رضا مانوی: ایک مخلص استاذ۔ایک معتبر صحافی ...... آز: ڈاکٹر محمد حنیف شباب

Source:   ڈاکٹر محمد حنیف شبابؔ  | By Dr. Haneef Shabab | Published on 12th August 2017, 1:05 AM | اسپیشل رپورٹس | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے | ساحلی خبریں |

محمد رضامانوی ! کنڑ اصحافت میں ایم آر مانوی کے طور پر معروف ایک معتبر اورسرگرم شخصیت کا نام ہے جو حق و انصاف پر مبنی صحافتی خدمات میں مصروف وارتابھارتی اور ساحل آن لائن کے قافلے میں شامل ہے۔لیکن عام اردو داں طبقے میں اور خاص کر بھٹکل کے مسلمانوں میں آپ شمس انگلش میڈیم کے انتہائی ذمہ دار اور ایک مخلص استاد کی حیثیت سے زیادہ معروف ہیں جوگزشتہ تقریباً دو دہائیوں سے طلبہ کی تعلیم و تربیت کے فرائض دینے میں اپنا خونِ جگر صَرف کرنے میں لگے ہوئے ہیں ۔اور اسی حوالے سے آج انہیں اہل بھٹکل کی جانب سے "بیسٹ ٹیچر آف دی ایئر"کے زمرے میں" رابطہ ایوارڈ"سے سرفراز کیا گیا ہے۔

محمد رضامانوی صاحب طلبہ میں رضا سر اور اپنے صحافی دوستوں میں مانوی صاب کے طور پر بڑے ہی ہر دلعزیز ہیں۔ آپ نے پہلے سوشیالوجی میں ایم اے کیا۔ جس کے بعد آپ منصورہ میں جماعت اسلامی کی درسگاہ میں ٹیچر کے طور پر خدمات انجام دیں۔ پھر 1997میں بھٹکل میں آپ شمس انگلش میڈیم اسکول بھٹکل سے وابستہ ہوئے۔ اس دوران آپ نے کنڑا میں ایم اے کیا ۔ اس کے علاوہ ڈپلومہ ان جرنلزم کے ساتھ آپ نے بی ایڈ کا کورس بھی مکمل کیا۔

طالب علمی کے زمانے سے ہی فکری طور پرآپ عملاً تحریک اسلامی سے وابستہ رہے ہیں اور اسٹوڈنٹس اسلامک آرگنائزیشن کے اسٹیٹ سکریٹری کی خدمات انجام دے چکے ہیں۔اب آپ جماعت اسلامی کے رکن کی حیثیت سے تحریکی محاذ پر دینی وملّی خدمات انجام دے رہے ہیں۔اساتذہ کی فکری اور مقصدی تربیت کے لئے قائم تحریک اسلامی کی ایک اور ونگ "آل انڈیا اسلامک ٹیچرزایسوسی ایشن"کے سابق ضلعی صدر رہے ہیں اور فی الحال اس کے پریس اینڈ پبلسٹی شعبے کے سکریٹری منتخب ہوئے ہیں۔

رضا مانوی صاحب نے نامہ نگاری کے علاوہ کنڑا کے بہت ہی اچھے مضمون نگار اور شاعراور کنڑا اسپیکر کی حیثیت سے بھی اپنی پہچان بنائی ہے۔آپ ایک خوددار،غیرت مند اور قوم وملت کا درد رکھنے والے بے لوث خدمت گار ہیں۔ شمس اسکول میں ان کے زیر سایہ تربیت پانے والے سینکڑوں طلبہ آج زندگی کے اہم مراحل طے کرنے بعد بلند مقامات پر پہنچ گئے ہیں اوراپنے استاد رضا سرکی خدمات کا اعتراف اور ستائش کرتے نظر آتے ہیں۔طلبہ کے علاوہ شمس کے اسٹاف اور منیجمنٹ میں رضا صاحب کا بڑا احترام اور مقام پایا جاتا ہے۔ گزشتہ سال2016میں شمس اسکول کی طرف سے محترم رضا صاحب کو ان کی تعلیمی خدمات کے لئے "صدیق جعفری ایوارڈ"سے نوازا گیا تھا۔

