امیر قطر الشیخ تمیم کی سعودی ولی عہد کے ساتھ فون پر بات چیت، مذاکرات کی خواہش کا اظہار

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 9th September 2017, 9:27 PM | خلیجی خبریں |

دوحہ،9؍ستمبر(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)قطر کے امیر الشیخ تمیم بن حمد آل ثانی نے سعودی عرب کے ولی عہد نائب وزیراعظم ووزیردفاع شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز آل سعود سے ٹیلیفون پر رابطہ کیا ہے۔ جمعہ کے روز ولی عہد کے ساتھ بات چیت میں امیر قطر نے تمام تنازعات اور اختلافات مذاکرات کی میز پرحل کرنے کی خواہش کا اظہار کیا۔ امیر قطر کا کہنا تھا کہ ان کا ملک بائیکاٹ کرنیوالے چار ممالک کے اعتراضات دور کرنے اور مشترکہ مفادات کے تحفظ کی ضمانت پر بات چیت کے لیے تیار ہے۔ رپورٹ کے مطابق سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے امیر قطر کے فون کا خیر مقدم کیا اور ان کی جانب سے بات چیت کے ذریعے تمام مسائل کے حل پرآمادگی کو سراہا۔

دونوں رہنماؤں کے درمیان طے پائے والے مفاہمتی امور کی تفصیلات جلد سامنے آجائیں گی۔سعودی پریس ایجنسی کے مطابق امیر قطر اور ولی عہد کے درمیان ہونے والی بات چیت کے حوالے سے سعودی عرب متحدہ عرب امارات، بحرین اور مصر کو اعتماد میں لے گا۔قبل ازیں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بھی امیر قطر پر ریاض سربراہ کانفرنس میں دہشت گردی کے خلاف طے پائے والے نکات پرعمل درآمد پر زور دیا تھا۔وائٹ ہاؤس کی جانب سے جاری کیے گئے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے امیر قطر سے ٹیلیفون پر بات کرتے ہوئے ان پر دہشت گردی کے خلاف جنگ میں موثر کردار ادا کرنے، دہشت گردی کی مالی معاونت روکنے اور انتہا پسندانہ نظریات کے خلاف مل کر لڑنے کی ضرورت پر زور دیا۔

جمعرات کو امریکا کے دورے کے دوران امیر کویت الشیخ صباح الاحمد الصباح نے ایک پریس کانفرنس میں کہا تھا کہ قطر دہشت گردی کے خلاف یکساں موقف رکھنے والے چار عرب ممالک کے تمام 13مطالبات پرعمل درآمد کے لیے بات چیت پر تیار ہے۔امیر کویت نے خلیجی بحران کو جلد از جلد حل کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ ان کا کہنا تھا کہ کویت قطر کو اس کے تحفظات دور کرنے کے لیے ضمانت دینے پر تیار ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

شارجہ میں ابناء علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی خوبصورت تقریب؛ یونیورسٹی میں میڈیکل تعلیم صرف 60 ہزار میں ممکن!

علی گڈھ مسلم یونیورسٹی جسے بابائے قوم مرحوم سر سید احمد خان نے دو سو سال قبل قائم کیا تھا آج تناور درخت کی شکل میں ملک میں تعلیم کی روشنی عام کررہا ہے۔اس یونیورسٹی میں میڈیکل کے طلبا کے لئے پانچ سال کی تعلیمی فیس صرف 60,000 روپئے ہے، حالانکہ دوسری یونیورسیٹیوں میں میڈیکل کے طلبا ...

متحدہ عرب امارات میں حفظ قرآن جرم، حکومت کی منظوری کے بغیر کوئی شخص قرآن حفظ نہیں کرسکتا، مساجد میں مذہبی تعلیم اور اجتماع پر بھی پابندی

مشرقی وسطیٰ کے مختلف ممالک میں داخل اندازی اور عرب کی اسلامی تنظیموں کو دہشت گرد قرار دینے کے بعد متحدہ عرب امارات قانون کے ایسے مسودہ پر کام کررہا ہے جس کی رو سے حکومت کی منظوری کے بغیر قرآن شریف کا حفظ بھی غیرقانونی ہوگا۔