مودی اپنی تنخواہ سے اٹھاتے ہیں اپنے کپڑوں کے اخراجات، آرٹی آئی میں ہواخلاصہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th January 2018, 12:50 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 12جنوری(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)نریندر مودی کے وزیر اعظم بنتے ہی حزب اختلاف کی جماعتوں نے اکثر ان کے کپڑے اور سوٹ کولے کر نشانہ بنایا ہے لیکن اب ان کے کپڑے پر خرچ کی جانے والی رقم کولے کرایک بڑی بات سامنے آئی ہے۔ایک آر ٹی آئی کے جواب میں پی ایم او دفتر کی جانب سے کہاگیا ہے کہ وزیراعظم کے ذاتی کپڑوں پرہونے والاخرچ مودی اپنی تنخواہ سے اٹھاتے ہیں۔اس کے لئے حکومت کی جانب سے کوئی رقم خرچ نہیں کی جاتی ہے۔ٹائم آف انڈیا کی خبر کے مطابق آر ٹی آئی کارکن روہت سبروال نے آرٹی آئی ایکٹ کے تحت یہ معلومات مانگی تھی،وہ ایک طویل عرصے سے آرٹی آئی ڈالتے رہے ہیں۔رپورٹ کے مطابق اس سے قبل انہوں نے اٹل بہاری واجپئی اور منموہن سنگھ کے ذاتی اخراجات سے متعلق بھی آر ٹی آئی ڈالا تھا۔روہت سببروال نے اٹل بہاری واجپئی کے دور( 19مارچ 1998سے 22مئی 2004کے درمیان)ہر سال واجپئی کے لباس پر ہونے والے خرچ کی تفصیلات بھی طلب کی تھی۔اسی طرح منموہن سنگھ کے دور اقتدار( 22مئی 2004سے 26مئی 2014)میں سنگھ کے لباس پر ہوئے خرچ کا بھی حساب حق اطلاعات کے ذریعے مانگا تھا۔روہت سببروال نے نریندر مودی کے عہدہ سنبھالنے کے بعدسے ہر سال خرچ کئے جانے والے اخراجات کی تفصیلات بھی مانگی ہے۔جواب میں پی ایم اوو کے دفتر نے بتایا کہ وزیراعظم مودی کے کپڑے پرہوئے اخراجات کی ادائیگی سرکاری پیسہ سے نہیں کر رہے ہیں، مودی اپنی تنخواہ سے اپنے کپڑوں پر خرچ کرتے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

کشمیر 2002 کا گجرات بن سکتا ہے

آخر کشمیر میں گونر راج نافذ ہو ہی گیا۔ کشمیر کے لئے یہ کوئی نئی بات نہیں ہے۔ وہاں اب ساتویں بار گونر راج نافذ ہوا ہے ، ویسے بھی کشمیر کے حالات نا گفتہ بہہ ہیں۔ وادی کشمیر پر جب سے بی جے پی کا سایہ پڑا ہے تب ہی سے وہاں قتل و غارت کا سلسلہ جاری ہے ۔ پہلے تو مفتی سعید اور محبوبہ مفتی نے ...

راجستھان میں ’لو جہاد‘ کے نام پر ماحول خراب کرنے کی کوشش 

راجستھان کے ہنڈون میں لو جہاد کے نام پر بجرنگ دل پر ماحول بگاڑنے کا الزام لگا یا ہے، ہنڈون کے جس کانگریس کونسلر نفیس احمد پر بجرنگ دل نے لو جہاد کا الزام لگایا ہے، ان کا دعویٰ ہے کہ یہ مکمل طور پر ایک من گھڑت کہانی ہے۔

چھتیس گڑھ میں مضبوط طاقت ہے کانگریس، اتحاد کی ضرورت نہیں :پی ایل پنیا

آل انڈیا کانگریس کمیٹی جنرل سیکریٹری اور چھتیس گڑھ کے پارٹی معاملات کے انچارج پی ایل پنیا کا کہنا ہے کہ کانگریس ریاست میں مضبوط قوت ہے اور اس کے اندر کسی اتحاد کے بغیر اسمبلی انتخابات جیتنے کی طاقت ہے۔

ایمرجنسی نے جمہوریت کوقانونی تاناشاہی میں بدل دیا: ارون جیٹلی

مرکزی وزیر اور سینئر بی جے پی لیڈر ارون جیٹلی نے آج یاد کیا کہ کس طرح تقریبا چار دہائی قبل وزیر اعظم اندرا گاندھی کی زیر قیادت حکومت کی طرف سے ایمرجنسی لگائی گئی تھی اور جمہوریت کو آئینی آمریت میں تبدیل کر دیا گیا۔

گنگامیں جمع گندگی کولے کرنتیش کمارکا مرکزی حکومت پرسخت حملہ

بہار کے وزیر اعلی نتیش کماران دنوں ہر روز اپنی بات کوبے باکی سے رکھ رہے ہیں۔ گزشتہ اتوار کو ہوئی نیتی آیوگ کی میٹنگ میں انہوں نے پی ایم نریندر مودی کے سامنے ریاست کے مسائل رکھنے کے بعد انہوں نے مرکزی وزیر ماحولیات ہرش وردھن کو مشورہ دیا کہ دہلی واپس جاکر مرکزی سطح وزیر ...