معروف عالم دین اور تبلیغی جماعت کے اہم ذمہ دارمولانا غزالی خطیب ندوی انتقال کرگئے

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 9th June 2018, 12:43 AM | ساحلی خبریں | ملکی خبریں |

بھٹکل 8/جون (ایس او نیوز) معروف عالم دین و داعی اور دہلی نظام الدین تبلیغی مرکز کے اہم ذمہ دار مولانا غزالی خطیب ندوی آج   جمعہ 23 رمضان المبارک کی صبح فجر کی نماز سے قبل بھٹکل اپنی رہائش گاہ میں انتقال کرگئے۔ انا للہ و اناالیہ راجعون۔ اُن کی عمر 74 سال تھی۔

ذرائع سے ملی اطلاع کے مطابق قریب دیڑھ ماہ قبل  مولانا دہلی کے نظام الدین مرکز سے بھٹکل آئے تھے، انہیں ایک پیر میں تکلیف تھی،  مگر وہ بالکل صحت مندتھے۔رمضان کی 23 ویں رات  انہوں نے مکمل  عبادت میں گذاری، پھر سحری کرکے فجر کی اذان کے بعد نماز کے لئے مسجد جانے کی تیاری میں تھے کہ ملک الموت  اللہ کا بلاوا لے کر پہنچ گیا۔ بتایا گیا ہے کہ مولانا  الھم اغفر لی کا ورد کرتے کرتے  اس دنیا سے چل بسے۔

حادثے کی اطلاع ملتے ہی کثیر تعداد میں لوگ موگلی ہونڈا  میں واقع ان کے مکان پر جمع ہونا شروع ہوگئے۔  بعد نماز عصر بھٹکل جامع مسجد میں  نماز جنازہ ادا کی گئی اور پرانے قبرستان میں ان کی تدفین عمل میں آئی۔

 بھٹکل کے  معروف عالم دین اور بھٹکل کے سابق چیف قاضی  مرحوم مولانا ابوبکر خطیبی عرف اوپا خلفو   کے چشم چراغ  مولانا غزالی کی پیدائش سن 1944 میں ہوئی ، انہوں نے اسلامیہ اینگلو اُردو ہائی اسکول سے میٹرک مکمل کیا پھر جامعہ اسلامیہ  میں داخلہ لیا، وہاں سے وہ لکھنو ندوۃ العلماء سے  عالمیت نیز فضیلت  کی ڈگری حاصل کی، پھر وہ اسلام کی دعوت کے کام میں  تبلیغی جماعت سے جڑ گئے۔  وہ قریب 45 سالوں تک نظام الدین مرکز میں رہے اور اپنی پوری زندگی  دعوت و تبلیغ میں لگائی۔  اُنہیں اردو، عربی اور انگریزی پر عبور حاصل تھا، اس بنا پر وہ  مرکز نظام الدین  میں اکثر عربوں کی جماعتوں کے بیانات کا اُردو ترجمہ پیش کرتے تھے۔ مرحوم انگریزی تقریروں کا بھی اُردو میں ترجمہ  پیش کرتے تھے۔

خیال رہے کہ ان کے والد  مولانا ابوبکر خطیبی کا انتقال  بھی رمضان کی مبارک ساعتوں میں سن 1974 میں ہوا تھا۔ مولانا کو سات فرزند اور دو بیٹیاں ہیں اور ان کے گھرانے کے چشم و چراغ علمِ دین سے آراستہ ہیں۔ مولانا غزالی کے سات فرزندان میں چھ عالم دین کے ساتھ حافظ قران ہیں تو   ایک فرزند عالم دین ہے، جبکہ ان کی دونوں بیٹیاں بھی عالمہ و حافظہ ہیں، یہاں تک  کہ  ان  کے دونوں داماد بھی حافظ قران ہیں۔

مولانا کے انتقال پر پورے بھٹکل میں رنج و غم کی فضا چھاگئی۔ اللہ کی رحمت بھی بارش کی شکل میں وقفے سے وقفے سے جاری ہوگئی۔ سوشیل میڈیا کے ذریعے ملی اطلاع کے مطابق  مولانا کے انتقال پر بھٹکل کے حضرات نے گلف کے مختلف شہروں کی مسجدوں میں  نماز غائبانہ کا اہتمام کیا تھا۔

