وجئے پور چلو‘‘ تحریک ناکام۔ وجئے پور اور ببلیشور میں صورتحال کشیدہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2018, 12:51 PM | ریاستی خبریں |

وجئے پور ،9؍جنوری (ایس او نیوز؍رفیع بھنڈاری) شہر وجئے پور اور ضلع نگراں کار وزیر ایم بی پاٹل کے اسمبلی حلقہ ببلیشور میں دو الگ الگ معاملات کو لے کر کشیدگی کے باعث پولیس اور ضلع انتظامیہ کو پوری طرح مستعد رہتے ہوئے امن وامان کی بحالی کے لئے جدوجہد کرنی پڑی۔پچھلے ماہ یہاں دانما کی عصمت دری اور قتل معاملہ کو لے کردلت اور مختلف ترقی پسند تنظیموں کی جانب سے ’’وجئے پور چلو‘‘ احتجاج کی آواز دی گئی تو ضلع انتظامیہ اور پولیس نے یہاں کے حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے اور معاملہ قدیم ہو کر تحقیق سی آئی ڈیکے حوالے کئے جانے کی وجہ سے وجئے پور چلو کے لئے اجازت نہیں دی۔ احتیاطی طور پر تحریک اصل رہنماؤں میں بھاسکر راؤ کو گرفتارکیاگیا اور دیگر کئی کارکنوں کو حراست میں لے کر شہر میں امتناعی احکامات نافذ کردئے گئے اور شہر بھر میں بالخصوص ڈاکٹر بی آر امبیڈکر سرکل میں پولیس کے زبردست انتظامات کئے گئے تاہم امتناعی احکامات کے باوجود ایک گروپ نے امبیڈکر سرکل پہنچنے کامنصوبہ بنایا۔ مقامی پولیس نے شہر کے مختلف لاڈجوں میں ایک دن پہلے ریاست کے مختلف مقامات سے آئے رضاکاروں کو کمرے نہ دینے کے احکامات جاری کئے اور تحریک کو ناکام کیا۔ دریں اثناء خواتین کے ایک گروہ نے علامتی طور پرگاندھی چوک میں خاموشی کے ساتھ سیاہ پٹیاں باندھ کر دانما قتل اور عصمت دری کی مذمت کی۔ اس موقع پر سری دھر نے ضلع انتظامیہ اور پولیس پر الزام عائد کیاکہ وجئے پور چلو تحریک پرامن طور پر چلانے کا بھروسہ دلانے کے باوجود اجازت نہیں دی گئی برعکس اس کے رضاکاروں کو شہر میں داخل ہونے نہیں دیاگیا۔ بتایاجاتا ہے کہ وجئے پور چلو تحریک میں مقامی دلت اور ترقی پسند تنظیموں کو دور رکھے جانے کے سبب یہاں رات دو گروہوں کے درمیان ہاتھا پائی بھی ہوئی جس کا احساس کرتے ہوئے پولیس کومجبوراً امتناعی احکامات نافذ کرنا پڑا۔شہر بھر میں افواہوں کے پیش نظر تمام تعلیمی اداروں اور تجارتی اداروں کو بند کرنے کااعلان کیاگیا مگر پولیس کے بندوبست کے درمیان بند نہیں منایاگیا اور تمام ادارے کھلے رہے تاہم کشیدگی کاماحول دیکھنے کو ملا۔ اسی طرح ببلیشور میں دو الگ الگ پروگرام طے تھے جس میں ایک ہانگل کمارسوامی کی 150ویں جینتی، بسوا جینتی اور پنچ آچاچریہ اتواکاانعقاد کیاگیا ۔ یہ پروگرام ایم بی پاٹل کی جانب سے لنگایت دھرم کی ایک اہم کڑی کے طور پر کیاگیا۔اس کے جواب میں وزیر موصوف کے سیاسی حریف اوربی جے پی والوں نے بھی ایک مذہبی جلسہ کا انعقاد کیا جس سے پولیس والوں کوکافی محنت کرنی پڑی۔مگر ریزرو پولیس کی موجودگی اور سخت بندوبست سے دونوں اجلاس پرامن گزرے تاہم ببلیشور میں ماحول کشیدہ رہا۔

