پاکستان الیکشن :خدشات سچ ثابت ہورہے ہیں، مسلم لیگ ن کی اتحادی حکومت گرانے والی جماعتیں کامیاب

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 29th July 2018, 2:23 AM | عالمی خبریں |

کوئٹہ :28/جولائی(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں عام انتخابات میں ان جماعتوں کو زیادہ نشستیں ملیں جنھوں نے اس سال کے اوائل میں بلوچستان میں مسلم لیگ ن کی حکومت کو ختم کرانے میں کردار ادا کیا تھا۔اس سال کے اوائل تک بلوچستان میں نون لیگ کی قیادت میں مخلوط حکومت قائم تھی۔ مخلوط حکومت میں مسلم لیگ ن کی دو اتحادی جماعتیں پشتونخوا ملی عوامی پارٹی اور نیشنل پارٹی شامل تھیں۔جن جماعتوں نے اس حکومت کو ختم کرنے میں کردار ادا کیا تھا ان میں مسلم لیگ ن کے باغی اراکین، جمیعت علمائے اسلام(ف)، بلوچستان نیشنل پارٹی (مینگل)، عوامی نیشنل پارٹی اور بلوچستان نیشنل پارٹی (عوامی) شامل تھیں۔ مسلم لیگ ن کے باغی اراکین نے حکومت کے خاتمے کے بعد بلوچستان عوامی پارٹی کے نام سے نئی جماعت بنائی۔الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والے نتائج کے مطابق بلوچستان عوامی پارٹی کو بلوچستان اسمبلی کی 51نشستوں میں سے 50 پر ہونے والے انتخابات میں 15نشستیں ملی ہیں۔ اس لحاظ سے وہ بلوچستان اسمبلی میں بڑی پارٹی بن گئی ہے۔جمعیت علمائے اسلام (ف) متحدہ مجلس عمل کی بحالی کے بعد اس کا حصہ ہے۔ صوبائی انتخابات میں ایم ایم اے نو نشستوں کے ساتھ دوسری بڑی جماعت بن کر سامنے آئی ہے۔بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل سات نشستوں کے ساتھ تیسری بڑی جماعت کے طور پر ابھری ہے۔بلوچستان اسمبلی کے لیے پانچ اراکین آزاد حیثیت سے کامیاب ہوئے ہیں۔ پہلی مرتبہ بلوچستان اسمبلی میں تحریک انصاف کو چار نشستیں ملی ہیں۔عوامی نیشنل پارٹی کو بلوچستان اسمبلی کی تین نشستوں پر کامیابی ملی ہے جبکہ پہلی مرتبہ ہزارہ قبیلے سے تعلق رکھنے والی قوم پرست جماعت ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی کو بھی دو نشستیں ملی ہیں۔بلوچستان نیشنل پارٹی (عوامی) نے دو نشستوں پر کامیابی حاصل کی ہے جبکہ پشتونخوا ملی عوامی پارٹی، مسلم لیگ نون اور جمہوری وطن پارٹی کو ایک ایک نشست پر کامیابی ملی۔25جولائی کو ہونے عام انتخابات میں بلوچستان سے نون لیگ اور اس کی دو اتحادی قوم پرست جماعتیں پشتونخوا ملی پارٹی اور نیشنل پارٹی ناکامی سے دوچار رہیں۔نون لیگ اور پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کو بمشکل ایک ایک نشست پر کامیابی ملی لیکن نیشنل پارٹی کوئی نشست حاصل نہیں کرسکی۔پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے سربراہ محمود خان اچکزئی نے انتخابات کے نتائج کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ الیکشن کمیشن صاف اور شفاف انتخابات کرانے میں ناکام رہا ہے۔محمود خان اچکزئی خود قومی اسمبلی کی دو نشستوں سے انتخاب لڑ ے لیکن ان کو کسی بھی نشست پر کامیابی نہیں ملیں۔انھوں نے دعویٰ کیا کہ انتخابات میں بدترین دھاندلی کی گئی۔سنہ 2013 کے عام انتخابات کی طرح سنہ 2018 کے عام انتخابات کے نتائج پر بھی بلوچستان میں عدم اطمینان کی فضا ہے۔جہاں ہارنے والی جماعتیں نتائج سے مطمئن نہیں وہاں زیادہ نشستیں حاصل کرنے والی جماعتیں بھی ان پر معترض ہیں۔بلوچستان اسمبلی میں دوسری پوزیشن حاصل کرنے والی متحدہ مجلس عمل کے رہنماؤں نے بھی دھاندلی کے الزامات لگائے ہیں۔ کوئٹہ میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ایم ایم اے کے رہنما مولانا غفور حیدری نے اس رائے کا اظہار کیا کہ ’بلوچستان میں جو دھاندلی کی گئی ماضی میں اس کی مثال نہیں ملتی۔ 

