کاکام بند کرنا چاہیے۔

ڈانڈیلی میں میڈیا سے گفتگو کے دوران دیشپانڈے نے کہا کہ ہم جیسے عوامی نمائندوں کو سچائی اور حقیقت بیانی سے ہی کام لینا چاہیے۔انتخابات کو نظر میں رکھ کر عوام کے سامنے جھوٹے بیانات دینا اور انہیں گمراہ کرنا کسی کے لئے مناسب نہیں ہے۔میں نے کیا کچھ کام انجام دئے ہیں وہ مجھے معلوم ہیں۔ میں یہ باتیں عوام کے سامنے بھی کہہ سکتا ہوں۔ بالکل اسی طرح مرکزی وزیر(اننت کمار) کو بھی ان کے ذریعے انجام دئے کام کے تعلق سے ہی بات چیت کرنی چاہیے، اس سے  ہٹ کر غلط بیانی سے کام لینا ٹھیک نہیں ہے۔

انہوں نے مثال دیتے ہوئے کہا کہ بی جے پی کے مقامی لیڈروں نے کہا تھا کہ ڈانڈیلی کے آلناور میں پندرہ دنوں کے اندر ریل کی آمد و رفت شروع ہوجائے گی۔ جبکہ مرکزی وزیراس تعلق سے کچھ اورہی بات کہہ رہے ہیں۔ جس کا مطلب یہ ہے کہ خود مرکزی وزیر کو اصل حقیقت کا پتہ ہی نہیں ہے۔اس ریلوے اسٹیشن کے لئے میں نے اس وقت کوششیں کی تھیں جبکہ مرکز میں ملیکاارجن کھرگے ریلوے منسٹر تھے۔اس کے بعد دیگر وزرائے ریل منی اَپا اور سریش پربھو سے بھی بات چیت کرتے ہوئے یہاں ٹرین سروس شروع کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔میں آج بھی اس کے لئے کوشش کررہاہوں۔متعلقہ افسران کے ساتھ مسلسل رابطے میں ہوں۔اس کے بارے میں میرے پاس دستاویزی ثبوت موجود ہیں۔ اب اگر مرکزی وزیر(اننت کمار) نے کبھی کوئی کوشش کی ہوتو اس تعلق سے عوام کو بتائیں۔

دیشپانڈے نے ڈانڈیلی میں نیشنل اسکل ڈیولپمنٹ سینٹر کے تعلق سے بتایا کہ یہ مرکزی حکومت کا ادارہ ہے۔ اسے اننت کما ر ہیگڈے اپنی کوششوں کا نتیجہ بتارہے ہیں۔ تھوڑی بہت سبسیڈی ہوسکتی ہے ، لیکن اس میں ایک حصہ ریاستی حکومت کا بھی ہوتا ہے اور اس کا قیام ریاستی حکومت نے ہی کیا ہے۔ اگر یہ مرکزی وزیر کے دائرۂ کار میں ہے تو پھر ایک بار بھی انہوں نے اس مرکز میں پہنچ کر اس کی ترقی کے سلسلے میں جائزہ کیوں نہیں لیا؟

ضلع انچارج وزیر نے کہا کہ جوئیڈا کے بجارکوننگ علاقے میں بجلی کنکشن فراہم کرنے کے راستے میں میری طرف سے رکاوٹ پیدا کرنے کی جو بات کہی گئی ہے وہ مضحکہ خیز ہے۔ وہاں 14گاؤں اور 50مجرے ہیں۔ ان میں سے 43مجرے میں بجلی کنکشن دیا جاچکا ہے اب صرف 7مجرے باقی ہیں۔ اس بات کی خبر وزیر اننت کمار ہیگڈے کو نہیں ہے۔اسی طرح جوئیڈا کے کُنبی طبقے کو پسماندہ قبیلے میں شامل کرنے کے لئے میں ریاستی سطح سے مرکزی سطح تک مسلسل کوشش میں لگا ہوا ہوں۔ہمپی یونیورسٹی سے ریسرچ کرکے اس کی رپورٹ ریاستی حکومت کو دینے کے ساتھ مرکزی حکومت کو تجویز بھی بھیج دی گئی ہے۔اس ضمن میں مرکزی وزیر اننت کمار ہیگڈے نے کیا کیا کوششیں کی ہیں اور کتنی مرتبہ پارلیمنٹ میں اس مسئلے کو اٹھایا ہے، یہ باتیں بھی عوام کو بتائیں تو اچھا ہوگا۔جنگلاتی زمین کے حقوق اورجنگل واسیوں کے انخلاء سے متعلق بھی دیشپانڈے نے بتایا کہ اس معاملے میں وہ عوام کے ساتھ ہیں۔ سپریم کورٹ کے فیصلے کے خلاف ریاستی حکومت نے بھی رِٹ داخل کی تھی۔ اب اس فیصلے پر اسٹے ملا ہے۔اس لئے عوا م کو خوف و دہشت کا شکار ہونے کی ضرورت نہیں ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

