کرناٹک میں پولیس ٹریننگ کالجس کے لیے50کروڑ روپیوں کی منظوری: وزیر داخلہ رام لنگا ریڈی 

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th March 2018, 10:34 AM | ریاستی خبریں |

بنگلور10مارچ(ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا)وزیر داخلہ کرناٹک مسٹر رام لنگا ریڈی نے کہا ہے کہ پولیس ٹریننگ کالجوں میں مختلف سہولیات کی فراہمی کے لئے ریاستی حکومت نے 50کروڑروپیے منظورکیے ہیں۔وہ گلبرگہ کے ناگن ہلی پولیس ٹریننگ کالج میں جمعرات کے دن اسپیشل ریزروسب انسپیکٹرس ریزر و وسب انسپیکٹرس کے تیسرے بیاچ اور سیول پولیس کانسٹیبلس کے نویں بیاچ کی پاسنگ آؤٹ پریڈ کے موقع پر خطاب کررہے تھے ۔ وزیر موصوف نے کہا کہ 14کالجوں سے ہر سال 3500ٹرینیز کامیاب ہورہے ہیں ان میں کے ایس آر پی کا عملہ بھی شامل ہے۔ مذکوہ بالا فنڈس کیاجرائی سے ان ٹریننگ کالجوں سے کامیاب ہوکر نکلنے والے امیدواروں کی تعداد 5000تک پہنچ سکتی ہے۔ انھوں نے کہا کہ ریاستی حکومت 11,000پولیس کوارٹرس کی تعمیر پر 2223کروڑ روپئے خرچ کررہی ہے۔ ان میں سے 2000کوارٹرس تقسیم کئے جاچکے ہیں۔ 4500کوارٹرس افتتاح کے لیے تیار ہیں ۔ 2019تک تمام 11,000کوارٹرس پولیس عملہ کے حوالہ کردئے جائیں گے۔ مسٹر ریڈی نے کہا کہ جب سے ریاست میں کانگریس دوبارہ اقتدار پر آئی ہے 30.000کانسٹیبلوں اور 4,000پولیس سب انسپیکٹرس کے تقررات کیے گئے ہیں ۔ اس کے باوجود ابھی بہت سے جائیدادیں مخلوعہ ہیں۔ ہوم گارڈس کی بھی خدمات لی جارہی ہیں۔پولیس پریڈکی قیادت پریڈ کمانڈر بھاگنا والی کارRSI اور ڈپٹی پریڈ کمانڈر شانتا تیردال اسپیشل RSIکررہے تھے۔اس موقع پر تربیت پانے والے پولیس عملہ میں ان کی مختلف سرگرمیوں ، کھیلوں اور پروگراموں میں نمایاں کامیابی کے لیے انعامات کی تقسیم بھی عمل میں لائی گئی ۔

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورومیٹرو برڈج میں خرابی کا نائب وزیراعلیٰ پرمیشور نے معائنہ کیا

شہر کے ایم جی روڈ پر ٹرینٹی سرکل کے قریب ایم جی روڈ بیپنا ہلی میٹرو روٹ کے پلر نمبر 155کے قریب ایک بیم میں دراڑ کا آج نائب وزیراعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور نے معائنہ کیا اور کہاکہ اس سلسلے میں مرمت کا کام جاری ہے۔

زہریلے کھانے کا معاملہ، اعلیٰ سطحی جانچ کرانے سدارمیاکا مطالبہ

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ اور مخلوط حکومت کے کورابطہ کمیٹی کے صدر سدارمیا نے سُلوادی گاؤں کے مرمَّا مندر میں زہریلا کھانہ کھانے سے 11 عقیدتمندوں کی موت اور 80 افراد کے بیمار ہونے کے معاملے کی اعلیٰ سطحی جانچ کا مطالبہ کیا ہے ۔