شجرکاری اور طلبا کو اس کے فوائد بیان کراتے ہوئے بھٹکل انجمن پی یو کا لج فار ویمن میں منایا گیا عا لمی یومِ ما حولیات

Source: S.O. News Service | By I.G. Bhatkali | Published on 10th June 2018, 10:50 AM | ساحلی خبریں |

بھٹکل 10/جون (ایس او نیوز) طلبا میں شجرکاری کی معلومات فراہم کرتے ہوئے اور پھر کالج کے احاطے میں شجرکاری کراتے ہوئے یہاں بھٹکل انجمن پی یو کالج فور ویمن میں عا لمی یومِ ما حو لیا ت نہا یت جوش و خروش سے منا یا گیا۔

ہرسال  ۵ جون کو دنیا بھر میں یوم  ماحولیات  منایا جاتا ہے، جس کے موقع پر عوام الناس میں ماحول کو بہتر اور صحت مند بنانے کے تعلق سے بیداری مہم چلائی جاتی ہے۔ اسی مناسبت سے بھٹکل انجمن پی یوکالج میں بھی  بروز منگل خدیجہ سید علی کیمپس کے احا طے میں اس ضمن میں پرنسپل ڈا کٹر فرزانہ محتشم کی زیرِ نگرانی ایک جلسہ منعقد کیا گیا۔ جلسہ کا با قا عدہ آغا زمسا دہ بنتِ محمد اسمٰعیل کی قرات سے ہوا۔ جس کا ترجمہ فار حہ بنتِ محمد اکرم نے پیش کیا۔ نعت خوانی کا شرف سا لِ اول سا ئنس کی طا لبہ تنزیل بنت محمد امین معلم کو حاصل ہوا۔ کیمسٹری لکچرر محترمہ صدیقہ عبدو نے نظا مت کی ذمہ داری سنبھا لتے ہوئے   ما حو لیا ت کے تحفظ پر روشنی ڈا لی ۔ محترمہ نے بتا یا کہ عہدِ حا ضر میں ما حو لیاتی آلودگی کا مظا ہرہ بڑھتا جا رہا ہے۔ جس کی وجہ سے ممکن ہے کہ آج ہم جس قدرت کے نظا روں کا لطف اٹھا رہے ہیں، ہماری آنے والی نسل اس سے محروم رہ جا ئیں۔ مہما نِ خصو صی با ئیلوجی لکچررمحترمہ شریا پجاری کو سخن گوئی کی دعوت دی گئی۔ محترمہ شریا نے اپنے وسیع مطا لعے اور تجربے کی بنیا دپر ما حولیات پرہونے والے منفی پہلوؤں کو  اجا گر کیا۔اور پھر اس کے منفی اثرات سے بچنے کی تدا بیر سے بھی آگا ہ کیا۔ اس کے بعد محترمہ صدیقہ صا حبہ کے شکریہ  کلمات کے سا تھ جلسہ کا اختتام ہوا۔

بعد ازاں پی یو سی فار ویمن کے صحن میں ’’ گو گرین ‘‘ کی عملی تفسیر بنتے ہوئے،معزز پرنسپل ڈا کٹر فرزانہ محتشم اور وائس پرنسپل محترمہ طالعہ معلم نے درخت لگا نے کی مہم میں بذاتِ خودشرکت کی۔ سالِ اول سا ئنس کی طالبات نے بھی نہایت جوش و خروش کامظا ہرہ کرتے ہوئے شجر کاری کی تاکہ یہ کا لج سدابہاراور پھولا پھلا رہے۔ اس موقع پر  کالج کو سدا بہار رکھنے کے لیے کئی پو دے لگا ئے گئے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل کے بیلنی علاقے میں قربانی روکنے کا مطالبہ ۔پولس کو سونپا گیا میمورنڈم

بیلنی علاقے کے کچھ ہندوؤں نے بھٹکل ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ آف پولیس کو ایک میمورنڈم دیتے ہوئے مطالبہ کیاہے ہندوؤں کے مندروں اور مقدس مقامات سے گھرے ہوئے اس علاقے میں جانوروں کی قربانی کرنے پر روک لگائی جائے۔

منگلورو: بھاری برسات کا سلسلہ جاری۔ کئی مقامات پر چٹانیں کھسکنے کے واقعات۔ ڈی سی نے عوام کودی تعلقہ لیول کنٹرول روم سے رابطہ رکھنے کی ہدایت

ساحلی علاقوں میں تیز اورموسلا دھار برسات کا سلسلہ ابھی جاری ہے۔ خاص کر منگلورو اور اڈپی کے بعض علاقوں میں لگاتار بارش برسنے کی خبریں موصول ہورہی ہیں۔

بھٹکل   تعلقہ میں مسلسل بارش سے ندی کنارے پر خطرہ :163ملی میٹر بارش

بھٹکل تعلقہ میں پچھلے دو تین دنوں سے مسلسل برستی بارش سے ندی نالے  پوری تاب سے بہنے کے نتیجےمیں عام زندگی مفلوج ہوگئی ہےاور نشیبی علاقوں میں پانی بھر جانے سے عوام پریشانی میں مبتلا ہونےکی اطلاعات موصول ہوئی ہیں۔

بھاری بارش کے بعد لنگن مکّی ڈیم سے کیا گیا پانی کا اخراج؛ ہوناور کے شراوتی بیلٹ پرکئی دیہاتوں میں داخل ہوا پانی؛ عوام نہایت چوکس

  گذشتہ تین چار دنوں سے جاری بھاری بارش کے بعدپڑوسی تعلقہ ہوناور کے شراوتی بیلٹ سے بہنے والی شراوتی ندی میں طغیانی آگئی ہے اور ندی خطرے کے نشان سے اوپر  بہہ رہی ہے، ایسے میں اُدھر لنگن مکّی ڈیم سے 21,223کیوسک پانی کو بھی باہر چھوڑا جارہا ہے، اگر بارش پھر اپنی رفتار سے شروع ہوتی ...

منگلورو : مسلسل بارش سے کافی جانی ومالی نقصان : حالات سے نمٹنے ضلع انتظامیہ تیار : ڈپٹی کمشنر سینتھل کی پریس کانفرنس

کیرلا سمیت کرناٹکا کے ساحلی علاقوں  میں طوفانی ہواؤں اور موسلا دھار بارش جاری رہنے سے دکشن کنڑا اور اُڈپی اضلاع زیادہ متاثر ہوئے ہیں۔ لگاتار بارش برسنے سے منگلورو اور بنگلورو قومی شاہراہ  پر پہاڑ کھسک گیا ہے ، جس کی  وجہ سے سواریوں کی  نقل وحمل روک دئیے جانے کے علاوہ بعض ...

کاروار میں مسلسل بارش کے نتیجےمیں ماہی گیری ٹھپ : ماہی گیر بری طرح متاثر

ہرسال اگست کے مہینےمیں ماہی گیر سمندر میں مچھلی شکار کے لئے نکلتےہیں، لیکن امسال اگست کے دوسرے ہفتےسے جاری طوفانی ہواؤں کے ساتھ موسلا دھار بارش  نےجہاں رہائشی علاقوں ، زراعت وغیرہ کو متاثر کیا ہے وہیں ماہی گیر پر بھی اس کے کافی اثرات نظر آرہے ہیں۔ دوتین کی بارش کو دیکھتے ہوئے ...