ضلع شمالی کینرا میں انتخابات سے قبل ہوگا پولیس افسران اور اہلکاروں کا تبادلہ۔ سپرنٹنڈنٹ آف پولیس کا اشارہ

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 12th February 2019, 5:53 PM | ساحلی خبریں |

کاروار12؍فروری (ایس او نیوز) ضلع شمالی کینرا کے ایس پی ونائیک پاٹل نے اشارہ دیا ہے کہ ضلع بھر میں جہاں بھی تین سال یا اس سے زائد عرصے سے ایک ہی مقام پر کوئی پولیس آفیسر یا اہلکار تعینات پایا جائے گااس کا تبادلہ پارلیمانی انتخاب سے قبل دوسرے مقام پر کر دیا جائے گا۔ایس پی نے کہا انہوں نے ایسے تمام افسران اور اہلکاروں کی فہرست تیار کرنے کے احکام جاری کردئے ہیں۔

محکمہ پولیس کے لاء اینڈآرڈر، انٹلی جنس، اینٹی کرپشن بیورو، کوسٹ گارڈدستہ،کرائم انویسٹی گیشن ڈپارٹمنٹ جیسے مختلف شعبہ جات ہوتے ہیں۔اور کچھ افسران یا اہلکار بعض شعبہ جات میں پچھلے کئی برسوں سے ایک ہی مقام پر ٹھکانہ بناکر بیٹھ گئے ہیں۔یہ پولیس کے اعلیٰ افسران کے لئے درد سر بنا ہوا مسئلہ ہے۔ کچھ پولیس اہلکاروں پر غیرقانونی سرگرمیوں میں بھی مجرموں کے ساتھ سانٹھ گانٹھ رکھنے کی شکایات بھی الزام سننے میں آتی ہیں۔کچھ اہلکاروں پر بعض لوگوں کے ایجنٹ کے طور پر کام کرنے کا الزام بھی لگ رہا ہے۔ابھی حال ہی میں جوئیڈا میں ایک پولیس اہلکار نے پولیس کوارٹرز میں ہی غیر قانونی طور پر قیمتی جنگلی لکڑیاں چھپائے رکھنے کا معاملہ سامنے آیا ہے۔

حالانکہ دوسرے اضلاع کے مقابلے میں دیکھا جائے تو ضلع شمالی کینرا میں بڑی حد ت پولیس افسران اور اہلکاروں پرضلع پولیس سپرنٹنڈنٹ کا سخت کنٹرول ہے۔اس کے باوجود کچھ بدعنوان اور غیر ذمہ دار قسم کے اہلکار یہاں بھی پائے جاتے ہیں، جنہوں نے اپنے محکمے کو جائز اور ناجائز ہر طریقے سے پیسے اکٹھا کرنے کا ذریعہ بنالیا ہے۔خاص کرکے گوا سے غیر قانونی شراب کی اسمگلنگ کے تعلق سے کہاجاسکتا ہے کہ اس کے پیچھے بڑی حد تک کوسٹل سیکیوریٹی پولیس کی مہربانی پائی جاتی ہے۔اسی طرح ضلع بھر میں چل رہے مٹکا اور جوئے بازی کا معاملہ بھی پولیس کی جانب سے جان بوجھ کر نظر انداز کیے جانے سے یہاں پھل پھول رہا ہے۔اس کے علاوہ رشوت خوری کے معاملے میں عوام کی طرف سے شکایتیں درج کرلینے کے بعد بھی کوئی نتیجہ نہیں نکلتا اور اس تعلق سے کیا کارروائی ہوئی اس کے بارے میں کسی کو کچھ بتایانہیں جاتا۔

