صوبائی پرچم میں اب کوئی تبدیلی نہیں ہوگی: سدرامیا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th March 2018, 8:34 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،9؍مارچ(ایس او نیوز) ریاستی کابینہ نے کل جس صوبائی پرچم کو اپنانے کا فیصلہ کیا ہے آئندہ تمام سرکاری پروگراموں میں اس پرچم کا استعمال کیا جاسکتاہے۔ یہ بات آج وزیر اعلیٰ سدرامیا نے کہی۔ مختلف ترقیاتی پروگراموں کے افتتاح کے سلسلے میں آج یہاں آمد کے بعد پریا پٹنہ میں اخبار ی نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے سدرامیا نے کہاکہ صوبائی پرچم کے تمام رہنما خطوط کو قطعیت دی جاچکی ہے، اس پرچم کا ایک اپنا مقام اور مرتبہ رہے گا، اور اس کیلئے باضابطہ فلاگ کوڈ مرتب کیا جائے گا۔ ہر ایک کو اس کا احترام کرنا لازمی ہوگا۔ ہاسن ضلع کی ڈپٹی کمشنر روہنی سندوری کے تبادلے پر مرکزی اڈمنسٹریٹیو ٹریبونل کے اسٹے آرڈر پر تبصرہ کرنے سے انکار کرتے ہوئے سدرامیا نے کہاکہ سرکاری افسران کے تبادلوں کے معاملے پر عوامی بحث نہیں کی جاسکتی۔ میسور کے ورونا اسمبلی حلقہ میں جنتادل (ایس) صدر ایچ ڈی کمار سوامی کی وکاس پرویاترا کے متعلق تبصرہ کرتے ہوئے وزیر اعلیٰ نے کہاکہ جنتادل (ایس) ایک سیاسی جماعت ہے اسے عوامی پروگرام کے اہتمام کرنے کا پورا اختیار حاصل ہے، اس پر وہ تبصرہ کرنا نہیں چاہتے۔ انہوں نے کہاکہ کوئی بھی سیاسی پارٹی صرف عام جلسوں یا ریلیوں سے انتخابات جیت نہیں سکتی، اس سے پہلے بھی مختلف سیاسی جماعتوں نے جلسے اور ریلیوں کا اہتمام کیا ہے، لیکن کامیابی انہیں کو ملی ہے جنہوں نے عوام کیلئے کچھ کیا ہو۔ سابق وزیر ایچ وشواناتھ کے اس بیان پر کہ سدرامیا نے لوک آیوکتہ ادارے کو برباد کردیا ہے، وزیر اعلیٰ نے کہاکہ اس بیان پر وہ تبصرہ کرنا درست نہیں سمجھتے ۔اس موقع پر وزیر توانائی ڈی کے شیوکمار نے کہاکہ ریاست میں بجلی اور پانی کی کوئی قلت نہیں ہے۔ اگلے چار ماہ تک ریاست میں بجلی کا بحران نہ ہونے پائے اس کیلئے مختلف ذرائع سے بجلی کا ذخیرہ کیا جارہا ہے۔ وزیر برائے تعمیرات عامہ ڈاکٹر ایچ سی مہادیوپا بھی اس موقع پر موجود تھے۔

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورومیٹرو برڈج میں خرابی کا نائب وزیراعلیٰ پرمیشور نے معائنہ کیا

شہر کے ایم جی روڈ پر ٹرینٹی سرکل کے قریب ایم جی روڈ بیپنا ہلی میٹرو روٹ کے پلر نمبر 155کے قریب ایک بیم میں دراڑ کا آج نائب وزیراعلیٰ ڈاکٹر جی پرمیشور نے معائنہ کیا اور کہاکہ اس سلسلے میں مرمت کا کام جاری ہے۔

زہریلے کھانے کا معاملہ، اعلیٰ سطحی جانچ کرانے سدارمیاکا مطالبہ

کرناٹک کے سابق وزیر اعلیٰ اور مخلوط حکومت کے کورابطہ کمیٹی کے صدر سدارمیا نے سُلوادی گاؤں کے مرمَّا مندر میں زہریلا کھانہ کھانے سے 11 عقیدتمندوں کی موت اور 80 افراد کے بیمار ہونے کے معاملے کی اعلیٰ سطحی جانچ کا مطالبہ کیا ہے ۔