چلچلاتی دھوپ میں بارش کیلئے گھنٹوں تک مسلمانوں نے ادا کی نماز، اللہ کی رحمت جوش میں آئی اورگھنٹوں ہوئی بارش

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th July 2018, 1:23 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،،11؍جولائی (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)انسان کو اگر کچھ بھی حاصل کرنا ہواور اس کے لئے محنت، لگن ہو اور جدوجہد کرے تو ضرور حاصل ہوجاتی ہے۔ اسی طرح اگر کوئی اللہ سے رجوع کرتا ہے اور دعائیں مانگتا ہے تو وہ دعائیں بھی قبول ہوجاتی ہیں۔ اللہ کہتا ہیکہ جب بندہ خشوع وخضوع کے ساتھ مجھ سے کچھ طلب کرتا ہے تو میں اس کے سر اٹھانے سے پہلے ہی اس کی دعا قبول کرتا ہوں۔

اسلام نے بتایا ہے کہ جب بارش نہ ہواور قحط سالی ہوجائے تو نماز استسقا (بارش کے لئے خصوصی نماز) کے ذریعہ اللہ سے پناہ طلب کی جائے تو اللہ کی رحمت کی بارش ہوتی ہے۔ یہ نماز دیر تک پڑھی جاتی ہے، اور عام طور پر نمازاستسقا کے بعد اللہ کی رحمت جوش میں آتی ہے اور پھر بارش ہوتی ہے۔

ذرائع کے مطابق اترپردیش کے بھدوہی کے پیرخان پور واقع فقیرسیٹھ کے احاطے میں مسلمانوں نے چلچلاتی دھوپ میں نمازاستسقا ادا کی، جس میں شدید گرمی کی پرواہ کئے بغیر شہر کے بڑی تعداد میں مسلم بھائیوں نیشرکت کی۔ ایک طرف چلچلاتی دھوپ اور شدید گرمی، اس کی کوئی پرواہ نہیں تھی۔ مسلمان نماز اور دعا میں مصروف تے۔ یہ منظر دیکھ کر لوگ حیران تھے۔ بہرحال قاری نظیر احمد کی امامت میں نمازاستسقا ادا کی گئی اور بارش کے لئے دعائیں کی گئیں۔

نماز ختم ہونے کے بعد سے ہی آسمان میں بادل چھانے لگے، اس سے لوگوں کو بارش کی امید پیدا ہونے لگی۔ شام ہونے سے پہلے ہی موسم سہانا ہوگیا۔ بارش کی بوندیں زمین کو سیراب کرنے لگیں۔ لوگوں کو یقین ہوا کہ خصوصی نماز (صلوٰۃ استسقا) کا اثر ہوا، اللہ نے دعا قبول کرلی۔

مسلمانوں کے ذریعہ چلچلاتی دھوپ میں نماز ادا کرنے اور پھر رحمت کی بارش ہونے سے ایک طرف لوگوں کو شدید گرمی سے نجات ملی تو دوسری طرف لوگوں نے مسلمانوں کے اس جذبے کو سلام کرتے ہوئے شکریہ بھی ادا کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

جموں و کشمیر میں مودی سرکارکی پالیسی ناکام ہوئی : محبوبہ مفتی

پیپلز ڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) صدر اور سابقہ وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیان میں جموں وکشمیر پولیس کے تین ایس پی اووز کو اغوا کے بعد گولی مار کر ہلاک کرنے کے واقعہ پر اپنا ردعمل میں کہا ہے کہ وادی کشمیر میں مرکزی حکومت کی طاقت پر مبنی پالیسی ناکام ثابت ہوئی ...

کشمیرکے بدترحالات کے لیے مودی سرکارذمہ دار:کانگریس

کانگریس نے کہاہے کہ پچھلے 24گھنٹے کے دوران جموں کشمیر میں تین پولیس جوانوں کے اغواکے بعد قتل اور دہشت گردوں کے خوف سے دس پولیس جوانوں کے مبینہ استعفیٰ کے واقعات تشویش ناک ہیں اور ریاست کے ان حالات کے لیے مودی حکومت ذمہ دارہے۔

یڈیورپا میرے صبر کا امتحان نہ لیں؛ حکومت کو گرانے کی بارہا کوشش بی جے پی کو زیب نہیں دیتی: کمار سوامی کا بیان

وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے ریاستی بی جے پی صدر یڈیورپا کو متنبہ کیا ہے کہ بارہا ریاستی حکومت کو گرانے کی کوشش کرکے وہ ان کے صبر کا امتحان نہ لیں۔اگر یہ کوشش جاری رہی تو یڈیورپا کو اس کی بھاری قیمت ادا کرنی پڑے گی۔

منگلورمیں سواریوں کی تلاشی کے دوران غیر قانونی ریت سپلائی کرنے والی ٹپر لاریاں ضبط

منگلورو جنوبی زون کے اے سی پی ، جنوبی زون راؤڑی نگراں دستہ کے ساتھ مشترکہ طورپر کنکناڑی شہری پولس تھانہ حدود کے پڈیل جنکشن اور پمپ ویل قومی شاہراہ پر سواریوں کی تلاشی کے دوران غیر قانونی طورپر ریت سپلائی کرنےو الی لاریوں کا پتہ چلنے پر سواریوں کو ضبط کرنے کا واقعہ پیش آیا ہے۔