راجیہ سبھا انتخابات: ایک سیٹ کے لئے پہلے کبھی نہیں مچا ایسا گھماسان؛ گجرات میں کانگریس کے چھ اراکین بی جے پی کے پالے میں

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 3rd August 2017, 2:07 AM | ملکی خبریں | اسپیشل رپورٹس |

نئی دہلی 2/اگست (ایس او نیوز/ایجنسی)  گجرات سمیت کئی ریاستوں میں آئندہ 8/ اگست کو راجیہ سبھا انتخابات ہونے ہیں. لیکن گجرات میں راجیہ سبھا کی تین نشستوں کے لئے ہونے والا راجیہ سبھا انتخابات دو چار حریفوں کی وجہ سے بحث کا مرکز بن گیا ہے. بی جے پی نے دو سیٹوں کے لئے قومی صدر امت شاہ اور سمرتی ایرانی کو امیدوار بنایا ہے. جبکہ تیسری نشست کے لئے کانگریس کے باغی سابق ممبر اسمبلی بلونت راجپوت کو میدان میں اتارا ہے.

احمد پٹیل کو شکست دینے کے لئے مچا گھماسان
بلونت راجپوت کا مقابلہ کانگریس کے سینئر لیڈر اور سونیا گاندھی کے سیاسی سیکرٹری احمد پٹیل سے ہونا ہے بتایا جارہا ہے کہ  امت شاہ، احمد  پٹیل کو شکست دینے کے لئے اراکین اسمبلی کو توڑنے سے لے کر تمام ہتھکنڈے اپنا نے میں لگے ہوئے ہیں، اور اس نے کانگریس کے 6 ممبران اسمبلی کو اپنے پالے میں کرنے میں بھی کامیابی حاصل کرلی ہے. بتایا جارہا ہے کہ امت شاہ کسی بھی قیمت پر احمد پٹیل کو ہرانا چاہتے ہیں. جبکہ احمد پٹیل مسلسل چار بار  راجیہ سبھا  سے ممبر آف پارلیمنٹ ہیں.

راجیہ سبھا کی ایک سیٹ کے لئے ضروری ہے 44 ووٹ
اگرچہ تازہ صورتحال کو دیکھتے ہوئے کانگریس کے لئے یہ اعداد و شمار جُٹاپانا  مشکل نظر آرہاہے. کیونکہ کانگریس پارٹی کو چھوڑ چکے رہنما شكرسنگھ  واگھیلا کے حامی سمجھے جانے والے چھ ارکان  اسمبلی اب تک پارٹی چھوڑ کر بی جے پی میں شامل ہو چکے ہیں. اس ایوان میں پارٹی کے رکن کی تعداد کم ہوکر 51 رہ گئی ہے. ان میں سے 44 کو  بنگلور ریسورٹ لے جایا گیا ہے۔. ان میں سے بھی راجیہ سبھا انتخابات کی پولنگ کے وقت تک تمام کانگریس کے  ساتھ رہیں گے اس پر بھی شک کا اظہار کیاجارہا ہے۔

15-15 کروڑ روپے کی لگی بولی
کانگریس ارکان  اسمبلی نے الزام لگایا ہے  کہ بی جے پی ابتدا ء سے ان کو 15-15 کروڑ روپئے  کی پیشکش دے چکی ہے۔  اس راجیہ سبھا انتخابات میں ممبران اسمبلی کی خرید وفروخت  کو لے کر جتنی زور آزمائی کی گئی، اس سے پہلے اس طرح کی خریدوفروخت   کسی حکومت کو اعتماد کے ووٹ کے دوران گرنے والی حکومت کو  بچانے کے لئے   سنی جاتی تھی۔

راجیہ سبھا میں بھی مچا گھمسان
پارلیمنٹ کے ایوان بالا راجیہ سبھا میں بھی اس کو لے کر دو دن سے خوب گھماسان  مچا ہوا ہے. کانگریس نے بی جے پی پر سی بی آئی اور محکمہ انکم ٹیکس کا غلط استعمال کرکے ممبران اسمبلی کو ڈرانے دھمکانے کے الزامات لگائے ہیں. کانگریس نے کہا کہ کرناٹک کے وزیر کے یہاں چھاپے صرف اس وجہ ڈلواے گئے کیونکہ انہوں نے ہمارے ممبران اسمبلی کا خرچ اٹھایا.

