روہنگیائی مہاجرین کا المیہ: میانمارکے مزید پناہ گزینوں کو پناہ نہیں دے سکتے: بنگلہ دیش 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 2nd March 2019, 10:40 AM | عالمی خبریں |

ڈھاکہ؍ نیویارک2 مارچ (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) بنگلہ دیش نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل سے جمعرات کو کہا کہ وہ اب میانمار سے مزید پناہ گزینوں کو پناہ نہیں دے سکتا۔ بنگلہ دیش کے وزیر خارجہ شاہدالحق نے کونسل کے اجلاس میں کہا کہ ان کے ملک میں مقیم روہنگیا کے لاکھوں افراد کی وطن واپسی کا بحران بد سے بدتر ہو گیا ہے۔ علاوہ ازیں انہوں نے کونسل سے’ فیصلہ کن‘ اقدا م کرنے کی بھی اپیل کی۔ غور طلب ہے کہ 2017 میں رکھائن میں حشرا ت الارض برمی افواج کی منظم نسل کشی کے بعد روہنگیا کمیونٹی کے قریب 74ہزارافراد بنگلہ دیش کے کیمپوں میں پناہ اختیار کی تھی۔ واضح ہو کہ اقوام متحدہ نے میانمار فوج کے اس قتل عام کو نسلی کشی سے تعبیر کرتے ہوئے انسانیت کے المیہ قرار دیاتھا ۔شاہدالحق نے کہا کہ :’یہاں مجھے کونسل کو یہ بتاتے ہوئے افسوس ہے کہ بنگلہ دیش اب میانمار کے مہاجرین کو پناہ دینے کی پوزیشن میں نہیں ہے‘۔بنگلہ دیش سے ایک معاہدے کے تحت میانمارکچھ پناہ گزینوں کو واپس لینے کے لئے راضی ہوا تھا؛ لیکن اقوام متحدہ نے اس بات پر زور دیا کہ روہنگیا ئی مسلمانوں کے تحفظ ان کی واپسی کی اولین شرط ہے۔اقوام متحدہ کے سفیر کرسٹین شرانر برگنر نے میانمار کا پانچ بار دورہ کرنے کے بعد کہا کہ لاکھوں روہنگیا لوگوں کی گھر واپسی کا عمل انتہائی سست ہے اور ساتھ ہی انہوں نے آگاہ کیا کہ اگلے سال ہونے والے میانمار انتخابات سے بحران اور گہرا ہوسکتا ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کرائسٹ چرچ سانحہ: نیوزی لینڈ میں فوجی طرز کے ہتھیاروں پر لگی پابندی

نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم جیسنڈا آرڈرن نے جمعرات کو کہا کہ ملک میں نیم خود کار ہتھیار اور اسالٹ رائفلوں پر پابندی دی گئی ہے۔ حال ہی میں نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں دو مساجد پر حملے کے پیش نظر نیم خود کار ہتھیاروں اور اسالٹ رائفلوں پر پابندی لگانے کا فیصلہ کیا ہے۔

انڈونیشیا میں سیلاب اور تودے سے مرنے والوں کی تعداد 89 ہوئی

  انڈونیشیا کے مشرقی علاقے پاپوا میں سیلاب اور مٹی کے تودے گرنے سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر 89 ہو گئی ہے اور لاپتہ 74 لوگوں کی تلاش کے لئے ریسکیو آپریشن چلایا جا رہا ہے۔ راحت رسانی مہم میں مصروف حکام نے منگل کو یہاں یہ اطلاع دی۔

پاکستان جیسے دوست ملک سے امریکہ کو ’خارش ‘ ہونے لگی : پاکستان کا ایٹمی پروگرام امریکہ کے لیے بڑا خطرہ ہے: مائیک پومپیو

امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے اتوار کو ایک انٹرویو میں امریکی سلامتی کو درپیش پانچ بڑے مسائل بتاتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے ایٹمی پروگرام کے غلط ہاتھوں میں لگ جانے کا خدشہ ان میں سے ایک ہے۔