منی پال اسپتال میں داخل بھٹکل کی ایک مریضہ چل بسی؛ کیا یہ بھی چوہے کے بخار میں مبتلا تھی ؟

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 8th September 2018, 7:57 PM | ساحلی خبریں |

بھٹکل:8/ستمبر(ایس اؤ نیوز) بھٹکل تعلقہ کی ایک مریضہ جو منی پال اسپتال میں زیرعلاج تھی، آج سنیچر کو علاج کارگر نہ ہونے سے  ہلاک ہونے کی اطلاع موصول ہوئی ہے، ڈاکٹروں نے شبہ ظاہر کیا ہے کہ اس کی موت چوہے کے بخار سے ہوئی ہے۔ اس خاتون کی موت  کے ساتھ  ہی اس مشتبہ بخار سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر دو ہوگئی ہے۔ معاملے کو لے کر  تعلقہ بھر  کے عوام میں خوف و ہراس پھیلتا جارہاہے۔

خیال رہے کہ قریب آٹھ،دس روز پہلے بھٹکل کے  ایک شخص کی موت کے تعلق سے منی پال اسپتال سے جاری رپورٹ میں  ڈاکٹروں نے شبہ ظاہر کیا تھا کہ اُس کی موت چوہے کے بخار سے ہوئی تھی۔

منی پال  اسپتال سے جاری رپورٹ میں آج مرنے والی  خاتون کے تعلق سے بھی  ڈاکٹروں نے شبہ ظاہر کیا ہے کہ یہ بھی چوہے کے بخار میں مبتلا تھی۔  (منی  پال اسپتال سے جاری دونوں لوگوں کی ڈیتھ سرٹی فیکٹس  کی نقل ساحل آن لائن کے پاس محفوظ ہیں)

بھٹکل سرکاری اسپتال میں بھی اِس وقت ایک مریضہ بخار میں مبتلا ہونے کی وجہ سے ایڈمٹ ہیں، جس کے خون کی جانچ کرنے پر پتہ چلا ہے کہ یہ خاتون بھی چوہے کے بخار میں مبتلا ہے، خاتون کے فرزند نے ساحل آن لائن کو  بتایا کہ  گذشتہ پانچ روز سے اسپتال میں ایڈمٹ اس کی ماں کی حالت آج قدرے بہتر ہے اور ڈاکٹروں نے اسے  خطرہ سے باہر بتایا ہے۔

ذرائع سے اس بات کا بھی پتہ چلا ہے کہ  مزید دو مریضوں کو  بھٹکل سرکاری اسپتال میں ابتدائی علاج کے بعد منی پال اسپتال روانہ کیا گیاہے اور اُن کے تعلق سے بھی پتہ چلا ہے کہ وہ بھی چوہے کے بخار میں مبتلا ہیں۔

سرکاری اسپتال کے ایک ڈاکٹر سے چوہے کے بخار سے بچنے کے تعلق سے پوچھے جانے پر بتایا کہ پانی کو اُبال کر پیا جانا چاہئے اور صاف صفائی پر خصوصی توجہ دینی چاہئے، اسی سے  اس طرح کے بخار کو پھیلنے سے روکا جاسکتا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

دارالعلوم اسلامیہ عربیہ تلوجہ میں علمائے شوافع کی جانب سے فقہی سمینار کا انعقاد ؛ علماء فقہائے شوافع نے حقیقتاً حدیث اور فقہ میں بہت نمایاں کام کیاہے: خالد سیف اللہ رحمانی 

بروز سنیچر 19؍ جنوری مجمع الامام الشافعی العالمی کی جانب سے دو روزہ پہلے فقہی سمینار کا آغاز کیا گیا اس سمینار کا افتتاحی جلسہ صبح 10؍ بجے جامعہ دارالعلوم اسلامیہ عربیہ تلوجہ ممبئی میں منعقد کیا گیا

بھٹکل: ریاست کے مشہور سد گنگامٹھ کے شری کمار سوامی جی کی وفات پر رابطہ ملت اترکنڑا کا اظہار تعزیت

ریاست کے قدآور ، معروف سد گنگا مٹھ کے شری کمار سوامی جی کے دارِ فانی سے کوچ کر جانے پر رابطہ ملت اترکنڑا ضلع کے عہدیداران نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا ہے کہ سوامی جی ملک کی ایک قوت کی مانند تھے۔

گنگولی کے آراٹے ندی میں غرق ہوکر لاپتہ ہونے والے ماہی گیر کی نعش آج برآمد

یہاں آراٹے ندی میں غرق ہوکر کل رات ایک ماہی گیر لاپتہ ہوگیا تھا، جس کی نعش آج متعلقہ ندی سے برآمد کرلی گئی ہے۔ ماہی گیر کی شناخت آراٹے کڑین باگل کے رہنے والے  کرشنا موگویرا (50) کی حیثیت سے کی گئی ہے۔

کنداپور میں ہوئی چوری کی واردات کے بعد پولس نے گھر میں نوکری کرنے والے میاں بیوی کوکیا گرفتار

کنداور دیہات کے سٹپاڑی کے ایک گھرمیں ہوئی  چوری کے معاملے میں کنداپور دیہی پولس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے اسی گھر میں کام کرنےو الے میاں بیوی کو صرف دو دنوں میں ہی گرفتار کر کے معاملے کو حل کرنے میں کامیابی حاصل کرلی  ہے۔