لاک ڈاون سے بہت جلد بھٹکل کے عوام کو مل سکتی ہے راحت؛ تعلقہ انتظامیہ نے ذمہ داران کے ساتھ رکھی میٹنگ؛ ضلعی انتظامیہ کرے گی حتمی فیصلہ

کویڈ.19 وباء کے خلاف لڑی گئی جنگ کے بعد اب چونکہ  بھٹکل میں ایک حد تک اس وباء پر قابو پالیا گیا ہے اور خوش آئند بات یہ ہے کہ  کورونا سے متاثرہ تمام لوگ بھی صحت یاب ہوکر اسپتال سے ڈسچارج ہورہے ہیں، بھٹکل میں اب گذشتہ دو ماہ سے چل رہے لاک ڈاون میں  راحت دئے جانے کے آثار صاف ہوگئے ...

اترکنڑا میں بھی بڑھ رہے ہیں کورونا کے معاملات؛ آج ہوناور کے ایک شخص کی رپورٹ آئی پوزیٹو؛ اس کے ساتھی بھٹکل میں ہیں کورنٹائن

  مہاراشٹرا سے کرناٹک میں داخل ہونے والوں میں جس طرح ریاست میں کورونا کے معاملات میں تیز رفتاری کے ساتھ  اضافہ ہورہا ہے اُسی طرح ممبئی سے ضلع اُترکنڑا میں داخل ہونے والوں میں بھی ہرروز کورونا سے متاثرہ مریضوں کی تعداد بڑھتی جارہی ہے۔ کل اتوار کو ضلع کے یلاپور میں  میاں اور ...

کورونا اَپ ڈیٹ:اڈپی ضلع کے تین پولیس اسٹیشنوں کو کیا گیا سیل ڈاؤن۔کارکلا،ہلیال اور برہماور میں پولیس افسران اور اہلکارآئے کووِڈ 19کی زد میں 

اڈپی ضلع میں کووِڈ وباء کا قہر کا کچھ زیادہ ہی بڑھتا ہوا محسوس ہورہا ہے۔ اب تک ممبئی اور خلیج سے واپس لوٹنے والوں میں مرض پائے جانے کی وجہ سے یہاں مریضوں کا گراف بڑھتا جارہا تھا۔ لیکن اب ایسا لگتا ہے کہ پولیس افسران اور اہلکار بھی اس کی زد میں آ گئے ہیں۔

بھٹکل اور ساحلی کرناٹکا میں پہلی مرتبہ گھروں میں ہی منائی جائی جارہی ہے عید ؛ کورونا بحران کے سبب دنیا بھر میں پائی جارہی ہے مایوسی

بھٹکل سمیت ساحلی کرناٹکا بالخصوص اُڈپی، مینگلور اور پڑوسی ریاست کیرالہ میں سنیچر کو  30 روزے مکمل کرنے کے بعد آج اتوار کو عید الفطر منائی جارہی ہے، مگر انسانی تاریخ میں پہلی مرتبہ مسلمان عید گھروں میں ہی  منانے پر مجبور ہیں۔ عیدالفطر کے موقع پر اخوت، بھائی چارگی، غم گساری، ...

بھٹکل کی فکروخبر میڈیا کی طرف سے فقہ شافعی آن لائن کوئیز مقابلہ؛ کوئیز جیتنے والوں کے لئے پچاس ہزار روپئے کے انعامات

بھٹکل کی فکروخبر میڈیا کی طرف سے فقہ شافعی کا آن لائن کوئیز مقابلہ منعقد کیا گیا ہے جس میں کوئیز جیتنے والوں کے لئے پچاس ہزار روپئے کے انعامات تقسیم کئے جائیں گے۔ اس  بات کی اطلاع  مدیر فقہ شافعی فکروخبر بھٹکل مولوی  سید اظہر برماور ندوی  نے دی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ملک بھر ...

