ملکا ارجن کھرگے کو آیا دھمکی بھرا فون، کہا، تم دلتوں کے حق میں بہت بولتے ہو

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th March 2018, 11:11 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو12مارچ(ایس او نیوز؍ آئی این ایس انڈیا )لوک سبھا میں کانگریس کے لیڈر ملک ارجن کھرگے نے کہا کہ ان کے پاس گزشتہ چند ماہ سے دھمکی بھرے فون آ رہے ہیں۔ کھرگے نے بنگلورو سے تقریباََ600 کلومیٹر دور کلبرگی میں نامہ نگاروں سے کہاکہ میں اس معاملے کو لوک سبھا اسپیکر اور وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کے نوٹس میں لایا ہوں۔کھرگے نے 4 جنوری کو دہلی کے تغلق روڈ تھانے میں شکایت درج کی کہ تین جنوری کو ان کی رہائش گاہ کے لیڈ لائن نمبر پر کسی انجان شخص نے فون کر دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ آپ دلتوں کے حق میں بہت بولتے ہو، جس کا تمہیں خمیازہ بھگتنا پڑے گا ۔ لینڈ لائن کی یہ کال اسپوفنگ کے ذریعے کی گئی تھی، جس کے بعد دہلی پولیس نے تغلق روڈ تھانے میں آئی پی سی507کے تحت مقدمہ درج کیاہے۔23 فروری کویہ کیس دہلی پولیس کی اسپیشل سیل کو ٹرانسفر کیا گیا ہے۔ فی الحال اسپیشل سیل معاملے کی تحقیقات کر رہی ہے۔ کا نگریسی لیڈرنے کہاہے کہ انہوں نے دہلی کے تغلق تھانے میں شکایت درج کرائی تھی۔ انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ انہیں کس طرح کی دھمکیاں دی گئیں۔ کھرگے نے کہاکہ لوگ سوچتے ہیں کہ وہ مجھے ٹھنڈا کر دیں گے یا مجھے میرا کام کرنے سے روک دیں گے، ان کو یہ پتہ ہونا چاہئے کہ شاید اسی وقت میری موت ہوجاتی جب میں چھ سال کا تھا اور میری گھر میں آگ لگ گئی تھی اور میرے والدین اور دوسرے رشتہ داروں کی موت ہو گئی تھی۔ اب میں 76 سال کا ہوں اور اس وجہ سے ان 70 سالوں کے لیے اضافی مانتا ہوں۔

ایک نظر اس پر بھی

زہریلے کھانے کا معاملہ، اعلیٰ سطحی جانچ کرانے سدارمیاکا مطالبہ

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ اور مخلوط حکومت کے کورابطہ کمیٹی کے صدر سدارمیا نے سُلوادی گاؤں کے مرمَّا مندر میں زہریلا کھانہ کھانے سے 11 عقیدتمندوں کی موت اور 80 افراد کے بیمار ہونے کے معاملے کی اعلیٰ سطحی جانچ کا مطالبہ کیا ہے ۔