بھٹکل ماری ہبا کی مناسبت سے پیس میٹنگ کا انعقاد : آپسی تعاون اور میل جول پر ہرایک کا زور

Source: S.O. News Service | By Abu Aisha | Published on 3rd August 2018, 12:21 PM | ساحلی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بھٹکل:2/اگست (ایس اؤ نیوز)اگست 7اور8کو منائےجانے والے ماری جاترا تہوار کی مناسبت سے سرکٹ ہاؤس میں  بھٹکل اسسٹنٹ کمشنر ساجد ملا نے پیس میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے کہاکہ ہرتہوار کے پیچھے کوئی نہ کوئی تاریخ ہوتی ہے، ایسے موقعوں پر تہواروں کو امن وامان سے منانے کے لئے ضروری اقدامات کرنا  سرکارسے زیادہ سماج کی ذمہ داری ہے۔  سرکار آپ تمام کے ساتھ مل کر تہواروں کو مناتی ہے تو سب کو خوشی حاصل ہوتی ہے۔ اسسٹنٹ کمشنر نے  کہاکہ عوامی اعتقاد اور اعتماد کی بنیاد پر ماری جاترا منایاجاتاہے، جس کے پیش نظر ہر طرح کے پیشگی اقدامات اٹھائے جارہے ہیں جس کے لئے تمام کا تعاون درکار ہے۔ ڈی وائی ایس پی ولینٹائن ڈیسوزا نے جاترے کے متعلق کہاکہ دودن چلنے والے جاترے کے لئے پولس بندوبست کیا جائےگا۔ ٹرافک ، بجلی سپلائی ، باکڑا دکانوں اور صاف صفائی کے لئے انتظامات کئے جائیں گے۔

مجلس اصلاح وتنظیم کے نائب صدر اور جے ڈی ایس لیڈر عنایت اللہ شاہ بندری نے ہندو مسلم آپسی تعاون اور مل جل کر کئے جانے والے کاموں کا ذکر کرتےہوئے ماری جاترا کے متعلق سرکاری افسران کو صلاح دی کہ جاترے کی وداعی تقریب کے بعد سمندر سےلوٹنے والوں کو عام طور پر سواریوں کا انتظام رہتا ہے مگر ہم دیکھتے ہیں کہ اس کے باوجود کئی لوگ پیدل آتے رہتے ہیں بہتر ہے کہ زائد سواریوں کاانتظام کریں، اور سمندر کنارے روشنی کا انتظام ہوتو کافی سہولت ہوگی۔ 

موقع کو دیکھتے ہوئے کہ سرکاری آفسران ایک ہی جگہ موجود ہیں، عنایت اللہ شاہ بندری نے ہیبلے پنچایت حدود کے حنیف آباد کے قریب کڑی مشین روڈپر کچرے  کا ڈھیر جمع ہونے کا معاملہ زوردار طریقہ سے اُٹھایا اور اہلکاروں سے پوچھا  کہ وہ عوامی چہل پہل کی سڑک ہے یا میونسپالٹی کی طرف سے کچروں کی ذخیرہ اندوزی کا مرکز ہے ؟ انہوں نے کہا کہ  کچروں  کا ڈھیر اتنا جمع  ہواہے کہ سڑک کہیں پر بھی نظر نہیں آتی اور صرف کچرا ہی کچرا دکھائی دیتاہے، جہاں اب بڑے بڑے کیڑے پڑے ہوئے ہیں۔ انہوں نے متعلقہ حکام کو اس تعلق سے مناسب انتظامات کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ  اگر حکام نےفوری متعلقہ علاقہ کی صاف صفائی کی طرف توجہ نہیں دی  تو پھر عوام کو ہی سڑکوں پر اُتر کرصاف صفائی کرنا پڑے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہیبلے علاقہ میں نہ کچرا لے جانے رکشہ کا انتظام ہے اور نہ ہی کچروں کو پھینکنے کے لئے ڈسٹبین رکھے گئے ہیں، یہاں تک کہ پہلے جہاں جہاں ڈسٹبین تھے، اُسے بھی ہٹادیا گیا ہے ایسے میں عوام کچروں کو کہاں پھینکے یہ بہت بڑا سوال بن گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ میونسپالٹی کی جانب سے گھر گھر رکشہ آکر کچروں کو لے جاتا ہے، مگر ہیبلے کے عوام کچروں کو لے کر کیا کریں ، اس طرف اہلکار توجہ نہیں دے رہے ہیں۔

تنظیم کے جنرل سکریٹری محی الدین الطاف کھروری نے کہا کہ ہر تہوار کے موقع پر مسلمانوں کا تعاون رہتا ہی ہے، آئندہ بھی مسلمانوں کی جانب سے ہر طرح کا تعائون دیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ بھٹکل میں ہندئوں اور مسلمانوں کے درمیان کبھی کوئی  اختلاف نہیں رہا ہے،انہوں نے توقع ظاہر کی کہ آئندہ بھی یہاں امن و امان کی صورتحال بحال رہے گی۔

