بلند شہر میں بیوی کی یاد میں’’منی تاج محل‘‘ کی تعمیر کرنے والے قادری سپرد خاک

Source: S.O. News Service | By Staff Correspondent | Published on 10th November 2018, 7:04 PM | ملکی خبریں |

لکھنؤ،10؍نومبر(ایس او نیوز؍ایجنسی) اترپردیش کے بلند شہر میں اپنی بیگم کی یاد میں منی تاج محل کی تعمیر کرنے کے بعد سرخیوں میں آئے فیض الحسن قادری کو ہفتہ کو ان کی بیوی کی قبر کے بغل میں سپرد خاک کر دیا گیا۔ گزشتہ روز گاوں میں ہی ان کا سڑک حادثہ میں انتقال ہو گیا تھا۔ بلند شہر کے ڈبائی قصبہ علاقے کے کسیرکلا گاؤں کے رہنے والے فیض الحسن قادری محکمہ ڈاک میں پوسٹ ماسٹر کے عہدے سے ریٹائر ہوکر گاؤں میں ہی بیوی کے ساتھ اپنی زندگی گذار رہے تھے۔ ان کی کوئی اولاد نہیں تھی، ان کی بیگم اکثر بیمار رہنے لگی تھیں۔ سال 2011 میں ان کی بیوی تجملی بیگم کا انتقال ہوگیا۔

فیض الحسن نے عزم کیا کہ وہ اپنی بیوی کی یاد میں شاندار مقبرہ بنائیں گے۔ انہوں نے 24 دسمبر 2011 کو اپنی ذاتی زمین پر منی تاج محل بنانا شروع کر دیا۔ بیوی کی قبر کے برابر اپنی قبر کی جگہ چھڑوا رکھی تھی۔

اس منی تاج محل کو دیکھنے کے لیے ملک و بیرون ملک سے بھی سیاح کسیرکلا گاؤں میں آنے لگے ہیں۔ اس منی تاج محل پر’’دی رئیل تھنک‘‘ نام کی ایک ڈاکیومنٹری بھی بنائی گئی جو ملک و بیرون ملک میں کافی دلچسپی سے نہ صرف دیکھی گئی بلکہ ڈاکیومنٹری بننے کے بعد قادری کا نام بھی سرخیوں میں آگیا۔

اسی ڈاکومنٹری کی ترسیل کی خبر جب اس وقت کے وزیر اعلی اکھلیش یادو تک پہنچی تو انہوں نے ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ بلند شہر کو  قادری کے پاس بھیج کر امداد کی خواہش کا اظہار کیا۔  فیض الحسن قادری نے کسی بھی قسم کی امداد لینے سے انکار کردیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ یہ ان کی ذاتی ملکیت ہے۔ اس میں وہ حکومت یا عوام کا دخل نہیں چاہتے ہیں۔  یادو نے اس وقت کے ڈی ایم بی چنددر کلا کو ان کے گاؤں بھیج کر لکھنؤ میں ملنے کا دعوت نامہ بھیجا تھا۔  قادری کو لکھنؤ میں وزیر اعلی اکھلیش یادو نے ان کو اعزاز سے نوازا تھا۔

اس دوران فیض الحسن قادری نے وزیر اعلی سے اپنی بقیہ زمین پر اپنی بیگم کے نام سے کنیا انٹر کالج  بنوانے کی خواہش کا اظہار کیا تھا۔ اکھلیش یادو نے ان کی خواہش کی تکمیل کرتے ہوئے انٹرکالج کو منظوری دے تھی۔ اب یہ تین منزلہ اسکول بن کر تیار ہے۔ اس کنیا انٹر کالج کو سرکاری انٹر کالج کا نام دے دیا گیا۔ اپنی بیوی تجملی بیگم کے نام پر رکھنے کی کوشش میں  قادری نے افسروں کے چکر کاٹے لیکن انہیں کامیابی نہیں ملی۔

