چلچلاتی دھوپ میں بارش کیلئے گھنٹوں تک مسلمانوں نے ادا کی نماز، اللہ کی رحمت جوش میں آئی اورگھنٹوں ہوئی بارش

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th July 2018, 1:23 AM | ملکی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

نئی دہلی،،11؍جولائی (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)انسان کو اگر کچھ بھی حاصل کرنا ہواور اس کے لئے محنت، لگن ہو اور جدوجہد کرے تو ضرور حاصل ہوجاتی ہے۔ اسی طرح اگر کوئی اللہ سے رجوع کرتا ہے اور دعائیں مانگتا ہے تو وہ دعائیں بھی قبول ہوجاتی ہیں۔ اللہ کہتا ہیکہ جب بندہ خشوع وخضوع کے ساتھ مجھ سے کچھ طلب کرتا ہے تو میں اس کے سر اٹھانے سے پہلے ہی اس کی دعا قبول کرتا ہوں۔

اسلام نے بتایا ہے کہ جب بارش نہ ہواور قحط سالی ہوجائے تو نماز استسقا (بارش کے لئے خصوصی نماز) کے ذریعہ اللہ سے پناہ طلب کی جائے تو اللہ کی رحمت کی بارش ہوتی ہے۔ یہ نماز دیر تک پڑھی جاتی ہے، اور عام طور پر نمازاستسقا کے بعد اللہ کی رحمت جوش میں آتی ہے اور پھر بارش ہوتی ہے۔

ذرائع کے مطابق اترپردیش کے بھدوہی کے پیرخان پور واقع فقیرسیٹھ کے احاطے میں مسلمانوں نے چلچلاتی دھوپ میں نمازاستسقا ادا کی، جس میں شدید گرمی کی پرواہ کئے بغیر شہر کے بڑی تعداد میں مسلم بھائیوں نیشرکت کی۔ ایک طرف چلچلاتی دھوپ اور شدید گرمی، اس کی کوئی پرواہ نہیں تھی۔ مسلمان نماز اور دعا میں مصروف تے۔ یہ منظر دیکھ کر لوگ حیران تھے۔ بہرحال قاری نظیر احمد کی امامت میں نمازاستسقا ادا کی گئی اور بارش کے لئے دعائیں کی گئیں۔

نماز ختم ہونے کے بعد سے ہی آسمان میں بادل چھانے لگے، اس سے لوگوں کو بارش کی امید پیدا ہونے لگی۔ شام ہونے سے پہلے ہی موسم سہانا ہوگیا۔ بارش کی بوندیں زمین کو سیراب کرنے لگیں۔ لوگوں کو یقین ہوا کہ خصوصی نماز (صلوٰۃ استسقا) کا اثر ہوا، اللہ نے دعا قبول کرلی۔

مسلمانوں کے ذریعہ چلچلاتی دھوپ میں نماز ادا کرنے اور پھر رحمت کی بارش ہونے سے ایک طرف لوگوں کو شدید گرمی سے نجات ملی تو دوسری طرف لوگوں نے مسلمانوں کے اس جذبے کو سلام کرتے ہوئے شکریہ بھی ادا کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

مالیگاؤں 2008ء بم دھماکہ معاملہ: موقع واردات پر موجود دو زخمیوں کی گواہی عمل میں آئی،ابتک 68؍ سرکاری گواہوں کی گواہیاں مکمل

 مہاراشٹر کے گنجان مسلم آبادی والے شہر مالیگاؤں میں 29؍ ستمبر 2008ء کو رو نما ہونے والے بم دھماکہ معاملے کی سماعت میں ہائی کورٹ کے حکم کے مطابق روز بہ روز جاری ہے ،

بھٹکل فائر بریگیڈ عملے نے کیا ٹریٹمنٹ پلانٹ سے ضائع ہونے والے پانی کومحفوظ کرنے کا انتظام

بھٹکل ساگر روڈ پرپینے کے پانی کی صفائی کے لئے قائم ٹریٹمنٹ پلانٹ سے ضائع ہونے والے پانی کا صحیح استعمال کرنے کے لئے بھٹکل فائر بریگیڈ عملے میں شامل رمیش شیٹی نے اپنے طور پر اسے محفوظ کرنے کا انتظام کردیا ہے۔