رضاصاحب کنڑا صحافت کے مورچے پر فرقہ پرست اور سنگھی زعفرانی صحافت کے مقابلے میں قوم وملت کے کاذ کو فروغ دینے اور جہاں بھی ضرورت محسوس ہو اس کے دفاع کے لئے بڑے بے باک انداز میں آگے بڑھتے ہیں۔خاص کر سوشیل میڈیا میں جہاں کسی کی جانب سے اسلام اور مسلمانوں کے خلاف زہر اگلنے کی کوشش ان کے سامنے آتی ہے ، وہ فوری طور پر اپنے مدلل بیان اور مؤثر جواب کے ذریعے ظالموں اور تنگ نظروں کے سامنے بڑی حوصلہ مندی سے حق گوئی کا مجاہدانہ کردار ادا کرجاتے ہیں۔یہی وجہ ہے کہ جہاں حق پرستوں کی صفوں میں رضاصاحب کو چاہنے والوں کی کثیر تعداد موجود ہے، وہاں جھوٹ اور بے کرداری کا مظاہرہ کرنے والے زعفرانی ٹولے میں ان کے دشمنوں کی تعداد بھی کم نہیں ہے۔جس سے ان پرندؔ افاضلی کا یہ شعر بڑی حد تک صادق آتا ہے:
اس کے دشمن ہیں بہت آدمی اچھا ہوگا
                                                     وہ بھی میری ہی طرح شہر میں تنہا ہوگا

تعلیم و تدریس کے سفر میں ایک ساتھی اور دوست کی حیثیت سے میں نے رضا صاحب کو کافی قریب سے دیکھا ہے۔ میری بہت سی تلخ و شیریں یادیں ان کے ساتھ وابستہ ہیں۔آپ نے ذاتی طور پر زندگی کے نشیب وفراز سے گزرتے ہوئے مشکل اورکٹھن حالات کا مقابلہ بڑے صبر واستقامت سے کیا ہے۔ اپنے تحریکی مقصد کے ساتھ پوری لگن اور جذباتی وابستگی کا مظاہرہ کیا ہے۔ قناعت اور صبر وتحمل کے ساتھ زندگی جینا ان کا وصف خاص ہے۔ 

رابطہ ایوارڈ کی تفویض پر میں محمدرضا مانوی صاحب کی خدمت میں دلی مبارکباد پیش کرتے ہوئے اللہ تعالیٰ سے دعاگو ہوں کہ انہیں مزید سرفرازی اورسرخ روئی سے نوازے۔خالص رضائے الٰہی کے حصول کی نیت سے کار زارِحیات میں ہمیشہ سرگرم رہنے مزید توفیق اور استطاعت عطارفرمائے۔ قوم و ملت کی مخلصانہ تعمیری خدمات کامزید حوصلہ اور مواقع نصیب فرمائے۔اور انہیں ہر شرسے ہمیشہ محفوظ و مامون رکھے۔ آمین 

ایک نظر اس پر بھی

افسران کی مبینہ ملی بھگت سے بھٹکل میں حد سے بڑھ گئی پتھروں کے لئے غیر قانونی کھدائی۔ منڈلّی کی پہاڑی کو نابود کرنے کی ہورہی ہے تیاری

بھٹکل میں قانون کی پاسدار ی کرنے والے کئی اسسٹنٹ کمشنرز اور اور کئی تحصیلدار تعینات کیے جاچکے ہیں، لیکن یہاں پر چل رہے ریت اور پتھروں کے غیر قانونی کاروبار پر کسی نے بھی پوری طرح روک لگائی ہو، ایسا دیکھنے میں نہیں آیا۔ بلکہ عوام کا ااحساس تو یہ ہے کہ کچھ افسران کی ملی بھگت سے ہی ...

