تعلیمی اداروں میں موبائل فون کے استعمال پر مکمل پابندی 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 24th November 2018, 12:18 PM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،24؍نومبر(ایس او نیو ز) ریاستی حکومت نے ریاست کے تمام اسکولوں اور کالجوں میں طلبا کی طرف سے موبائل فون کے استعمال پر پابندی عائد کردی ہے، اور حکم جاری کیا ہے کہ اس پابندی کو پامال کرنے کی سزا کے طور پر طلبا کا موبائل فون ضبط کیا جاسکتا ہے۔ محکمۂ پری یونیورسٹی ایجوکیشن بورڈ کی طرف سے جاری نوٹی فکیشن کے مطابق ریاست کے کسی بھی پرائمری ، ہائی اسکول ، پی یو کالج یا اعلیٰ تعلیمی مراکز میں موبائل فون کے استعمال پر مکمل پابندی عائد کردی گئی ہے۔ وزیر اعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی کی ہدایت پر محکمۂ تعلیمات نے یہ سرکیولر جاری کیا ہے۔ اس کا مقصد یہ ہے کہ بچوں کو ا پنی تعلیم کی طرف مکمل توجہ دینے کے لئے راغب کیا جائے اور تعلیم کے اوقات میں موبائل، لیاپ ٹاپ وغیرہ کا استعمال کرکے سوشیل میڈیا اور دیگر خرافات پر یہ بچے اپنا وقت ضائع نہ کردیں۔ اکثر تعلیمی اداروں میں یہ شکایت عام ہے کہ طلبا کلاس کے اوقات میں سوشیل میڈیا سائٹس ، فیس بک اور واٹس اپ وغیرہ پر اپنا وقت ضائع کررہے ہیں ، اس سلسلے میں اساتذہ اور کالج اور اسکولوں کے انتظامیہ کی طرف سے بارہا تاکید اور لتاڑ بھی فضول ہے۔ ان شکایات کو دیکھتے ہوئے وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی نے سخت ہدایت جاری کی ہے کہ تعلیمی اداروں میں موبائل فون کے استعمال پر سختی سے روک لگائی جائے ، اس سلسلے میں جو پابندی عائد کی جائے گی اسے پامال کرنے والوں کے خلاف بلامروت کارروائی کی جائے۔ بعض حلقوں میں کہا جارہا ہے کہ محکمۂ پی یو ایجوکیشن بورڈ کی طرف سے موبائل فون پرپابندی کی حد تک جو حکم صاد ر کیا گیا ہے وہ درست ہے، البتہ لیاب ٹاپ پر پابندی عائد کرنے کے اقدام پر اعتراضات کئے جارہے ہیں۔ اس دوران کالجوں اور اسکولوں کے تذریسی عملے پر بھی پابندی لگائی گئی ہے کہ وہ کلاس کے اوقات میں موبائل فون کا استعمال قطعاً نہ کریں ، ان کے موبائل فون کالج میں رکھنے کے لئے محکمۂ تعلیمات نے ہر تعلیمی ادارے کو ہدایت دی ہے کہ ایک الگ لاکر مہیا کرایا جائے تاکہ کلاسوں کے اوقات میں اساتذہ اور لکچرارس اپنے اپنے لاکرس میں فون رکھ دیں۔ اور کلا س ختم ہونے کے بعد انہیں لے جائیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

لوک سبھا انتخابات کے نتائج؛ ملک میں پھر ایک بار مودی سرکار؛ کانگریس اور اسکی حلیف جماعتوں کو شرمناک شکست کا سامنا

لوک سبھا انتخابات کی 542 سیٹوں کے لئے  ووٹوں کی گنتی جاری ہے اور اب تک سامنےآئے رجحانات میں بی جے پی اور اس کی حلیف این  ڈی اے  کو زبردست جیت حاصل ہورہی ہے اس کے ساتھ ہی  پھر ایک بار مودی سرکار کا  اقتدار میں آنا طئے ہے۔ کانگریس اور اس کی حلیف جماعتیں اس قدر پیچھے نظر آرہی  ہیں ...

انتخابی نتائج سے پہلے غیر بی جے پی جماعتوں کو متحد کرنے کوششیں جاری؛ چندرابابو نائیڈو کی دیوے گوڈا اور کماراسوامی سے بند کمرہ میں ملاقات

آندھرا پردیش کے وزیراعلیٰ این چندرابابو نائیڈو جو غیر بی جے پی جماعتوں کو ملک بھرمیں متحد کرنے کی مہم میں مصروف ہیں، نے بنگلورو میں سابق وزیراعظم دیوے گوڈا اور کرناٹک کے وزیراعلیٰ ایچ ڈی کمار سوامی سے ملاقات کی۔

روشن بیگ کے خلاف کاروائی سے کانگریس کا گریز؛ کیا بی جے پی کی جانب جھکاو کو دیکھتے ہوئے اُنہیں منانے کی کوشش ہورہی ہے ؟

ریاست کرناٹک کی کانگریس۔ جنتادل ایس مخلوط حکومت کی قسمت،کرناٹک میں لوک سبھاانتخابات کے نتائج کے ساتھ مربوط سمجھی جارہی ہے۔ اس صورتحال کے درمیان توقع نہیں ہے کہ کانگریس ہائی کمان ناراض لیڈرروشن بیگ کے خلاف کوئی سخت کاروائی کرے گی۔ روشن بیگ نے پارٹی کے اعلیٰ رہنمابشمول جنرل ...