ایک نظر اس پر بھی

سی آئی اے کا دعویٰ ، سعودی عرب کے شہزادے نے دیا تھا جمال خشوگی کے قتل کاحکم

امریکی اخبار وشنگتن پوسٹ کے صحافی جمال خشوگی کی موت کو لیکر امریکی کی خفیہ ایجنسی نے بڑا دعوی کیا ہے۔ امریکہ کی سینٹرل انٹیلیجنس ایجنسی ( سی آئی اے ) نے کہا ہے کہ نے صحافی جمال خشوگی کے قتل کے احکام دئے تھے۔

بھارت۔ تائیوان ایس ایم ای ترقیاتی فورم تائیپی میں شروع 

vایم ایس ایم ای کے سکریٹری ڈاکٹر ارون کمار پانڈا 13 سے 17 نومبر 2018 تک چلنے والے بھارت 150 تائیوان ایس ایم ای ترقیاتی فورم کے اجلاس میں بھارتی وفد کی قیادت کررہے ہیں۔ فورم میں کل اپنے افتتاحی کلمات میں ڈاکٹر پانڈا نے کہا کہ بھارت میں ایم ایس ایم ای کی پوزیشن کلیدی اہمیت کی حامل ہے

شمالی کوریا کا میزائل پروگرام جاری ہے، رپورٹ

ایک امریکی ریسرچ آرگنائزیشن نے کہا ہے کہ اس نے شمالی کوریا کے میزائلوں سے متعلق ایسے 13 مقامات کا پتا لگایا ہے جن کا اعلان نہیں کیا گیا ہے۔ یہ اس بات کی تازہ ترین علامت ہے کہ شمالی کوریا کو اس کے جوہری ہتھیاروں سے دستبردار کرانے کی امریکی کوشش تعطل کا شکار ہو گئی ہے۔

غیر ملکی طلبہ کی امریکہ میں دلچسپی کیوں گھٹ رہی ہے؟

غیر ملکی طالب علموں کی آمد سے امریکی معیشت کو ہر سال42 ارب ڈالر کا فائدہ ہوتا ہے اور روزگار کی منڈی میں ساڑھے چار لاکھ ملازمتیں پیدا ہوتی ہیں۔ غیر ملکی طالب علم امریکی معیشت کے لئے بے بڑی اہمیت رکھتے ہیں۔

ہندوستان ڈیجیٹل فروغ اورترقی کے دورسے گذررہاہے ، سنگاپورمیں جاری فنٹیک فیسٹول میں وزیراعظم کاخطاب

وزیراعظم نے سنگاپورمیں جاری فنٹیک فیسٹول میں خطاب کرتے ہوئے کہاہے کہ یہ ہندوستان پر چھاجانے والے مالیاتی انقلاب اور ہندوستان کے 1.3 ارب عوام کی زندگی میں بہتر تبدیلیوں کا اعتراف ہے۔ہندوستان اور سنگاپور ہندوستانی اور آسیان ملکوں کے چھوٹے اور اوسط درجے کے کاروباری اداروں کوایک ...