معصوم بچوں کو روتا چھوڑ کر بھٹکلی بہو کو کیا گیا پاکستان جانے پر مجبور؛ خط سوشیل میڈیا پر وائرل؛ پڑھنے والوں کی انکھوں سے رواں ہوئے آنسو؛ کیا کوئی نہیں جو اس کی مدد کرسکے ؟

پاکستان سے بیاہ کر آئی  قوم نوائط کی  ایک بہو کا شوہر جب دہشت گردی کے الزام میں جیل چلا گیا تو اُس پر کس طرح کے حالات آئے اورجب اس خاتون کا ویزا  کینسل کرکے اُسے  اپنے تین معصوم اور چھوٹے بلکتے بچوں کو  بھٹکل  چھوڑ کر واپس اُس کے وطن  بھیجا گیا تو اُس مظلوم پر کس طرح کی قیامت ...

جب کشمیر ہمارا تو کشمیری ہمارے کیوں نہیں؟ آز: ڈاکٹر محمد نجیب قاسمی سنبھلی

کشمیر کے متعلق مغل شہنشاہ ظہیر الدین بابر نے وہاں کی قدرتی خوبصورتی اور دلکش مناظر کو دیکھ کر کہا تھا کہ کشمیر زمین پر جنت کے مانند ہے۔ ہمالیہ اور پیرپنچال کے پہاڑی سلسلوں کے درمیان واقع کشمیر کی وادی کئی دریاؤں سے زرخیز ہونے والی سرزمین ہے۔ یہ وادی اپنے حسن کے باعث آج بھی پوری ...

ضلع شمالی کینرا میں وبائی صورت اختیار کرنے والی چمڑی کی بیماری۔ علاج کارگر نہ ہونے سے عوام پریشان

محکمہ صحت کی طرف سے یوں تو وبائی امراض پر قابو پانے کے لئے مختلف پروگرا م او ر اسکیمیں موجود ہیں۔ اس میں چمڑی کے امراض میں صرف جذام (کوڑھ/لیپرسی)کے علاج اور روک تھام کی گنجائش ہے۔

یلاپور ضمنی انتخاب میں عوام کے لئے یہ سمجھنا مشکل ہوگیا ہے کہ کس کا تعلق کس پارٹی سے ہے

ریاستی اسمبلی انتخابات کو مکمل ہوئے ابھی دوسال بھی پورے نہیں ہوئے تھے کہ بعض اراکین اسمبلی کی اپنی پارٹیوں سے بغاوت او ر استعفے کے بعد دوبارہ ضمنی انتخا بات کا موسم آگیا ہے۔ اس میں ضلع شمالی کینرا کا یلاپور اسمبلی حلقہ بھی ہے۔

دبئی کے مشہور و معروف تاجر بی آر شیٹی کا منصوبہ۔کمٹہ میں ملٹی اسپیشالٹی ہاسپٹل کا قیام۔کیاجلد پورا ہوگا ضلع کے عوام کا خواب؟!

ضلع شمالی کینرا میں ایک جدید سہولیات والے اسپتال کی ضرورت بہت شدت سے محسوس کی جارہی ہے۔ ایک عرصے سے اس سلسلے میں تجاویز اور منصوبے مختلف اداروں کی جانب سے زیر غور رہے ہیں۔

این آر سی دستاویزات کی تیاری میں اقلیتوں کی رہنمائی کرنے روشن بیگ نے اقلیتی کمیشن کے نئے چیرمین سے کیا مطالبہ

مرکزی حکومت کی ہدایت پر ریاستی حکومت کی طرف سے کرناٹک میں این آر سی نافذ کرنے کے لئے جو تیاری کی جا رہی ہے اس کے پیش نظر ریاستی اقلیتی کمیشن کی طرف سے اقلیتوں بالخصوص مسلمانوں کودستاویزات کی تکمیل میں آسانی فراہم کرنے کے لئے فوری طور پر قدم اٹھانے چاہئے۔ کمیشن کی طرف سے مساجد ...

