ہوناور کے پریش میستا کی ہلاکت کا معاملہ۔ انصاف دلانے کی مہم میں تبدیل ہوا سیاسی پارٹیوں کا رول !

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th July 2018, 8:42 PM | ساحلی خبریں | ریاستی خبریں |

ہوناور 12؍جولائی (ایس او نیوز)گزشتہ سال دسمبر میں جب پریش میستا نامی نوجوان کی پر اسرار موت ہوئی تھی تو اس وقت کانگریس پارٹی کے خلاف بی جے پی اور سنگھ پریوار والے میدان میں اتر گئے تھے اور پریش میستا اور اس کے اہل خانہ کو انصاف دلانے کے لئے حکومت کے خلاف الزامات اوراحتجاجی مظاہرے کیے جارہے تھے۔لیکن اب یہ منظر نامہ بد ل گیا ہے کیونکہ بی جے پی انصاف دلانے کے نام پر پرتشدد احتجاجات کرنے اور اسمبلی نتخاب میں اس کا بھرپور فائدہ اٹھانے کے بعداب ا س مسئلے سے کنارہ کش ہوگئی ہے اس لئے پریش میستا کو انصاف دلانے کی احتجاجی مہم کی باگ ڈور اب کانگریس پارٹی نے سنبھال لی  ہے۔

ہوناوربلاک کانگریس کی طرف سے 24گھنٹے کی بھوک ہڑتال کے ساتھ شروع ہونے والا یہ مظاہرہ کافی حد تک عوام کی توجہ اپنی طرف مبذو ل کرنے میں کامیاب ہواہے۔ کئی سماجی تنظیموں کی جانب سے اس احتجاج کو حمایت بھی حاصل رہی ہے۔ اس سے بی جے پی کے لئے سیاسی طور پر کچھ خسارہ ہوتا نظر آرہا ہے۔عوام کا کہنا ہے کہ آئندہ درپیش پارلیمانی الیکشن میں بی جے پی کے لئے یہ ایک خطرے کا سگنل ہوسکتا ہے ۔لیکن قابل ذکر بات یہ ہے کہ خود پریش میستا کے گھر والوں نے اپنے بیٹے کی موت پر انصاف کا مطالبہ کرنے والے کانگریسی احتجاج میں شرکت نہیں کی ہے۔اس سلسلے میں جب احتجاج کے منتظمین سے پوچھا گیا تو انہوں نے بتایا کہ ہم نے پریش میستا کے والدین کو بلایا تھا اور انہوں نے شرکت کرنا قبول بھی کیا تھا، مگر آخری لمحات میں ناگزیر وجوہات پر آنے سے معذوری کا اظہار کرتے ہوئے انہوں نے کہا ہے کہ آپ کے احتجاج کو ہماری حمایت ہمیشہ حاصل رہے گی۔

عوام کا تاثریہ بھی ہے کہ آئندہ پارلیمانی انتخابات کے نتائج پر اثر اندازہونے کے لئے کانگریس نے پریش میستا مسئلے کو خاموشی کے ساتھ بی جے پی کے ہاتھ سے چھین کراپنے ایجنڈے میں شامل کرلیا ہے ۔اور اگر ہلاک ہونے کے نام پر احتجاج کرکے سیاسی فائدہ اٹھانا ہی اصل مقصد ہے تو پھر یہ کسی بھی پارٹی کو زیب نہیں دیتا۔ حالانکہ کوئی بھی سیاسی پارٹی اس بات کا اعتراف نہیں کرے گی ، لیکن عوام کی نظروں سے یہ با ت بہت دنوں تک ڈھکی چھپی نہیں رہ سکتی۔ اور دونوں سیاسی پارٹیوں کو اس پہلو کا پورا احساس رہنا بھی فطری بات ہے۔ اصل بات  یہ ہے کہ صحیح اور غلط کا حساب و کتاب کرتے بیٹھنا سیاسی پارٹیوں کی پالیسی بھی نہیں ہوتی۔ صرف جہاں سے جتنا مفاد پورا ہوتا ہو، اتناسیاسی مفاد حاصل کرنا ان کا مقصد ہوتا ہے۔یہی وجہ ہے کہ جانکاریہ سمجھتے ہیں کہ اسمبلی الیکشن میں یہاں بی جے پی نے جس ہندوتواکے ایجنڈے سے کامیابی حاصل کی تھی وہی ہتھیا ر اب کانگریس بھی بی جے پی کے خلاف پارلیمانی الیکشن میں استعمال کرنے کے موڈ میں آ گئی ہے۔اب آنے والا وقت ہی بتائے گا کہ کانگریس کو اس پہلو سے کس حد تک کامیابی حاصل ہوتی ہے۔کیونکہ یہ تو بس شروعات ہے۔ اگلے دنوں میں کانگریس کی طر ف سے اس مسئلے پر مزید احتجاجی مظاہروں کے منصوبے بنائے جارہے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

