الگ موڈ میں راہل گاندھی، مودی حکومت پرکسا طنز، شیئرکیامزاحیہ ویڈیو

Source: S.O. News Service | Published on 16th July 2017, 10:58 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی، 16/جولائی (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)کانگریس نائب صدر راہل گاندھی گزشتہ کچھ دنوں سے نریندر مودی حکومت کے خلاف جارحانہ تیور اپنارہے ہیں۔امرناتھ یاترا کے دوران ہوئے دہشت گردانہ حملے، نوٹ بند ی کے بعد اب راہل گاندھی نے این ڈی اے حکومت کی پالیسیوں کو لے کر طنز کسا ہے،لیکن اس بار ان کا انداز بھی بدلا بدلاسا ہے۔ راہل نے ایک مزاحیہ ویڈیو ٹوئٹ کیا ہے، جس میں ایک لڑکے اورلڑکی کسی ریسٹورنٹ میں پیسوں کی لین دین کرتے دکھائی دے رہے ہیں۔راہل گاندھی نے اس ویڈیوکاکیپشن دیا ہے’این ڈی اے کی غریبوں کی مفاد والی پالیسی‘۔اس سے پہلے جمعرات کو بھی راہل نے ٹوئٹ کرکے طنز کسا تھا۔راہل گاندھی نے چٹکی لیتے ہوئے ٹوئٹر پر لکھا تھا کہ حکومت نوٹوں کی گنتی کرنے کے لیے ریاضی کے اساتذہ کو تلاش کر رہی ہے، دلچسپی رکھنے والے لوگ پی ایم ا و سے رابطہ کر سکتے ہیں۔دراصل راہل گاندھی نے ٹوئٹر پر نوٹ بند ی کے بعد پرانے نوٹوں کے اعدادوشمار سے جڑی ایک خبر کو ٹیگ کرتے ہوئے مرکزی حکومت پر طنز کسا ہے۔غورطلب ہے کہ بدھ کو جب ریزرو بینک کے گورنر ارجت پٹیل پارلیمنٹ کی مالی امور کی مستقل کمیٹی کے سامنے پیش ہوئے تو زیادہ تر ارکان نے ان سے یہی سوال پوچھا کہ نوٹ بند ی کے بعد ریزرو بینک کے پاس کتنے نوٹ آئے۔ارجت پٹیل نے کمیٹی کے ممبران کو بتایا تھا کہ نوٹ بند ی کے وقت 17.7لاکھ کروڑ روپے کی کرنسی مارکیٹ میں تھی، جن میں سے زیادہ تر 500اور 1000روپے کے نوٹ تھے،لیکن ان میں سے کتنا روپیہ پرانے نوٹ کی شکل میں واپس آ چکا ہے؟ اس سوال پر ارجت پٹیل نے گول مول جواب دیا تھا۔
 

ایک نظر اس پر بھی