تیراکی میں یونیورسٹی بلیو کا خطاب جیتنے والے بھٹکل انجمن کالج کے محمد اشفاق اب کریں گے آل انڈیا ٹورنامنٹ میں کرناٹکا یونیورسٹی دھارواڑ کی نمائندگی

انجمن آرٹس سائنس  کامرس  کالج اور پی جی سینٹر  بھٹکل کے ایک طالب العلم   محمد اشفاق ابن محمد  اسلم  تیراکی میں  بہترین مظاہرہ پیش کرتے ہوئے  کرناٹکا یونیورسٹی  بلیو   کا خطاب حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں  ۔کالج کے فزیکل ڈائرکٹر نے   بتایا کہ  تیراکی میں یونیورسٹی ...

پانچ مہینوں بعد  آئی پی ایس  اناملئی کا استعفیٰ منظور : کیا وہ تمل ناڈو کے سنگھ پریوار میں شامل ہوں گے ؟

آئی پی ایس عہدے سے پانچ مہینے پہلے  استعفیٰ دئیے اناملئی کا اب  جا کر مرکزی حکومت نے منظور کیا ہے۔ مستقبل میں اناملئی سنگھ پریوار کے کسی ایک ذیلی ادارے سے جڑ کر زندگی کا دوسرا دور شروع کرنے کے امکانات ظاہر کئے گئے ہیں۔

بابری مسجد مقدمہ میں شامل مسلم پارٹیوں کی طرف سے سپریم کورٹ آف انڈیا میں دیا گیا ایک بیان؛ مسلم پرسنل لاء بورڈ نے جاری کی پریس ریلیز

بابری مسجد کے تعلق سے  آل انڈیا مسلم  پرسنل لاء بورڈ کی بابری مسجد کے کو۔کنوینر   ڈاکٹر قاسم رسول الیاس نے پریس ریلیز جاری کرتے ہوئے مندرجہ ذیل نکات پیش کئے  ہیں :

کاروارکے بیت کول میں آدھی رات کو ٹرک ڈرائیوروں پر حملہ۔ نقدی اور موبائل لوٹنے کے ساتھ لاریوں کو پہنچایاگیا نقصان۔پولیس اسٹیشن سے قریب ہی پیش آئی واردات

بیت کول ماہی گیری بندر کے علاقے میں پولیس اسٹیشن سے چار قدم کے فاصلے پر جمعرات کی شب میں شرپسندوں کے ذریعے بیرونی ریاستوں سے تعلق رکھنے والے ٹرک ڈرائیوروں کو لوٹنے اور گاڑیوں کو نقصان پہنچانے کی واردات پیش آئی ہے۔

افسران کی مبینہ ملی بھگت سے بھٹکل میں حد سے بڑھ گئی پتھروں کے لئے غیر قانونی کھدائی۔ منڈلّی کی پہاڑی کو نابود کرنے کی ہورہی ہے تیاری

بھٹکل میں قانون کی پاسدار ی کرنے والے کئی اسسٹنٹ کمشنرز اور اور کئی تحصیلدار تعینات کیے جاچکے ہیں، لیکن یہاں پر چل رہے ریت اور پتھروں کے غیر قانونی کاروبار پر کسی نے بھی پوری طرح روک لگائی ہو، ایسا دیکھنے میں نہیں آیا۔ بلکہ عوام کا ااحساس تو یہ ہے کہ کچھ افسران کی ملی بھگت سے ہی ...

شیرور میں کار اور لاری کی ٹکر۔کار ڈرائیور ہلاک۔ ایک مسافر شدید زخمی

پڑوسی علاقہ شیرور میں    نیشنل ہائی وے پرواقع سنکد گنڈی پُل کے قریب جمعرات   شام کو پیش آئے کار اور لاری کے تصادم میں کار ڈرائیور موقع پر ہی ہلاک ہوگیا ، جبکہ ایک مسافر شدید زخمی ہوگیا  جسے علاج کے لئے قریبی  اسپتال میں منتقل کیا گیا ہے۔