ریسورٹ  پر بھی لگا جرمانہ
کانگریس کے 44 ممبران اسمبلی بنگلور کے جس اگلٹن ریسورٹ میں ٹھہرے ہیں اس پر 982 کروڑ روپے کا جرمانہ لگا ہے. ریسورٹ  پر 77 ایکڑ زمین آتی کرم کرنے کو لے کر کرناٹک حکومت کی کابینہ نے اجلاس کے بعد اگلٹن ریسورٹ  کو آتی کرم  کی گئی زمین کو واپس  حوالے کرنے یا پھر 982 کروڑ روپے جرمانے کا حکم دیا تھا. یہ حکم کانگریس کے 42 ممبران اسمبلی کو یہاں ٹھہرنے سے دو دن پہلے ہی لگایا گیا تھا. ان سب واقعات سے ثابت ہوتا ہے کہ صرف ایک سیٹ  کے لئے کی جا رہی جدوجہد سیاسی تعصب سے بھری ہوئی ہے، اول اس طرح کے الزامات  کانگریس امیدوار احمد پٹیل کی طرف  سے امت شاہ پر لگائے گئے ہیں.

وزیر کے یہاں چھاپے ماری
محکمہ انکم ٹیکس کے حکام نے بدھ کو کانگریس کی قیادت والی کرناٹک حکومت کے ایک وزیر، ایک کانگریسی رہنما اور ایک ریسورٹ پر چھاپہ مارا. یہ وہی يگلٹن ریسورٹ ہے، جہاں گجرات کانگریس کے 40 سے زیادہ ممبران اسمبلی کو پارٹی سے الگ ہونے  سے بچانے کے لئے ہائی کمان نے رکھا ہے. راجیہ سبھا انتخابات سے پہلے اور ممبران اسمبلی کے پارٹی چھوڑنے سے احمد پٹیل کا الیکشن جیتنا مشکل ہو سکتا ہے. کانگریس نے اس ایکشن کو انتقامی کارروائی قرار دیا ہے. تاہم، بی جے پی نے کہا ہے کہ اگر يگلٹن ریسورٹ انتظامیہ نے کچھ غلط کام  کیا ہے تو کارروائی کرنے میں  کچھ بھی غلط نہیں ہے.

کرناٹکا کے وزیر توانائی ڈی کے شیو کمار کے39ٹھکانوں پر انکم ٹیکس کے چھاپے پر مینگلور میں کانگریس کارکنوں کا سخت احتجاج؛ انکم ٹیکس دفتر میں توڑ پھوڑ ؛ وڈیو کی زبانی

 

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کی نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کا اثر گجرات انتخابات کے نتائج میں نظر آئے گا: اکھلیش یادو 

سماجوادی پارٹی کے سربراہ اکھلیش یادو نے کہا ہے کہ نوٹ بندی اور جی ایس ٹی کی وجہ سے تاجروں پر کافی برا اثر پڑا ہے۔ انہوں نے کہا کہ کسان مخالف اور تاجر مخالف پالیسیوں کی وجہ سے بی جے پی کا گراف نیچے آتا جا رہا ہے۔

گجرات میں سات انتخابات میں دو بار ووٹنگ کے فیصدی میں کمی، دونوں بار بی جے پی کو نقصان تو کانگریس کا فائدہ 

گجرات میں ہفتہ کو پہلے مرحلہ میں19ضلعوں میں کی89نشستوں پرتقریباً 68فیصدی ووٹنگ ہوئی اس بار 2012کے اسمبلی انتخابات سے تقریباً 3فیصدی ووٹنگ ہوئی۔ 2012 میں پہلے مرحلے میں19 میں سے15 اضلاع میں ووٹنگ ہوئی تھی۔

خواتین کمیشن نے زائرہ وسیم کے ساتھ ہوئی چھیڑ خانی کو بتایا انتہائی شرمناک فعل 

قومی خواتین کمیشن نے زائرہ وسیم کے ساتھ شرمناک حادثہ قرار دیا ہے ۔زائرہ وسیم نے سوشل میڈیا کے ذریعے وستارا ایئر لائنزکی فلائٹ سے دہلی سے ممبئی جانے والی پرواز میں جس طرح ہراساں کیے جانے کی بات کہی ہے وہ بھارتی تہذیب و ثقافت کے شرم کی بات ہے ۔