ایک نظر اس پر بھی

انتخابات کے پیش نظر پارٹی لیڈروں کے باہمی تبادلہ خیالات کاسلسلہ سی ایم ابراہیم کی جے ڈی ایس سربراہ دیوے گوڈا سے ملاقات

ریاستی اسمبلی انتخابات جیسے جیسے قریب آنے لگے ہیں ، سیاسی قائدین سے ملاقاتیں اور ان سے تبادلہ خیالات کا سلسلہ شروع ہوجاتا ہے جوکافی اہم اور دلچسپ ہوا کرتا ہے ۔

کانگریس نے لوک سبھا میں بھی طلاق ثلاثہ بل کی مخالفت کی تھی کرناٹک وقف بورڈ کے انتخابات میں تاخیر افسوسناک :ڈاکٹر کے رحمٰن خان

لوک سبھا میں طلاق ثلاثہ بل کے خلاف کانگریس نے کوئی آواز نہیں اٹھائی یہ ایک غلط خبر ہے اور بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی پیداوار ہے جس کو اسی کی ایماء پر میڈیا نے پھیلایاہے۔

اگلا وزیراعلیٰ بنانے ہائی کمان کے اعلان سے سدارامیاکا حوصلہ بلند راہل گاندھی کے بیان سے وزیراعلیٰ کی کرسی پر نظر رکھے لیڈروں کو مایوسی۔ بغاوت کے آثار

ریاست کرناٹک میں ہونے و الے اگلے اسمبلی انتخابات میں کانگریس پارٹی اگر اکثریت حاصل کرکے دوبارہ اقتدار حاصل کرلے گی تو سدارامیا ہی اگلے وزیراعلیٰ ہوں گے ۔

مودی ، یوگی اور ونود سب نے کرناٹک کی توہین کی ،گالی گلوچ بی جے پی کا مزاج ؛گوا کے وزیر آبپاشی ونود پالیکر نے کیا کنڑیگا س کو ذلیل

منہ پھٹ بی جے پی لیڈرز ہر دن کوئی نہ کوئی متنازعہ اور اشتعال انگیز بیان دیتے ہوئے عوامی غیض وغضب کا شکار ہورہے ہیں، بیلگاوی ضلع کے خانہ پور تعلقہ میں چل رہے کلسا نالا تعمیراتی کاموں کا معائنہ کرنے کے بعد گوا کے وزیر برائے آبپاشی ونود پالیکر نے کرناٹک کے باشندوں کو حرامی کہہ ...

اُترکنڑا کے سُودّی ٹی وی نیوز چینل کے رپورٹرکی بائک درخت سے ٹکراگئی؛ رپورٹر کی موقع پر موت

سرسی سے ہانگل جانے کے دوران ایک کنڑا نیوز چینل کے رپورٹر کی بائک تیز رفتاری کے ساتھ  ایک درخت سے ٹکرانے کے نتیجے میں موقع پر ہی اُس کی موت واقع ہوگئی۔ یہ حادثہ اتوار کو ضلع ہاویری کے ہانگل کے قریب گُنڈورو نامی دیہات میں علی الصباح پیش آیا۔

دستور کو تبدیل کرنے والی بات کہنے والے آننت کمار ہیگڈے کے حلقہ میں ہی پہنچ کر گرجے فلم ایکٹر پرکاش رائے؛ کہا ہماری خاموشی ہمیں مار ڈالے گی

’بھائی چارگی کے ساتھ جینا‘ اور ’ہمارا دستور ہمارا فخر ‘کے موضوع پر سرسی کے راگھویندرا مٹھ میں منعقدہ ریاستی اجلاس کا افتتاح کرتے ہوئے معروف دانشور اداکار پرکاش رائے نے کہا کہ اس وقت دیش کو ایک بہت بڑی بیماری لگ گئی ہے۔