بنگلور میں ووٹوں کی گنتی کے لئے پولیس کے غیر معمولی حفاظتی انتظامات

لوک سبھا انتخابات کے لئے شہر میں ووٹوں کی گنتی کے تمام انتظامات پورے کرلئے گئے ہیں۔ بنگلور کے ریٹرننگ افسر اور بی بی ایم پی کمشنر منجوناتھ پرساد اور پولیس کمشنر سنیل کمار نے آج تینوں مقامات پر گنتی کے مرکزوں میں سکیورٹی کے انتظامات کا معائنہ کرتے ہوئے اطمینان ظاہر کیا۔

بیلگام میں ایک روینو انسپکٹر سمیت تین افراد گرفتار، 1.86لاکھ غیرمحسوب رقم ضبط

محکمہ انسداد رشوت ستانی کے عہدیداروں نے 3افراد بشمول ایک ریونیو انسپکٹر اور دو درمیانی افراد کو گرفتارکرلیا اور یہاں سے تقریباً 50کلومیٹر دور بیلہنگل میں واقع دفتر سے 1.86لاکھ روپے کی غیرمحسوب رقم برآمد کی۔

انتخابات کے دوران تشدد معاملہ:سپریم کورٹ نے بی جے پی امیدوار ارجن سنگھ کو دی راحت، 28 مئی تک گرفتاری پر لگائی روک

مغربی بنگال کے بیرکپور سے بی جے پی امیدوار ارجن سنگھ کو سپریم کورٹ سے راحت مل گئی ہے۔سپریم کورٹ نے 28 مئی تک ان کی گرفتاری پر روک لگا دی ہے۔غور طلب ہے کہ ارجن سنگھ نے کہا تھاکہ مجھ پر ریاستی حکومت نے 21 کیس درج کئے ہیں۔

رافیل معاملہ: سپریم کورٹ سے اپیل،بند لفافے میں غلط معلومات دینے والے افسران کے خلاف کارروا ئی ہونی چاہیے 

رافیل معاملے پر تنازعہ ختم ہوتا نظر نہیں آ رہا ہے۔اس معاملے میں درخواست گزار یشونت سنہا، ارون شوری اور پرشانت بھوشن نے نظر ثانی کی درخواست پر تحریری دلیلیں سپریم کورٹ میں داخل کی ہیں۔

جبل پورسیمی مقدمہ،دہشت گردی کے الزام سے نچلی عدالت سے بری ملزمین کے خلاف داخل حکومت کی اپیل خارج،جمعیۃ علماء کی کوششوں سے ملزمین کو راحت ملی: گلزار اعظمی

ممنوعہ تنظیم اسٹوڈنٹس اسلامک موومنٹ آف انڈیا (سیمی) سے تعلق رکھنے کے الزام میں گرفتار5/ مسلم نوجوانوں کی نچلی عدالت سے باعزت رہائی کے خلاف حکومت کی جانب سے داخل اپیل کو گذشتہ ہفتہ جبل پور کی سیشن عدالت نے یہ کہتے ہوئے خارج کردیا

روشن بیگ کے خلاف کاروائی سے کانگریس کا گریز؛ کیا بی جے پی کی جانب جھکاو کو دیکھتے ہوئے اُنہیں منانے کی کوشش ہورہی ہے ؟

ریاست کرناٹک کی کانگریس۔ جنتادل ایس مخلوط حکومت کی قسمت،کرناٹک میں لوک سبھاانتخابات کے نتائج کے ساتھ مربوط سمجھی جارہی ہے۔ اس صورتحال کے درمیان توقع نہیں ہے کہ کانگریس ہائی کمان ناراض لیڈرروشن بیگ کے خلاف کوئی سخت کاروائی کرے گی۔ روشن بیگ نے پارٹی کے اعلیٰ رہنمابشمول جنرل ...

بنگلور میں ووٹوں کی گنتی کے لئے پولیس کے غیر معمولی حفاظتی انتظامات

لوک سبھا انتخابات کے لئے شہر میں ووٹوں کی گنتی کے تمام انتظامات پورے کرلئے گئے ہیں۔ بنگلور کے ریٹرننگ افسر اور بی بی ایم پی کمشنر منجوناتھ پرساد اور پولیس کمشنر سنیل کمار نے آج تینوں مقامات پر گنتی کے مرکزوں میں سکیورٹی کے انتظامات کا معائنہ کرتے ہوئے اطمینان ظاہر کیا۔