ان کی تدفین میں شرکت کے لئے بلند شہر کے علاوہ علی گڑھ، دہلی، میرٹھ اور گوتم بدھ نگر کی متعدد سماجی تنظیموں کے لوگ شامل ہوئے تھے۔ ریاست کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو نے بھی قادری کے انتقال پر اپنے غم کا اظہار کیا ہے۔ قادری گذشتہ  بدھ کو گاؤں میں ہی ایک تیز رفتار گاڑی کی زد میں آکر شدید طور پر زخمی ہوگئے تھے۔انہیں علی گڑھ میڈیکل کالج میں علاج کے لئے داخل کرایا گیا تھا جہاں جمعہ کو ان کا انتقال ہوگیا تھا۔

ایک نظر اس پر بھی

کاروار بوٹ حادثہ: زندہ بچنے والوں نے کیا حیرت انگیز انکشاف قریب سے گذرنے والی بوٹوں سے لوگ فوٹوز کھینچتے رہے، مدد نہیں کی؛ حادثے کی وجوہات پر ایک نظر

کاروار ساحل سمندر میں پانچ کیلو میٹر کی دوری پر واقع جزیرہ کورم گڑھ پر سالانہ ہندو مذہبی تہوار منانے کے لئے زائرین کو لے جانے والی ایک کشتی ڈوبنے کا جو حادثہ پیش آیا ہے اس کے تعلق سے کچھ حقائق اور کچھ متضاد باتیں سامنے آرہی ہیں۔ سب سے چونکا دینے والی بات یہ ہے کہ کشتی جب  اُلٹ ...

ای وی ایم تنازعہ: کپل سبل نے کہا 'ذاتی حیثیت سے گیا تھا لندن، کانگریس کا کوئی لینا دینا نہیں'۔

  کانگریس کے سینئر لیڈر کپل سبل نے بھارتیہ جنتاپارٹی (بی جے پی)کےلیڈر اوروزیرقانون روی شنکر پرساد کےان الزامات کو منگل کو پوری طرح سے بے بنیاد بتاکہ لندن میں الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم )سے متعلق پریس کانفرنس کا اہتمام کانگریس نے کیاتھا اورواضح کیاکہ وہ اس میں ذاتی حیثیت ...

مدارس کو اگربند نہیں کیا گیا توآئی ایس آئی ایس حامی ہوجائیں گے مسلم بچے، وسیم رضوی نے وزیراعظم کو خط لکھ کرکیا مطالبہ

اپنے متنازعہ بیانات  کے سبب اکثرسرخیوں میں رہنے والے اترپردیش شیعہ وقف بورڈ کے چیئرمین وسیم رضوی نے وزیراعظم نریندرمودی کوخط لکھ کربنیادی سطح تک کے سبھی مدارس کوبند کرنے کا مشورہ دیا ہے۔

اپنے کسی بھی ممبر اسمبلی کو لوک سبھا انتخابات میں نہیں اتارے گی عام آدمی پارٹی

عام آدمی پارٹی آئندہ لوک سبھا انتخابات میں اپنے موجودہ  ممبراسمبلی اور وزرا کو ٹکٹ نہیں دے گی۔ عآپ کے سینئر لیڈر گوپال رائے نے منگل کو یہ جانکاری دی ہے۔ عام آدمی پارٹی کی دہلی یونٹ کے صدر رائے نے ساتھ ہی کہا کہ انتخابات کی اطلاع جاری ہونے سے کافی پہلےہی دہلی م پنجاب اور ہریانہ ...

الیکٹرانک ووٹنگ مشینوں پر چندرابابوکوشبہات

الکٹرانک ووٹنگ مشینوں (ای وی ایمس)کے استعمال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اے پی کے وزیراعلی و تلگودیشم پارٹی کے قومی صدر این چندرابابونائیڈو نے کہا کہ ان مشینوں میں الٹ پھیر کے کئی ثبوت پائے گئے ہیں