تباہی سے بدحال کورگ میں حالات معمول کی طرف، انتظامیہ کی بھرپور توجہ باز آباد کاری پر مرکوز، تعلیمی ادارے کھل گئے

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 23rd August 2018, 9:47 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،23؍اگست(ایس او نیوز) طوفان ،سیلاب اور زمین کھسکنے کے متعدد واقعات سے بدحال کورگ ضلع میں حالات رفتہ رفتہ معمول کی طرف لوٹ رہے ہیں۔ یہاں کی سڑکوں اور پلوں کی مرمت کا کام جنگی پیمانے پر آگے بڑھادیا گیا ہے جبکہ پناہ گزینوں کی باز آباد کاری کی طرف توجہ مرکوز کی گئی ہے۔

ریاست کے دیگر حصوں کو جوڑنے والی کورگ کے گھاٹ سیکشن کی سڑکوں کو جو زمین کھسکنے کی وجہ سے خراب ہوگئی تھیں انہیں بڑی بڑی مشینوں کی مدد سے بحال کیا جارہاہے۔کشال نگر ، مرکیرہ ، ویراج پیٹ تعلقہ جات کے لاپتہ افراد کی نشاندہی کے لئے مہم شروع کردی گئی ہے۔

بارش اور زمین کھسکنے کی وجہ سے ضلع کے 61 اسکولوں کو بھاری نقصان پہنچاہے جہاں پر تعلیمی سرگرمیاں شروع نہیں ہوئی ہیں۔ باقی تمام اسکولوں میں آج سے تعلیم کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے۔ پانچ ہزار سے زائد پناہ گزینوں کو جو راحت کیمپوں میں مقیم تھے، ان کے گھروں کی طرف لوٹا دیاگیا ہے۔ جن لوگوں کا گھر اور تمام اسباب بارش کی وجہ سے تباہ گئے ضلعی انتظامیہ ان کی باز آباد کاری پر توجہ دے رہا ہے۔ زمین کھسکنے کے سبب کافی اور دیگر فصلوں کو جو بھاری نقصان پہنچا ہے، اعلیٰ افسر ان کا تخمینہ لگانے میں مصروف ہوگئے ہیں۔

ضلع بھر میں بارش کی وجہ سے 500 سے زائد مکانات کو نقصان پہنچا ہے۔ ان کی از سر نو تعمیر کا حکومت نے وعدہ کیا ہے۔ انہیں اسی جگہ پر دوبارہ تعمیر کیا جائے گا یا متبادل جگہ دی جائے گی، یہ فیصلہ جلد ہی ضلعی انتظامیہ کی طرف سے لیا جائے گا۔

سیلاب سے بدحال کورگ ضلع کو ریاست کے کونے کونے سے امدادی اشیاء کی فراہمی کا سلسلہ جاری ہے۔ ضلعی انتظامیہ کی طرف سے راحت کاری اشیاء کی تقسیم بھی تیزی کے ساتھ کی جارہی ہے۔ سیلاب اور بارش کے فوراًبعد حالانکہ یہاں متعدی بیماریوں کے پھیلاؤ کا خدشہ تھا، لیکن ضلعی انتظامیہ کی طرف سے متعدی بیماریوں کوپھیلنے سے روکنے کے لئے اپنائی گئی احتیاطی تدابیر موثر رہی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹک لجسلیٹیوکونسل کی خالی نشستوں کیلئے دوکانگریس امیدواروں کا اعلان

یاستی کونسل کی خالی نشستوں کے لئے 4 اکتوبر کو ہونے والے انتخابات کے لئے آج کانگریس کورکمیٹی کے اجلاس میں سابق وزیر ریاستی اقلیتی کمیشن کے چیرمین نصیراحمد اور ایم سی وینوگوپال کے نام منتخب کئے گئے ہیں ۔

سرکاری ملازمین مسلمانوں کے مفاد میں بھی کام کریں اسٹیٹ گورنمنٹ مسلم ایمپلائیز اسوسی ایشن کے جلسے سے رکنِ پارلیمان سید ناصرحسین کا خطاب

مسلمان سرکاری ملازمین اپنے اپنے محکموں میں اپنی ذمہ داری نبھاتے ہوئے عام مسلمانوں کے مفاد میں بھی کام کریں۔سرکاری اسکیموں اور پروگراموں کو عام لوگوں تک خصوصا! مسلمانوں تک پہنچانے کی کوشش کریں۔

اراکین اسمبلی کے شکار اور کراس ووٹنگ کا خدشہ سدارامیا نے25؍ ستمبر کو سی ایل پی میٹنگ طلب کی

ن خدشوں کے درمیان کہ لجسلیٹیو کونسل کے ضمنی انتخابات سے قبل کانگریس اراکین اسمبلی کا شکا ر یاان کی جانب سے کراس ووٹنگ ہوگی، مخلوط حکومت کی تال میل کمیٹی کے چیرمن سدا رامیا نے 25؍ستمبر کو کانگریس لجسلیٹر پارٹی(سی ایل پی) کی میٹنگ طلب کی ہے۔

سیلاب زدہ کورگ کیلئے اضافی تعاون کا اعلان فی کنبہ 50ہزار روپئے رقم دینے کا فیصلہ

ورگ ضلع میں حال ہی میں ہوئی موسلا دھار بارش اور سیلاب کی وجہ سے کئی گھر تباہ وبرباد ہوگئے ۔ متاثرہ کنبوں کیلئے کپڑے اور روز مرہ کی ضروریات کی خریداری کے مقصد سے وزیر اعلیٰ ریلیف فنڈ کے تحت فی کنبہ 50ہزار روپئے اضافی رقم جاری کرنے کا ریاستی حکومت نے فیصلہ کیا ہے۔

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں اضافہ بدستور جاری

پٹرول ڈیزل کی قیمتوں میں آج ایک بار پھر اضافہ ہوا ہے۔پٹرول 17 پیسے اور ڈیزل 10 پیسے مہنگا ہوا ہے۔اضافے کے بعد راجدھانی دہلی میں ایک لیٹر پیٹرول کی قیمت 82.61 روپے فی لیٹر ہو گئی ہے۔وہیں ڈیزل 73.97 روپے فی لیٹر ہو گئی۔ راجدھانی دہلی میں کل پٹرول 82.44 روپے فی لیٹر اور ڈیزل 73.87 روپے فی لیٹر ...

روپے کی قدر میں گراوٹ:سستاحج کرانے کادعویٰ بھی فرضی؟ حجاج کرام پر بوجھ میں اضافہ ،مزید پیسے وصولے جاسکتے ہیں

سرکارایک طرف دعویٰ کررہی ہے کہ اس نے اس بارسستاحج کرایاہے ۔لیکن اب روپیے کی گراوٹ کی وجہ سے پھرحاجیوں سے وصولی کی جائے گی ۔عالمی بازار میں ڈالر کے مقابلے ہندوستانی کرنسی کی قدر میں ہورہی گراوٹ کی وجہ سے اب حجاج کرام پر مزید بوجھ پڑنے والاہے۔