اب پتہ چلا ہے کہ محکمہ پولیس کے سسٹم کو مزید بہتر اور صاف ستھرا بنانے کی سمت میں ضلع ایس پی نے پہل کرنے کا ارادہ کرلیا ہے۔مگر یہ کارروائی ضلع ایس پی کے لئے اتنی آسا ن بھی نہیں ہے کیونکہ ان سے نچلی سطح کے افسران کی طرف سے انہیں پوری طرح تعاون ملنا کچھ مشکل سی بات لگتی ہے۔لیکن چونکہ انتخابات کے دن قریب آ رہے ہیں اور پرانے افسران اور اہلکاروں کو یوں بھی ٹرانسفر کرنا ضروری ہوتا ہے ، اس لئے ایس پی ونائیک پاٹل کو قدرتی طور پر ایک موقع ہاتھ آگیا ہے جس کی بنیاد پرانہیں ایک ہی مقام پر تین سال یا اس سے زیادہ عرصہ سے قبضہ جماکر بیٹھے ہوئے پولیس افسران اور اہلکاروں کو دوسرے مقامات پر تبادلہ کرکے بھیجنے میں کامیابی حاصل ہوگی۔

ایک نظر اس پر بھی

لوک سبھا انتخابات؛ اُترکنڑا میں کیا آنند، آننت کو پچھاڑ پائیں گے ؟ نامدھاری، اقلیت، مراٹھا اور پچھڑی ذات کے ووٹ نہایت فیصلہ کن

اُترکنڑا میں لوک سبھا انتخابات  کے دن جیسے جیسے قریب آتے جارہے ہیں   نامدھاری، مراٹھا، پچھڑی ذات  اور اقلیت ایک دوسرے کے قریب تر آنے کے آثار نظر آرہے ہیں،  اگر ایسا ہوا تو  اس بار کے انتخابات  نہایت فیصلہ کن ثابت ہوسکتےہیں بشرطیکہ اقلیتی ووٹرس  پورے جوش و خروش کے ساتھ  ...

بھٹکل میں بی کے ہری پرساد کا بی جے پی اور مودی پر راست حملہ، کہا؛ پسماندہ طبقات کومزید کمزور کرنے کی سازش رچی جارہی ہے

بی جے پی بھلے ہی اپنے آپ کو اقلیت مخالف پارٹی کے طور پر پیش کرتی ہو، مگر  دیکھا جائے تو یہ پارٹی حقیقتاً پسماندہ طبقات، دلت اور ادیواسیوں کو  مزید  کمزور کرنے کی سازش میں لگی ہوئی ہے اور صرف ایک طبقہ کو برسراقتدار پر لانے میں کوشاں ہے۔ یہ بات  آل انڈیا کانگریس کمیٹی (اے آئی ...

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو آننت کمار ہیگڈے کو ہرگز ووٹ نہ دیں؛ بھٹکل میں ماہی گیروں سے پرمود مدھوراج کی اپیل

اگر آپ عزت دار ماہی گیر ہیں تو  آپ کو چاہئے کہ  ماہی گیروں کی پرواہ نہ کرنے والے بی جے پی اُمیدوار آننت کمار ہیگڈے  کو ہرگز ووٹ  نہ دیں۔ ملپے سے نکلی سات ماہی گیروں پر مشتمل بوٹ لاپتہ ہوکر  پانچ ماہ ہوچکے ہیں مگر مرکزی وزیر آننت کمار ہیگڈے کو ماہی گیروں کی پرواہ ہی نہیں ہے۔ ...

منگلورو میں ایک عجیب سانحہ۔بوتھ کے آخری ووٹر نے ووٹ دینے کے بعد لی آخری سانس

پاجیرو گاؤں کے پانیلا میں ایک شخص نے پولنگ بوتھ میں اپنا ووٹ ڈالنے کے بعد گھر لوٹتے ہی دم توڑ دیا۔پانیلا کے رہنے والے والٹر ڈیسوزا(۴۰سال) گردے کی بیماری میں مبتلا تھاجس کے لئے وہ بہت عرصے سے زیرعلاج تھا۔