گاؤ رکھشا کے نام پر قانون شکنی کرنیوالوں کیخلاف سخت کارروائی کا انتباہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 17th July 2017, 11:38 AM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،16؍جولائی(ایس او نیوز ؍ ایجنسی) وزیراعظم نریندر مودی نے گاؤ رکھشا کے نام پر قانون شکنی کرنے والوں کو آج سخت انتباہ دیا اور ریاستوں کو ہدایت کی کہ ان افراد کے خلاف سخت کارروائی کی جائے ۔ تاہم اس کے ساتھ انہوں نے اس مسئلہ کو سیاسی یا فرقہ وارانہ رنگ دینے کے خلاف خبردار بھی کیا ۔ وزیر پارلیمانی امور اننت کمار نے اخباری نمائندوں سے کہا کہ پارلیمنٹ کے مانسون سیشن کے آغاز سے ایک دن قبل کل جماعتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم مودی نے کہا کہ ’’ تمام (ریاستی) حکومتوں کو چاہئیے کہ گاؤ رکھشا کے نام پر قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کے ساتھ سختی سے نمٹیں ‘‘ ۔ گائے کو ماں جیسا تصور کرنے کے بارے میں اننت کمار نے اجلاس کے بعد کہا کہ وزیراعظم سے کئی ہندوؤں کے اس اعتقاد کا حوالہ دیا لیکن کہا اس کا مطلب ہرگز یہ نہیں کہ افراد کو قانون اپنے ہاتھ میں لانے کیلئے چھوڑدیا جائے ۔ تمام ریاستی حکومتوں کو چاہئیے کہ قانون شکنی کے خلاف سخت کارروائی کریں ۔ اپوزیشن جماعتوں نے گاؤ رکھشا کے نام پر غنڈہ گردی کے واقعات پر جن میں اکثر مسلمانوں اور دلتوں کو نشانہ بنایا جارہا ہے بی جے پی کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ۔

ان پارٹیوں نے کل سے شروع ہونے والے پارلیمانی سیشن کے دوران اس مسئلہ کو اٹھانے کا منصوبہ بنایا ہے ۔ مودی نے کل ہونے والے صدارتی انتخابات کا تذکرہ بھی کیا اور کہا کہ امیدوار پر اتفاق رائے ہوتا تو بہتر تھا ۔ تاہم انہوں نے کہا کہ دونوں طرف سے احترام و شائستگی کی اعلیٰ سطح کو برقرار رکھا گیا ۔ مہم کے دوران حکمراں یا اپوزیشن میں سے کسی نے بھی بدکلامی یا بیجا بیان بازی نہیں کی ۔ انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتوں کو تمام ووٹوں کا استعمال یقینی بنانا چاہئیے اور کوئی بھی ووٹ ضائع ہونے نہ دیا جائے ۔رام ناتھ کووند کو بی جے پی کے زیرقیادت این ڈی اے نے اپنی امیدوار بنایا ہے اور میرا کمار کانگریس کے زیرقیادت 18 اپوزیشن جماعتوں کی امیدوار ہیں ۔ اس مقابلہ میں دونوں کی عددی قوت کے اعتبار سے کووند کو میرا کمار پر بھاری سبقت حاصل ہے ۔ مودی نے رشوت کے تازہ الزامات کا سامنا کرنے والے آر جے ڈی سربراہ لالو پرساد یادو پر بالواسطہ تنقید کرتے ہوئے رشوت ستانی کیخلاف لڑائی میں تمام جماعتوں سے تعاون طلب اور کہا کہ رشوت ستانی میں ملوث افراد کو بخشا نہیں جائے گا ۔

مودی نے گڈس اینڈ سرویس ٹیکس ( جی ایس ٹی) پر عمل آوری کیلئے سب کا شکریہ ادا کیا ۔ اننت کمار نے کہا کہ کشمیر کی صورتحال اور چین کے ساتھ کشیدگی پر بھی حکومت نے اپوزیشن قائدین سے بات چیت کی اور تمام جماعتوں نے کہا کہ قومی سلامتی کے مسئلہ پر وہ حکومت کے ساتھ ہیں ۔ اجلاس میں شرکت کرنے والے اپوزیشن قائدین میں غلام نبی آزاد (کانگریس)،  شردپوار (این سی پی )، سیتارام یچوری (سی پی آئی ایم) ، ملائم سنگھ یادو ( ایس پی) اور ڈی راجہ (سی پی آئی) شامل تھے ۔ تاہم جے ڈی (یو) اور ترنمول کانگریس نے شرکت نہیں کی ۔ ٹی ایم سی نے مغربی بنگال میں حالیہ فرقہ وارانہ تشدد کے مسئلہ پر بی جے پی سے اختلاف و کشیدگی کے سبب پہلے ہی اجلاس کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کیا تھا ۔

ایک نظر اس پر بھی

الحاج قمرالاسلام کی وفات پرمولانااسرارالحق قاسمی کااظہارتعزیت

عالم دین وممبرپالیمنٹ مولانااسرارالحق قاسمی نے کرناٹک کے معروف سیاسی رہنمااورگلبرگہ سے ممبراسمبلی الحاج قمرالاسلام کے انتقال پر اپنے دلی رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے اپنے تعزیتی بیان میں کہاکہ مرحوم ایک سرگرم سیاسی رہنماہونے کے ساتھ مسلمانوں کے ملی مسائل سے بھی دلچسپی رکھتے ...

تسلیم الدین کی سیاسی ضد کوجنتادل راشٹر وادی سلام کرتی ہے؛اپنی شرطوں پر ہی سیاست کر مسلم قیادت کو ابھارا جا سکتا ہے:اشفاق رحمن

جنتادل راشٹر وادی نے ایم پی محمد تسلیم الدین کے انتقال پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے۔ پارٹی کے کنوینر اور جواں سال مسلم رہنماء اشفاق رحمن نے کہا ہے کہ تسلیم الدین جیسی شخصیت ہندوستانی سیاست میں صدیوں میں پیدا ہوتی ہے،

بٹلہ ہاؤس فرضی انکاؤنٹر کی منصفانہ جانچ کی مانگ کو لے کر سماجی تنظیموں کا کینڈل مارچ

بٹلہ ہاؤس فرضی انکاؤنٹر کی مخالفت میں اور اس منصفانہ جانچ اور کارروائی کی مانگ کو لے کر کئی سماجی تنظیموں نے مل کرراشٹریہ ساماجک کاریہ کرتا سنگٹھن کے صدر محمدآفاق کی قیادت میں حضرت گنج ناویلٹی سنیما چوراہے سے جی پی او واقع گاندھی مجسمہ تک کینڈل مارچ نکالا ۔

بہار سیلاب متاثرین کی بازآباد کاری کے لئے دل کھول کر تعاون کریں :قاری عبد الرشید حمیدی

جمعیۃ علماء ہند کے صدر مولانا سید ارشد مدنی دامت برکاتہم کی دعوت پر لبیک کہتے ہوئے صوبہ مہاراشٹر میں جمعیہ علماء کی تمام اکائیوں نے منظم انداز میں بہار سیلاب متاثرین کے لئے راحت رسانی اور ریلیف کاکام سرگرمی کے ساتھ جاری رکھا ہے ۔