بی جے پی لیڈروں نے کہا، 2019 سے پہلے بن کر رہے گا رام مندر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th August 2017, 12:21 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،11؍اگست(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)ایودھیا میں رام جنم بھومی اور بابری مسجد کو لے کر تنازعہ پر سپریم کورٹ میں اہم سماعت شروع ہو گئی۔ جمعہ کو شروع ہوئی سماعت میں حکومت کی طرف سے ایسوسی ایٹ سالیسٹر جنرل تشار مہتہ سب سے پہلے اس پر موقف رکھا۔ وہیں معاملے میں ایک مدعی سبرامنیم سوامی نے متنازع مقام پر پوجا دوبارہ شروع کرانے کی مانگ کی۔رام مندر مسئلے پر کچھ سیاسی ردعمل لینے کی کوشش کی۔بی جے پی لیڈر گری راج سنگھ اور ساکشی مہاراج کا رام مندر مسئلے پر کہنا ہے کہ رام مندر بنے گا، ان کا مکمل اعتماد ہے۔ساکشی مہاراج کا تو یہ کہنا ہے رام مندر2019 سے پہلے ہی بن جائے گا۔ پہلے انہیں لگتا تھا کہ 2019 میں بنے گا لیکن اب تو پورے حالات بن گئے ہیں۔ ساکشی مہاراج کا کہنا ہے کہ جو مساوات بنتے جا رہے ہیں، 2019 تو دور ہے اس سے پہلے رام مندر بننا شروع ہو جائے گا۔مرکزی وزیر گری راج سنگھ کا کہنا ہے کہ رام مندر 200 فیصد بنے گا۔ گری راج سنگھ کا کہنا ہے کہ ہم ہندو اور مسلمان دونوں کے خدا شری رام ہی تو تھے توباپ دادا کا مندر دونوں مل کر بنائیں گے توسماجی ہم آہنگی رہے گی۔ اس کی پہل شیعہ وقف بورڈنے کی۔ سنی کوبھی اسی طرح کرنا چاہئے، انتخابات سے پہلے مہادیوہوگا توبنے گا۔

ایک نظر اس پر بھی

سنیمامیں لوگ تفریح کے لیے جاتے ہیں،قومی گیت کولازمی نہیں کیاجاسکتا؛قومی ترانہ پرسپریم کورٹ نے کہا، ہمیں اپنے ہاتھوں میں حب الوطنی نہیں رکھنی چاہیے

سنیماگھروں میں قومی گیت لازمی بنانے کے فیصلہ کے ایک سال بعد ایک موڑ آیاہے۔اب سپریم کورٹ نے سینٹرکوبتایاہے کہ وہ اس معاملے میں خودفیصلہ کرتے ہیں، ہر کام کو عدالت میں داخل نہیں کیاجاسکتاہے۔