سکھ پال سنگھ کھیرانے عام آدمی پارٹی کی رکنیت سے دیا استعفیٰ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 6th January 2019, 9:53 PM | ملکی خبریں |

چنڈی گڑھ،6؍ جنوری (ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) پنجاب سے عام آدمی پارٹی (آپ) کے باغی ممبر اسمبلی سکھ پال سنگھ کھیرا نے اتوار کو پارٹی کی ابتدائی رکنیت سے استعفی دے دیا۔

انہوں نے الزام لگایا کہ پارٹی اس نظریے اور اصولوں سے مکمل طورپر گمراہ ہوچکی ہے جن کی بنیاد پر انا ہزارے کی تحریک کے بعد اس کا قیام ہوا تھا۔پارٹی مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی وجہ سے گزشتہ سال نومبر میں پارٹی سے معطل کئے گئے کھیرا نے اپنا استعفی اروند کیجریوال کو بھیج دیا ہے۔بولاتھ سے رکن اسمبلی نے اپنے استعفیٰ میں کہاکہ ملک کی روایتی جماعتوں کی موجودہ سیاسی ثقافت بری طرح بگڑ چکی ہے جس کی وجہ سے آپ کے قیام سے بہت امیدیں جگی تھیں۔

کھیرا نے کہاکہ بدقسمتی سے پارٹی میں شامل ہونے کے بعد میں نے محسوس کیا کہ آپ کا رویہ بھی روایتی مرکزی سیاسی جماعتوں سے مختلف نہیں ہے۔گزشتہ جولائی میں پنجاب اسمبلی کے اپوزیشن لیڈر کے عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد سے وہ آپ کی قیادت کے ناقد رہے ہیں۔عہدے سے ہٹائے جانے کے بعد کھیرا نے سات حامیوں کے ساتھ باغیوں کے ایک گروپ تشکیل دی جس نے پارٹی کی پنجاب یونٹ کے لئے خود مختاری کا مطالبہ کیا۔

ایک نظر اس پر بھی

 گجرات:  ٹھاکر کمیونٹی کادقیانوسی قانون،لڑکیوں کے موبائل کے استعما ل پر مکمل پابندی، بھاگ کر شادی کرنے پر اہل خانہ کو بھرنا ہوگا جرمانہ 

گجرات کے بناس کا ٹھا میں ٹھا کر کمیونٹی کی طرف سے 12 دیہات میں عجیب و غریب اور دقیانوسی قوانین بنائے گئے ہیں۔ اس میں ایک اصول ایسا ہے کہ لڑکیاں اپنے پاس موبائل نہیں رکھ پائیں گی۔

 اب تمام علاقائی زبانوں میں ہون گے ڈاک محکمہ کے امتحانات، راجیہ سبھا میں ہنگامہ کے بعد حکومت نے منسوخ کیا پیپر 

ڈاک محکمہ کی گزشتہ ہفتے ہوئے ایک امتحان کا ذریعہ صرف ہندی اور انگریزی رکھنے کی مخالفت میں منگل کو راجیہ سبھا میں کئی جماعتوں کے ارکان کے ہنگامے کی وجہ سے کاروائی کئی بار روکنا پڑی۔

پاکستانی جیل میں قید سابق ہندوستانی افسر کلبھوشن پر بین الاقوامی عدالت کا فیصلہ آج

پاکستان کی جیل میں بند ہندوستانی بحریہ کے سابق فوجی افسر کلبھوشن جادھو کے معاملے میں بدھ کو ہیگ واقع بین الاقوامی عدالت (آئی سی جے) اپنا فیصلہ سنائے گی۔ ’دی ہیگ‘ کے پیس پیلس میں 17 جولائی کو ہندوستانی وقت کے مطابق شام ساڑھے چھ بجے کھلی سماعت ہوگی جس کے بعد چیف جسٹس عبدالقوی ...