پاکستان الیکشن :خدشات سچ ثابت ہورہے ہیں، مسلم لیگ ن کی اتحادی حکومت گرانے والی جماعتیں کامیاب

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 29th July 2018, 2:23 AM | عالمی خبریں |

کوئٹہ :28/جولائی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں عام انتخابات میں ان جماعتوں کو زیادہ نشستیں ملیں جنھوں نے اس سال کے اوائل میں بلوچستان میں مسلم لیگ ن کی حکومت کو ختم کرانے میں کردار ادا کیا تھا۔اس سال کے اوائل تک بلوچستان میں نون لیگ کی قیادت میں مخلوط حکومت قائم تھی۔ مخلوط حکومت میں مسلم لیگ ن کی دو اتحادی جماعتیں پشتونخوا ملی عوامی پارٹی اور نیشنل پارٹی شامل تھیں۔جن جماعتوں نے اس حکومت کو ختم کرنے میں کردار ادا کیا تھا ان میں مسلم لیگ ن کے باغی اراکین، جمیعت علمائے اسلام(ف)، بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل)، عوامی نیشنل پارٹی اور بلوچستان نیشنل پارٹی (عوامی) شامل تھیں۔ مسلم لیگ ن کے باغی اراکین نے حکومت کے خاتمے کے بعد بلوچستان عوامی پارٹی کے نام سے نئی جماعت بنائی۔الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والے نتائج کے مطابق بلوچستان عوامی پارٹی کو بلوچستان اسمبلی کی 51نشستوں میں سے 50 پر ہونے والے انتخابات میں 15نشستیں ملی ہیں۔ اس لحاظ سے وہ بلوچستان اسمبلی میں بڑی پارٹی بن گئی ہے۔جمعیت علمائے اسلام (ف) متحدہ مجلس عمل کی بحالی کے بعد اس کا حصہ ہے۔ صوبائی انتخابات میں ایم ایم اے نو نشستوں کے ساتھ دوسری بڑی جماعت بن کر سامنے آئی ہے۔بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل سات نشستوں کے ساتھ تیسری بڑی جماعت کے طور پر ابھری ہے۔بلوچستان اسمبلی کے لیے پانچ اراکین آزاد حیثیت سے کامیاب ہوئے ہیں۔ پہلی مرتبہ بلوچستان اسمبلی میں تحریک انصاف کو چار نشستیں ملی ہیں۔عوامی نیشنل پارٹی کو بلوچستان اسمبلی کی تین نشستوں پر کامیابی ملی ہے جبکہ پہلی مرتبہ ہزارہ قبیلے سے تعلق رکھنے والی قوم پرست جماعت ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کو بھی دو نشستیں ملی ہیں۔بلوچستان نیشنل پارٹی (عوامی) نے دو نشستوں پر کامیابی حاصل کی ہے جبکہ پشتونخوا ملی عوامی پارٹی، مسلم لیگ نون اور جمہوری وطن پارٹی کو ایک ایک نشست پر کامیابی ملی۔25جولائی کو ہونے عام انتخابات میں بلوچستان سے نون لیگ اور اس کی دو اتحادی قوم پرست جماعتیں پشتونخوا ملی پارٹی اور نیشنل پارٹی ناکامی سے دوچار رہیں۔نون لیگ اور پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کو بمشکل ایک ایک نشست پر کامیابی ملی لیکن نیشنل پارٹی کوئی نشست حاصل نہیں کرسکی۔پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی نے انتخابات کے نتائج کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن صاف اور شفاف انتخابات کرانے میں ناکام رہا ہے۔محمود خان اچکزئی خود قومی اسمبلی کی دو نشستوں سے انتخاب لڑ ے لیکن ان کو کسی بھی نشست پر کامیابی نہیں ملیں۔انھوں نے دعویٰ کیا کہ انتخابات میں بدترین دھاندلی کی گئی۔سنہ 2013 کے عام انتخابات کی طرح سنہ 2018 کے عام انتخابات کے نتائج پر بھی بلوچستان میں عدم اطمینان کی فضا ہے۔جہاں ہارنے والی جماعتیں نتائج سے مطمئن نہیں وہاں زیادہ نشستیں حاصل کرنے والی جماعتیں بھی ان پر معترض ہیں۔بلوچستان اسمبلی میں دوسری پوزیشن حاصل کرنے والی متحدہ مجلس عمل کے رہنماؤں نے بھی دھاندلی کے الزامات لگائے ہیں۔ کوئٹہ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایم ایم اے کے رہنما مولانا غفور حیدری نے اس رائے کا اظہار کیا کہ ’بلوچستان میں جو دھاندلی کی گئی ماضی میں اس کی مثال نہیں ملتی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