مولانا کے انتقال پر بھٹکل کی مختلف جماعتوں کے ذمہ داران نے گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے اہل خانہ  کے ساتھ تعزیت کی ہیں اور مولانا کے حق میں مغفرت کی دعائیں کی ہیں۔  مولانا کے انتقال کی اطلاع ملتے ہی  مجلس اصلاح و تنظیم بھٹکل کے  جنرل سکریٹری محی الدین الطاف کھروری سمیت  دیگر ذمہ داران فجر کی نماز کے فوری بعد ان کے مکان پر پہنچ گئے تھے اور گھروالوں کے ساتھ تعزیت کی۔ الطاف کھروری نے بتایا کہ مولانا نے پوری زندگی  دین کی خدمت کے لئے  وقف کردی تھی، آخری وقت میں بھی وہ اللہ کی عبادت کرتے ہوئے  اور اپنے لئے مغفرت کی دُعا طلب کرتے ہوئے  اپنے خالق حقیقی کے پاس جا پہنچے۔ اللہ ان کی خدمات کو قبول فرمائے اور جنت الفردوس میں اعلیٰ مقام عطا فرمائے۔ آگے بتایا کہ مولانا نہایت عبادت گذار اور اللہ ولی انسان تھے، انہوں نے ہمیشہ خاموش خدمت کی اور کسی بھی عہدہ کو قبول نہیں کیا۔ دبئی سے قائد قوم جناب ایس ایم سید خلیل الرحمن نے بھی ان کی موت پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا  اور کہا کہ مرحوم نہایت صاف گو سیدھے سادے متقی پاکیزہ اوصاف  اورعبادت گزار انسان تھے،  ان کی اچانک رحلت سے ایک اور چراغ علم و عمل اور رشد و ہدایت گل ہو گیا ہے انہوں نے اپنی پوری زندگی اسلام کی سر بلندی اور درس تدریس میں گذاری ،ان کی خدمات کو کبھی بھی فراموش نہیں کیا جا سکتا ۔ اللہ تعالیٰ ان کی بال بال مغفرت فرمائے اور ان کے درجات کو بلند فرمائیں۔ اٰمین

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کے بیلنی علاقے میں قربانی روکنے کا مطالبہ ۔پولس کو سونپا گیا میمورنڈم

بیلنی علاقے کے کچھ ہندوؤں نے بھٹکل ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ آف پولیس کو ایک میمورنڈم دیتے ہوئے مطالبہ کیاہے ہندوؤں کے مندروں اور مقدس مقامات سے گھرے ہوئے اس علاقے میں جانوروں کی قربانی کرنے پر روک لگائی جائے۔

منگلورو: بھاری برسات کا سلسلہ جاری۔ کئی مقامات پر چٹانیں کھسکنے کے واقعات۔ ڈی سی نے عوام کودی تعلقہ لیول کنٹرول روم سے رابطہ رکھنے کی ہدایت

ساحلی علاقوں میں تیز اورموسلا دھار برسات کا سلسلہ ابھی جاری ہے۔ خاص کر منگلورو اور اڈپی کے بعض علاقوں میں لگاتار بارش برسنے کی خبریں موصول ہورہی ہیں۔

بھٹکل   تعلقہ میں مسلسل بارش سے ندی کنارے پر خطرہ :163ملی میٹر بارش

بھٹکل تعلقہ میں پچھلے دو تین دنوں سے مسلسل برستی بارش سے ندی نالے  پوری تاب سے بہنے کے نتیجےمیں عام زندگی مفلوج ہوگئی ہےاور نشیبی علاقوں میں پانی بھر جانے سے عوام پریشانی میں مبتلا ہونےکی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

بھاری بارش کے بعد لنگن مکّی ڈیم سے کیا گیا پانی کا اخراج؛ ہوناور کے شراوتی بیلٹ پرکئی دیہاتوں میں داخل ہوا پانی؛ عوام نہایت چوکس

  گذشتہ تین چار دنوں سے جاری بھاری بارش کے بعدپڑوسی تعلقہ ہوناور کے شراوتی بیلٹ سے بہنے والی شراوتی ندی میں طغیانی آگئی ہے اور ندی خطرے کے نشان سے اوپر  بہہ رہی ہے، ایسے میں اُدھر لنگن مکّی ڈیم سے 21,223کیوسک پانی کو بھی باہر چھوڑا جارہا ہے، اگر بارش پھر اپنی رفتار سے شروع ہوتی ...

منگلورو : مسلسل بارش سے کافی جانی ومالی نقصان : حالات سے نمٹنے ضلع انتظامیہ تیار : ڈپٹی کمشنر سینتھل کی پریس کانفرنس

کیرلا سمیت کرناٹکا کے ساحلی علاقوں  میں طوفانی ہواؤں اور موسلا دھار بارش جاری رہنے سے دکشن کنڑا اور اُڈپی اضلاع زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔ لگاتار بارش برسنے سے منگلورو اور بنگلورو قومی شاہراہ  پر پہاڑ کھسک گیا ہے ، جس کی  وجہ سے سواریوں کی  نقل وحمل روک دئیے جانے کے علاوہ بعض ...