نامدھاری سماج  سنگھا کے اعزازی صدر ڈی بی نائک نے اپنے خیالات کااظہار کرتےہوئے کہاکہ  بھٹکل میں ہمیشہ ہندووں کے تہوار کے موقع پر مسلمانوں نے اور مسلمانوں کی عیدین کےموقع پر ہندو وں نے آپسی تعاون  دیتے رہے ہیں، میل جول اور بھائی چارگی سے ہی ہم تمام اپنے تہوار مناتے ہیں۔  ہندو، مسلم،عیسائی سب مل جل کر متحد ہوکر ایک دوسرے کے تہواروں میں ساتھ دیتے ہیں، آئندہ بھی یہی اتحاد قائم رہے گا۔ انہوں نے سبھی طبقات کے عوام سے کہاکہ  اپنے ذہنوں  سے نفرت  کو دورکریں اوراس خیال کے ساتھ آگے بڑھیں کہ ہم  سب ایک ہیں۔ آگے کہا کہ  حفاظتی انتظامات کے طورپر پولس اپنا کام کرتی  ہے مگر ہم اپنی ذمہ داریوں سے لاپرواہی نہ برتیں۔ ہم خود بھی اپنی ذمہ دار یوں  کو سمجھتے ہوئے کام کریں۔ اس موقع پر  کونکنی کھاروی سماج کے صدر نارائن ڈی کھاروی ، شری دھر نائک آسارکیری ، کرشنا نائک آسار کیری ،  وینکٹیش نائک آسارکیری  نے جاترے کے لئے ضروری سڑک درستی ، صفائی ، ٹرافک انتظامات وغیرہ پر اپنے خیالات کااظہار کیا۔ ڈائس پر بلدیہ صدر محمد صادق مٹا، جالی پٹن پنچایت صدر سید آدم علی پنمبور، تحصیلدار وی این باڈکر، پرمیشور نائک، سی پی آئی گنیش وغیرہ موجود تھے۔ بھٹکل دیہی پولس تھانہ کانسٹبل رمیش کوڈال نے نظامت کے فرائض انجام دئیے۔

ایک نظر اس پر بھی

بھٹکل میونسپل پارک کی تجدیدکاری میں بدعنوانی کا الزام۔ ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم

بھٹکل بلدیہ کے حدود میں بندر روڈ پر واقع سردار ولبھ بھائی پٹیل پارک کی تجدید کاری میں بدعنوانی کا الزام لگاتے ہوئے  آسارکیری کے عوام  نے بلدیہ انجینئر کو پارک میں طلب کرکے ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم دیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ یہاں ہورہی بدعنوانی کی تحقیقات کروائی جائے۔

کاروار کے ہوم گارڈس دفتر اورکیگا شہری تحفظ مرکز میں یوم ِآزادی کی خصوصی تقریب

شہر میں ہوم گارڈس دفتر میں 72واں یوم ِ آزادی کا جشن پرچم کشائی کے ساتھ منایاگیا ۔ ضلعی آفیسر دیپک گوکرن  نے جھنڈا لہرانے کے بعد خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہمیں یہ آزادی کئی ایک مہان ہستیوں کی قربانی کے بعد ملی ہے۔ یہ ملک تکثریت میں وحدت پیش کرنے والا ایک انوکھا ملک ہے۔انہوں نے کہاکہ ...

کاروار : ضلع پنچایت اورمیڈیکل کالج میں یوم ِ آزادی کا جشن :ایمانداری سے اپنے فرائض کو انجام دینا  سچی دیش بھگتی  

اترکنڑا ضلع کے مرکزی مقام کاروار میں اترکنڑا ضلع پنچایت اور میڈیکل سائنس سنٹر میں  جوش و خروش کے ساتھ یوم آزادی کا جشن منایا ۔ جس کی مختصر تفصیل ذیل میں دی جارہی ہے۔ ...

بھٹکل میں یوم آزادی کا جشن پورے جوش وخروش کے ساتھ منایا گیا؛ تعلقہ انتظامیہ کی جانب سے اسسٹنٹ کمشنر نے لہرایا جھنڈا

ہر سال کی طرح امسال بھی بھٹکل میں پورے جوش و خروش کے ساتھ  یوم آزادی کی تقریب منائی گئی اور تعلقہ انتظامیہ سمیت مختلف سرکاری اور غیر سرکاری اداروں سمیت تعلیمی اداروں میں بھی  ترنگا جھنڈا لہرایا گیا۔

کورگ میں بارش کی بھاری تباہی ، تین اموات،زمین کھسکنے کے متعدد واقعات 

جنوبی ہند کا کشمیر کہلانے والے ریاست کے کورگ ضلع میں بارش نے زبردست تباہی مچادی ہے۔ ایک طرف بارش کا سلسلہ رکنے کا نام نہیں لے رہا ہے تو دوسری طرف پڑوسی ریاست کیرلا میں طوفانی بارش کے سبب وہاں کی ندیوں کا پانی بھی کرناٹک کی طرف بہادیا گیا ہے،

مہادائی ٹریبونل کے فیصلے کا چیلنج کرنے ریاستی حکومت تیار

ریاستی وزیر برائے آبی وسائل ڈی کے شیوکمار نے کہاکہ شمالی کرناٹک کے بعض اضلاع کو پینے کے پانی کی فراہمی کا واحد ذریعہ مہادائی کے پانی کی تقسیم کے سلسلے میں حال ہی میں ٹریبونل نے جو فیصلہ صادر کیا ہے ریاستی حکومت اس کا سپریم کورٹ میں چیلنج کرے گی۔

بھٹکل میونسپل پارک کی تجدیدکاری میں بدعنوانی کا الزام۔ ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم

بھٹکل بلدیہ کے حدود میں بندر روڈ پر واقع سردار ولبھ بھائی پٹیل پارک کی تجدید کاری میں بدعنوانی کا الزام لگاتے ہوئے  آسارکیری کے عوام  نے بلدیہ انجینئر کو پارک میں طلب کرکے ڈپٹی کمشنر کے نام میمورنڈم دیا جس میں مطالبہ کیا گیا ہے کہ یہاں ہورہی بدعنوانی کی تحقیقات کروائی جائے۔