اڈپی: شیرور مٹھ لکشمی ورا تیرتھا سوامی منی پال اسپتال میں انتقال کرگئے؛ کھانے میں زہر دے کر مارنے کا شبہ؛ صاف شفاف چھان بین کا مطالبہ

مشہور و معروف شیرور مٹھ کے لکشمی وراتیرتھا سوامی(۵۵سال) منی پالاسپتال میں علاج کے دوران انتقال کرگئے ۔ ان کی موت پر شک و  شبہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ ان کی موت غیرفطری طور پر ہوئی ہے اور شک ہے کہ انہیں زہر دے کر مارا گیا ہے۔

بھٹکل میونسپالٹی میں صفائی کرمچاری پرہاتھ اُٹھانے کا الزام؛ کام بند کرکے کیا گیا احتجاج؛ صلح صفائی کے بعد معاملہ حل

بھٹکل ٹائون میونسپالٹی کے ایک صفائی کرمچاری پر میونسپالٹی کے ہی ایک آفسر کے ذریعے ہاتھ اُٹھانے کا الزام عائد کرتے ہوئے  سبھی صفائی کرمچاریوں نے آج جمعرات کو احتجاج کرتے ہوئے کام کاج بند کردیا۔ مگر قریب تین گھنٹوں بعد  آپسی صلح صفائی کے بعد معاملہ حل کرلیا گیا۔

بھٹکل : کتابوں کا مطالعہ انسان کو اعلیٰ مقام پر لے جاتاہے: بیلکے ہائی اسکول میں شیوانی شانتا رام کا خطاب

کتابیں طلبا کی عقل و شعور کی قوت میں اضافہ کرتی ہیں ، عقل کا بہترین استعمال کرنے میں معاون وممد ہوتی ہیں، کتابوں کے مطالعہ سے انسان اعلیٰ مقام تک پہنچ سکتاہے۔ ان خیالات کااظہار بھٹکل کی صنعت کار شیوانی شانتارام نے کیا۔

منگلورومیسکام مزدوروں کو لگا ہائی ٹینشن وائر کا جھٹکا۔ ایک ہلاک 8شدید زخمی

مارائوور بس اسٹائنڈ  کے قریب  الیکٹرک کا نیا کھمبا نصب کرنے میں مصروف منگلورو الیکٹرک سپلائی کمپنی (میسکام) کے مزدور ہائی ٹینشن وائر کی زد میں آنے سے ایک کی موقع پر ہی موت واقع ہوگئی جبکہ بجلی کے جھٹکے لگنے سے دیگر 8مزدور شدید زخمی ہوگئے ،جنہیں علاج کے لئے نجی اسپتال لے جایا ...

اڈپی: شیرور مٹھ لکشمی ورا تیرتھا سوامی منی پال اسپتال میں انتقال کرگئے؛ کھانے میں زہر دے کر مارنے کا شبہ؛ صاف شفاف چھان بین کا مطالبہ

مشہور و معروف شیرور مٹھ کے لکشمی وراتیرتھا سوامی(۵۵سال) منی پالاسپتال میں علاج کے دوران انتقال کرگئے ۔ ان کی موت پر شک و  شبہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ ان کی موت غیرفطری طور پر ہوئی ہے اور شک ہے کہ انہیں زہر دے کر مارا گیا ہے۔

تین مسلم نوجوان دہشت گردانہ کارروائیوں میں ملوث ہونے کے الزامات سے بری 

مسلم نوجوانوں کو قانونی امدادفراہم کرنے والی تنظیم جمعیۃ علمائے مہاراشٹر (ارشد مدنی) کو آج اس وقت ایک بار پھر کامیابی حاصل ہوئی جب کرناٹک کے شہربلاری کی نچلی عدالت نے تین مسلم نوجوانوں کو دہشت گردی کے الزامات سے باعزت بری کردیا۔

ریاست میں اسمارٹ سٹی منصوبے پر کام میں تیزی جلد، رسل مارکیٹ اور کے آر مارکیٹ کی تجدید منصوبے میں شامل: یو ٹی قادر

ریاستی وزیر برائے شہری ترقیات یوٹی قادر نے کہا ہے کہ مرکزی وریاستی حکومتوں کے اشتراک سے اسمارٹ سٹی منصوبے کو تیزی سے آگے بڑھانے کے مقصد سے آج محکمے کے اعلیٰ افسروں کے ساتھ ایک میٹنگ کی گئی۔