کاروار میں مسلسل بارش کے نتیجےمیں ماہی گیری ٹھپ : ماہی گیر بری طرح متاثر

ہرسال اگست کے مہینےمیں ماہی گیر سمندر میں مچھلی شکار کے لئے نکلتےہیں، لیکن امسال اگست کے دوسرے ہفتےسے جاری طوفانی ہواؤں کے ساتھ موسلا دھار بارش  نےجہاں رہائشی علاقوں ، زراعت وغیرہ کو متاثر کیا ہے وہیں ماہی گیر پر بھی اس کے کافی اثرات نظر آرہے ہیں۔ دوتین کی بارش کو دیکھتے ہوئے ...

اردویونیورسٹی کو 4 نئے فاصلاتی کورسز کے آغاز کی اجازت، یو جی سی کا اہم اقدام، 6 کورسز کی مسلمہ حیثیت میں دو سال کی توسیع، محمد اسلم پرویز کا اظہار اطمینان

مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی کی نظامت فاصلاتی تعلیم کی جانب سے چلائے جارہے 6 مختلف کورسز کو یونیورسٹی گرانٹس کمیشن نے مزید دو تعلیمی سال کے لیے مسلمہ حیثیت دیتے ہوئے یونیورسٹی کو فاصلاتی طرز پر ایم اے عربی ، ایم اے اسلامک اسٹڈیز ، ایم اے ہندی اور بی کام پروگرامس کے آغاز کی ...

’انجمن علمائے اسلام‘ کی طرف سے اے ایم یو کے برج کورس میں نئے طلبہ کواستقبالیہ 

علی گڑھ مسلم یونیورسٹی (اے ایم یو)کے برج کورس میں نئے طلبہ کے استقبال کے لیے ایک تقریب منعقدکی گئی جس کی صدارت کرتے ہوئے مرکزفروغ تعلیم وثقافت مسلمانان ہندکے ڈائریکٹرپروفیسرراشدشازنے نئے طلبہ کوبتایاکہ اب تک اس پروگرام سے تقریباً 500طلبہ فارغ ہوکرجاچکے ہیں اوروہ خودمسلم ...

صدر جمہوریہ نے ششی دھر پی پرساد کووایو سینا میڈل سے نوازا

بھارتی فضائیہ (گروڑ)کے سارجنٹ ششی دھر پی پرساد کو آپریشن رکشک میں تعینات کیا گیا تھا۔ 10اکتوبر 2017 کو شام 4 بجے ایک مکان میں دہشت گردوں کے چھپے ہونے کی خفیہ اطلاع ملنے کے بعد گروڑ کی ٹیم اور فوج کے یونٹوں نے جموں و کشمیر کے باندی پورہ ضلعے میں رکھ ہاجن گاؤں کے بون محلے میں مشترکہ ...

کانسٹی ٹیوشن کلب جیسے حساس مقام پرحملہ ہونا پولس اور انتظامیہ کی ناکامی،  مسلمانوں میں خوف وہراس پیداکرنے کی یہ سازش ہے:ملی کونسل 

معروف طلبہ لیڈر عمر خالد پر گذشتہ کل کانسٹی ٹیوشن کلب میں ہوئے حملہ کی سخت مذمت کرتے ہوئے آل انڈیا ملی کونسل کے جنرل سکریٹری ڈاکٹر محمد منظور عالم نے دہلی پولس اور سیکوریٹی پر سخت سوالات اٹھائے ہیں ۔ایک پریس ریلیز میں انہوں نے کہاکہ جس جگہ پر حملہ ہواہے وہ انتہائی حساس اور سخت ...

بچوں کو ذمہ دار شہری بنایا جاناچاہیے ، نائب صدرجمہوریہ ہند ،جی ڈی گوئنکا پری اسکول کے بچوں سے ملے 

نائب صدر جمہوریہ ہند جناب ایم وینکیا نائیڈو نے کہا ہے کہ بچوں کو ذمہ دار شہری بنایا جانا چاہئے ۔جناب وینکیا نائیڈو جی ڈی گوئنکا لا پیٹائٹ پری اسکول کے بچوں سے گفتگو کررہے تھے ،جو یوم آزادی کے موقع پر ان سے ملاقات کے لئے آئے تھے۔نائب صدر جمہوریہ موصوف نے کہا کہ ماں بچے کی پہلی ...

ڈاکیومنٹری فلم 'دی پریسیڈنٹس باڈی گارڈ' کا نشریہ نیشنل جیوگرافک چینل پر15 اگست کو

نیشنل جیوگرافک، جس کی ابھی تک متاثر کن اور دلچسپ کہانیاں سنانے کی 130 سال کی خوشحال وراثت رہی ہے، نے اب ہندوستانی فوج کے سب سے قدیم ریجیمنٹ پر خصوصی ڈاکیومنٹری بنانے کا اعلان کیا ہے۔ اس کا نام ہو گا، "دی پریسیڈنٹ باڈی گارڈ" یہ فلم یقیناًناظرین میں وطن پرستی کا راگ چھیڑے گی۔ آئندہ ...