پاکستان الیکشن :خدشات سچ ثابت ہورہے ہیں، مسلم لیگ ن کی اتحادی حکومت گرانے والی جماعتیں کامیاب

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 29th July 2018, 2:23 AM | عالمی خبریں |

کوئٹہ :28/جولائی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں عام انتخابات میں ان جماعتوں کو زیادہ نشستیں ملیں جنھوں نے اس سال کے اوائل میں بلوچستان میں مسلم لیگ ن کی حکومت کو ختم کرانے میں کردار ادا کیا تھا۔اس سال کے اوائل تک بلوچستان میں نون لیگ کی قیادت میں مخلوط حکومت قائم تھی۔ مخلوط حکومت میں مسلم لیگ ن کی دو اتحادی جماعتیں پشتونخوا ملی عوامی پارٹی اور نیشنل پارٹی شامل تھیں۔جن جماعتوں نے اس حکومت کو ختم کرنے میں کردار ادا کیا تھا ان میں مسلم لیگ ن کے باغی اراکین، جمیعت علمائے اسلام(ف)، بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل)، عوامی نیشنل پارٹی اور بلوچستان نیشنل پارٹی (عوامی) شامل تھیں۔ مسلم لیگ ن کے باغی اراکین نے حکومت کے خاتمے کے بعد بلوچستان عوامی پارٹی کے نام سے نئی جماعت بنائی۔الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والے نتائج کے مطابق بلوچستان عوامی پارٹی کو بلوچستان اسمبلی کی 51نشستوں میں سے 50 پر ہونے والے انتخابات میں 15نشستیں ملی ہیں۔ اس لحاظ سے وہ بلوچستان اسمبلی میں بڑی پارٹی بن گئی ہے۔جمعیت علمائے اسلام (ف) متحدہ مجلس عمل کی بحالی کے بعد اس کا حصہ ہے۔ صوبائی انتخابات میں ایم ایم اے نو نشستوں کے ساتھ دوسری بڑی جماعت بن کر سامنے آئی ہے۔بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل سات نشستوں کے ساتھ تیسری بڑی جماعت کے طور پر ابھری ہے۔بلوچستان اسمبلی کے لیے پانچ اراکین آزاد حیثیت سے کامیاب ہوئے ہیں۔ پہلی مرتبہ بلوچستان اسمبلی میں تحریک انصاف کو چار نشستیں ملی ہیں۔عوامی نیشنل پارٹی کو بلوچستان اسمبلی کی تین نشستوں پر کامیابی ملی ہے جبکہ پہلی مرتبہ ہزارہ قبیلے سے تعلق رکھنے والی قوم پرست جماعت ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کو بھی دو نشستیں ملی ہیں۔بلوچستان نیشنل پارٹی (عوامی) نے دو نشستوں پر کامیابی حاصل کی ہے جبکہ پشتونخوا ملی عوامی پارٹی، مسلم لیگ نون اور جمہوری وطن پارٹی کو ایک ایک نشست پر کامیابی ملی۔25جولائی کو ہونے عام انتخابات میں بلوچستان سے نون لیگ اور اس کی دو اتحادی قوم پرست جماعتیں پشتونخوا ملی پارٹی اور نیشنل پارٹی ناکامی سے دوچار رہیں۔نون لیگ اور پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کو بمشکل ایک ایک نشست پر کامیابی ملی لیکن نیشنل پارٹی کوئی نشست حاصل نہیں کرسکی۔پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی نے انتخابات کے نتائج کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن صاف اور شفاف انتخابات کرانے میں ناکام رہا ہے۔محمود خان اچکزئی خود قومی اسمبلی کی دو نشستوں سے انتخاب لڑ ے لیکن ان کو کسی بھی نشست پر کامیابی نہیں ملیں۔انھوں نے دعویٰ کیا کہ انتخابات میں بدترین دھاندلی کی گئی۔سنہ 2013 کے عام انتخابات کی طرح سنہ 2018 کے عام انتخابات کے نتائج پر بھی بلوچستان میں عدم اطمینان کی فضا ہے۔جہاں ہارنے والی جماعتیں نتائج سے مطمئن نہیں وہاں زیادہ نشستیں حاصل کرنے والی جماعتیں بھی ان پر معترض ہیں۔بلوچستان اسمبلی میں دوسری پوزیشن حاصل کرنے والی متحدہ مجلس عمل کے رہنماؤں نے بھی دھاندلی کے الزامات لگائے ہیں۔ کوئٹہ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایم ایم اے کے رہنما مولانا غفور حیدری نے اس رائے کا اظہار کیا کہ ’بلوچستان میں جو دھاندلی کی گئی ماضی میں اس کی مثال نہیں ملتی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

سری لنکا چرچ بم بلاسٹ میں ڈرگ مافیاکا ہاتھ ہے۔ صدر سیری سینا کا بیان

انگریزی اخبار دی نیو انڈین ایکسپریس میں شائع ایک رپورٹ کے مطابق سری لنکا کے صدر مائتھری پالا سیری سینا نے کہا ہے کہ عیسائی تہوار ایسٹر کے موقع پر چرچ کے اندر جو ہولناک بم دھماکے ہوئے تھے اس کے پیچھے بین الاقوامی ڈرگ مافیاکاہاتھ ہے۔

 ورلڈ کپ پا کر انگلینڈ جھوم اُٹھا مگر فتح کے فارمولہ پر تنقیدیں ، آئی سی سی کو متنازع ضابطے پر نظرثانی کا مشورہ دیا 

اتوار کو اعصاب شکن میچ میں انگلینڈ کی فتح سے جہاں پورا برطانیہ جھوم اٹھا ہے اور ملک بھر میں جشن کا ماحول ہے وہیں انٹر ننشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی ) کا وہ ضابطہ تنقیدوں کی زد پر آگیا ہے جس کی وجہ سے میچ اور بعد میں سُوپر اوور کے بھی ٹائی ہونے کے باوجودانگلینڈ کو فاتح قرار دیا گیا۔ ...

ورلڈ کپ کرکٹ ٹورنامنٹ کا فائنل بے حد دلچسپ؛ ٹائی ہونے کے بعد سوپر اوور میں بھی اسکور برابر؛ باونڈریس زائد ہونے پر انگلینڈ پہلی مرتبہ بنا ورلڈ چیمپئن

لندن کے لارڈس میدان میں منعقد ورلڈ کپ 2019 کرکٹ ٹورنامنٹ کا فائنل میچ ڈرامائی انداز میں ٹائی ہونے کے بعد  انگلینڈ  نے سوپر اوور کے بعد نیوزی لینڈ کو سنسنی خیز مقابلے   میں شکست دے دی اور پہلی بار عالمی کپ جیتنے میں کامیاب ہوگئی۔ فائنل مقابلہ اتنا دلچسپ اور کانٹے کا رہا کہ  ...

صومالیہ میں ہوٹل پر دہشت گردانہ حملہ، 6 ہلاک 50 زخمی

صومالیہ کے جنوبی بندرگاہ كسمايو میں ایک ہوٹل پر ہونے والے دہشت گردانہ حملہ میں کم از کم چھ افراد کی موت اور تقریبا 50 دیگر زخمی ہو گئے۔ یہ حملہ جمعہ کو کیا گیا۔ مقامی حکام کے حوالہ سے میڈیا نے یہ اطلاع دی ہے۔