اُڈپی میں پھر پائے گئے پانچ کورونا پوزیٹو معاملات؛ بیندور میں بھی نکلے تین کووِ ڈ پوزیٹیو معاملات۔ اڈپی میں متاثرہ افراد کی تعداد ہوگئی 55

اڈپی ضلع کے بیندور میں مہاراشٹرا سے واپس لوٹے ہوئے تین افراد کی کووِڈجانچ رپورٹ پوزیٹیونکلی ہے۔ جس کے بعد ضلع میں متاثرین کی تعداد 50ہوگئی ہے۔ان میں ایکٹیو معاملات کی تعداد 46ہے۔

کورونا اَپ ڈیٹ:اڈپی ضلع کے تین پولیس اسٹیشنوں کو کیا گیا سیل ڈاؤن۔کارکلا،ہلیال اور برہماور میں پولیس افسران اور اہلکارآئے کووِڈ 19کی زد میں 

اڈپی ضلع میں کووِڈ وباء کا قہر کا کچھ زیادہ ہی بڑھتا ہوا محسوس ہورہا ہے۔ اب تک ممبئی اور خلیج سے واپس لوٹنے والوں میں مرض پائے جانے کی وجہ سے یہاں مریضوں کا گراف بڑھتا جارہا تھا۔ لیکن اب ایسا لگتا ہے کہ پولیس افسران اور اہلکار بھی اس کی زد میں آ گئے ہیں۔

بنگلورو میں کل بروز پیر 25؍ مئی کو عید الفطرمنائی جائے گی

مرکزی رو ئیت ہلال کمیٹی کر نا ٹک کے رکن مولانا محمد مقصود عمران رشادی نے یہ اطلاع دی ہے کہ آج مؤرخہ29 رمضان المبارک 1441ھ م 23مئی 2020 ؁ ء بروز ہفتہ مرکزی رؤیت ہلال کمیٹی کرناٹک،بنگلورو کا ماہانہ اجلاس زیر صدارت حضرت مولانا صغیر احمد خان صاحب رشادی کنوینر مرکزی رو ئیت ہلال کمیٹی امیر ...

کرناٹک میں کورونا کا قہر، ایک ہی دن 216 کورونا وائرس سے متاثر۔ یادگیر میں سب سے زیادہ 72 کیس، متاثرین کی کُل تعداد 1959

ملک بھر میں کورونا کاقہر جاری ہے، ریاست کرناٹک میں بھی کورونا وائرس کا خوفناک پھیلاؤ رکنے اور تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے، ہر گزرتے لمحے اور دن کے ساتھ کورونا وائرس کے نئے معاملات میں اضافہ ہی ہوتا جارہا ہے۔

کووِڈ کے علاج میں ایک نئی پیش رفت۔ کینسر اسپتال کے ڈاکٹروں نے تلاش کیا ایک نیا طریقہ۔ تجرباتی مرحلے پر ہورہا ہے کام!

سر اور گلے کے کینسر اورروبوٹک سرجری کے ماہر ڈاکٹر وشال راؤ کا کہنا ہے کہ ایچ سی جی کینسر اسپتال میں کووِڈ 19کے علاج کے لئے ڈاکٹروں نے ایک نئے طریقے پر کام کرنا شروع کیا ہے جس میں خون کے اندر موجود سائٹوکینس نامی ہارمون کا استعمال کیا جائے گا۔

کرناٹک میں ایک ہی دن میں 138 ؍افراد کورونا وائرس سے متاثر۔چکبالاپور میں سب سے زیادہ47 معاملات، متاثرین کی تعداد بڑھ کر ہوگئی 1743

ملک بھر میں کورونا کاقہر جاری ہے، ریاست کرناٹک میں بھی کورونا وائرس کا خوفناک پھیلاؤ رکنے اور تھمنے کا نام نہیں لے رہا ہے، ہر گزرتے لمحےاور دن کے ساتھ کورونا وائرس کے نئے معاملات میں اضافہ ہی ہوتا جارہا ہے۔