نوازشریف کو کچھ ہوا تو عمران ذمہ دار ہوں گے :شہباز

پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ حکومت نواز شریف کی صحت سے متعلق بے حسی کا مظاہرہ کر رہی ہے اوراہل خانہ کو انکی صحت سے متعلق کچھ آگاہ نہیں کیا جا رہا، نواز شریف کو کچھ ہوا تو ذمہ دار وزیراعظم ہوں گے،نیازی صاحب نے وعدہ کیا تھا کہ ہم نئے صوبہ بنائیں گے، ...

وینزویلا:حکومت کے حامی اور مخالفین سڑکوں پر

وینزویلا کے دارالحکومت کارکاس میں حکومت کے حامی اور مخالفین سڑکوں پر نکل آئے۔ایک طرف صدر مادورو کی اپیل پر ہاتھوں میں وینزویلا کے پرچم لئے مظاہرین سڑکوں پر تھے تو دوسری طرف حزب اختلاف کے لیڈر ہوان گوآئیڈو کے حامی۔مادورو کے حامی شاویز کے انقلابِ بولیوار کی 20 ویں سالانہ یاد کے ...

2014 کے لوک سبھا انتخابات میں تمام ای وی ایم ہیک کئے گئے تھے: امریکن سائبر ایکسپرٹ کا دعویٰ؛ کیا ای وی ایم نے بی جے پی کو اقتدار دلایا ؟

 امریکہ میں مقیم ایک سائبر ماہر سید شجاع نے دعویٰ کیا ہے کہ   ہندستان میں    سال 2014میں ہوئےعام انتخابات میں استعمال کی گئی  الیکٹرونک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) کو  ہیک کیا گیا تھا۔ 543 سیٹوں والے اس الیکشن میں بی جے پی کو282 سیٹوں پر شاندار کامیابی حاصل ہوئی تھی اور سن 1984 کے بعد پہلی ...

بنگلہ دیش انتخابات میں شیخ حسینہ کامیاب، اپوزیشن نے نتائج ماننے سے کیا انکار

خبر رساں اداروں کے مطابق بنگلہ دیشی وزیر اعظم شیخ حسینہ واجد کی حکمران جماعت عوامی لیگ نے اتوار 30 دسمبر کو ہونے والے عام انتخابات میں اپوزیشن کے مقابلے میں بڑی برتری حاصل کر لی ہے اور حتمی نتائج میں عوامی لیگ کو کل 350 نشستوں میں سے 281 نشستوں پر کامیابی حاصل ہوئی ہے۔

ایرانی حکومت ٹوئٹراستعمال کر رہی ہے مگر عوام کے لیے ممنوع ہے : امریکی سفیر

جرمنی میں امریکی سفیر رچرڈ گرینل کا کہنا ہے کہ ایرانی حکومت خود ٹویٹر کا استعمال کر رہی ہے مگر عوام کے لیے اس کا استعمال روکا ہوا ہے۔ انہوں نے یہ بات ایرانی پارلیمنٹ کے اسپیکر علی لاریجانی سے منسوب ٹویٹر اکاؤنٹ کھولے جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہی۔اگرچہ ایرانی میڈیا نے مذکورہ ...