گجرات نے جنگ آزادی کی قیادت کی ہے ،فرقہ پرست طاقتوں کو آگے بڑھنے سے روکنا بھی اس کی اہم ذمہ داری ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ نقطہ نظر : ڈاکٹر منظور عالم

گجرات انتخابات کی تاریخ قریب آچکی ہے ،ممکن ہے جس وقت آپ یہ مضمون پڑھ رہے ہوں اس کے ایک دن بعد گجرات میں رائے شماری کا سلسلہ شروع ہوجائے ،9 اور 14 دسمبر کو دو مرحلوں میں ووٹنگ ہونی ہے جبکہ 18 دسمبر کو نتائج کا اعلان کیا جائے گا ۔گجرات کے رواں انتخابات پر پورے ہندوستان کی نظر ہے ،خاص ...

انقلابی سیرت سے ہم کیوں محروم ہیں؟ .................آز: مولانا سید احمد ومیض ندوی

سیرتِ رسول آج کے مسلمانوں کے پاس بھی پوری طرح محفوظ ہے، لیکن ان کی زندگیوں میں کسی طرح کے انقلابی اثرات نظر نہیں آتے، آخر وجہ کیا ہے؟ موجودہ دور کے ہم مسلمان صرف سیرت کے سننے اور جاننے پر اکتفاء کرتے ہیں، سیرتِ رسول سے ہمارا تعلق ظاہری اور بیرنی نوعیت کا ہے۔حالانکہ س سیرت کی ...

سہراب الدین انکاؤنٹر معاملہ : تین سال پہلے ہوئی جج کی موت پر اب اُٹھے سوال ؛ کیا ان کا قتل ہوا تھا ؟

سہراب الدین کے مبینہ فرضی انکاؤنٹر کی شنوائی کر رہے سی بی آئی جج برج گوپال ہرکشن لویا ، جن کی یکم دسمبر 2014 میں موت واقع ہوئی تھی، اب تین سال بعد اُن کی موت پر سوالات اُٹھ کھڑے ہوگئے ہیں۔  انگریزی ماہنامہ کاروان نے ایک رپورٹ شائع کرتے ہوئے اس بات کا دعویٰ کیا ہے کہ  سی بی آئی جج ...

بھٹکل اسمبلی حلقے میں کھیلا جارہا ہے ایک نیا سیاسی کھیل! کون بنے گا کانگریسی اُمیدوار ؟

یہ کوئی ہنسی مذاق کی بات ہرگز نہیں ہے۔بھٹکل کی موجودہ جو صورتحال ہے اس میں ایک بڑا سیاسی گیم دکھائی دے رہاہے۔ کیونکہ 2018کے اسمبلی انتخابات کی تیاریوں میں لگی ہوئی سیاسی پارٹیاں اپنا امیدوار کون ہوگا اس پر توجہ دینے کے ساتھ ساتھ مخالف پارٹیوں سے کون امیدوار بننے پر ان کی جیت کے ...

سعودی عربیہ میں شہزادوں کی گرفتاریاں؛ کرپشن کے خلاف کریک ڈاؤن یا خاندانی دشمنیاں ؟

سعودی عربیہ میں حال ہی میں جو واقعات رونما ہوئے ہیں اور شہزادوں سمیت  وزراء اور اہم  سرکاری عہدیداروں کی گرفتاریاں ہوئی ہیں، اُس سے نہ صرف سعودی عربیہ  بلکہ پوری اسلامی دنیا پر گہرا  پڑا ہے اور مسلمان سعودی عربیہ میں ہونے والے واقعات پر تشویش میں مبتلا ہوگئے ہیں۔

زندہ قومیں شکایت نہیں کرتی ہیں، بلکہ پہاڑ کھود کر راستے بنا لیتی ہیں ..... آز: ڈاکٹر ظفر الاسلام خان

بہت عرصہ قبل میں نے ایک انگریز مفکر کا مقولہ پڑھا تھا کہ جب تک میری قوم میں ایسے سر پھرے موجود ہیں جو کسی نظریے کو ثابت کرنے کے لئے اپنا گھر بار داؤ پر لگاکر اس کی تحقیق کرتے رہیں، کسی چیز کی تلاش میں صحراؤں میں گھومتے رہیں اور پہاڑوں کی اونچی چوٹیوں کو سر کرنے کی جد وجہد کرتے ...