بی جے پی لیڈر کی کار سے 1.60لاکھ روپے برآمد

Source: S.O. News Service | Published on 11th January 2017, 10:10 PM | ملکی خبریں |

علی گڑھ، 11جنوری(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)ہردواگنج تھانے کی پولیس نے گاڑی کی چیکنگ کے دوران بی جے پی لیڈر کی گاڑی سے ایک لاکھ ساٹھ ہزار روپے برآمد کئے۔لیڈر نے اپنے روپے ہونے سے انکار کیا ہے۔پولیس نے نوٹ ضبط کرکے انکم ٹیکس محکمہ کو اطلاع بھیج دی ہے۔چیکنگ کے دوران علی گڑھ کی جانب سے جاتی ایک گاڑی کو پولیس نے تھانے کے سامنے روکا،کار روکتے ہی ایک شخص بیگ لے کر اترا،گاڑی پر بی جے پی کا ایک اسٹیکر لگا ہوا تھا اور کار بی جے پی لیڈر جے پی راجپوت چلا رہے تھے۔پولیس نے شک ہونے پر بیگ لے کر اترے شخص کو روکا، بیگ کی تلاشی لی،بیگ میں ایک لاکھ ساٹھ ہزار نو سو چھتیس روپے نکلے۔پوچھ گچھ میں بیگ کے مالک راجیو اپادھیائے نے بتایا کہ وہ نگاچ پاڑا اترولی کے رہائشی ہیں اور ان کا پولٹری فارم ہے،وہ پی اے سی علی گڑھ میں واقع لکی کمپاڈ میں رہتے ہیں،گھر سے اترولی بینک میں جمع کرنے کے لئے یہ روپے لے کر نکلے تھے اور وہ پڑوسی دوست بی جے پی لیڈر کی گاڑی میں بیٹھ گئے تھے۔ایس او شمبھو تیواری نے کہا کہ انکم ٹیکس محکمہ کی ہدایت پر ہی آگے کی کارروائی کی جائے گی۔ادھر بی جے پی لیڈر کا کہنا ہے کہ روپیوں سے ان کا کوئی لینا دینا نہیں ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

جی ایس ٹی کے سلسلے میں مودی پر چدمبرم کا حملہ

وزیر اعظم نریندر مودی کے اشیا اور سروس ٹیکس (جی ایس ٹی) کو ایمانداری کی جیت اور ایمانداری کا جشن بتائے جانے کے سلسلے میں سابق وزیر خزانہ پی چدمبرم نے ان پر نشانہ لگاتے ہوئے کہا ہے کہ توپھر بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کیوں اس کی مخالفت کی تھی اور کیوں پانچ سال تک اسے روکا؟

بی جے پی کے باغی رہنما گھنشیام تیواری نے استعفی دیا

راجستھان بھارتیہ جنتا پارٹی کے باغی لیڈر اور سانگانیر کے ممبر اسمبلی گھنشیام تیواری نے آج پارٹی سے استعفی دینے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ وہ اپنی نو تشکیل شدہ بھارت واہنی سے آئندہ اسمبلی میں تمام 200 سیٹوں پر اپنے امیدوار کھڑا کریں گے۔