ایک بار پھر آپریشن کمل شروع، گیارہ اراکین اسمبلی کی وفاداری تبدیل کرنے بی جے پی کی کوشش تیز

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2019, 2:17 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو 9جنوری (ایس او نیوز) ریاست کی مخلوط حکومت کو غیر مستحکم کرنے کے لئے ایک بار پھر بی جے پی کی طرف سے آپریشن کمل شروع کئے جانے اور کانگریس کے 12 اراکین اسمبلی کو اپنے خیمے میں شامل کرنے کی کوشش تیز ہوگئی ہے۔

بتایاجاتاہے کہ دہلی میں مقیم ریاستی بی جے پی صدر بی ایس یڈیورپا ان بارہ اراکین اسمبلی کو بی جے پی کے قومی صدر امت شاہ سے ملانے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں۔ لیکن اب تک یہ ملاقات نہیں ہوئی ہے۔ وزارت میں شمولیت کے مرحلے میں نظر انداز کئے جانے کے بعد سرکاری بورڈز اور کارپوریشنوں کے چیرمینوں کے تقرر کے دوران بھی نظر انداز کردئے جانے پر ناراض کانگریس اراکین اسمبلی نے آپریشن کمل کے تحت اپنی اسمبلی رکنیت سے استعفیٰ دینے پر آمادگی ظاہر کی ہے۔ حالانکہ بی جے پی کے اس دعوے کی تصدیق نہیں ہوئی ہے لیکن کہاجارہاہے کہ مہاراشٹرا کے ایک طاقتور مرکزی وزیر کی نگرانی میں ان اراکین اسمبلی سے بات چیت کی گئی ہے۔ کہاجارہاہے کہ ان اراکین اسمبلی کی امت شاہ سے ملاقات کے بعد ریاستی حکومت کو گرانے کی کوشش میں اور تیزی لائی جائے گی۔ بلاری ضلع کے تین ، بلگاوی ضلع کے چار اور ہاویری و رائچور ضلع کے ایک ایک رکن اسمبلی کو نشانہ بنانے کا دعویٰ کیا جارہاہے۔ سابق وزیر رمیش جارکی ہولی کی قیادت میں جن اراکین کو بی جے پی نشانہ بنانے کی کوشش کررہی ہے ان میں مہانتیش کمبتھ ہلی ،سری منت پاٹل ، بی سی پاٹل ، بی ناگیندرا ، آنند سنگھ ، گنیش ، پرتاب گوڈا پاٹل، بسوراج ددور ، آزاد اراکین اسمبلی آر شنکر اور ناگیش شامل ہیں۔ 

ایک نظر اس پر بھی

ہندو لیڈر سورج نائک سونی نے اننت کمار ہیگڈے کو کہا،مودی حکومت کا داغدار وزیر؛ اُس کی مخالفت میں کام کرنے کے لئے نوجوانوں کی ٹیم تیار

ضلع شمالی کینرا میں ایک نوجوان ہندو لیڈر کے طور پر اپنی پہچان رکھنے والے کمٹہ کے سورج نائک سونی نے اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ’’ وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں چل رہی مرکزی حکومت میں اننت کمار ہیگڈے کی حیثیت ایک داغداروزیر کی ہے۔ اور ایسا لگتا ہے کہ انہیں ...

کرناٹک میں نوٹیفکیشن کے پہلے دن 6؍امیداروں کی نامزدگیاں داخل 

ریاست میں لوک سبھا الیکشن کے پہلے مرحلہ میں 14؍سیٹوں پر 18؍اپریل کو ہونے والے الیکشن کے لئے پرچہ نامزدگی کرنے کا آغاز ہوگیا ۔ پہلے دن چار حلقوں میں6؍ امیدواروں کی جانب سے 11؍ مزدگیاں داخل کئیں۔ یہ اطلاع ریاستی الیکشن افسر سنجیو کمار نے دی۔

بنگلورو کے تینوں پارلیمانی حلقوں میں ڈی سی پیز کی زیرنگرانی سخت بندوست لائسنس یافتہ 7؍ہزار ہتھیارات تحویل میں :پولیس کمشنر ٹی۔ سنیل کمار

پولیس کمشنر ٹی۔ سنیل کمار نے بتایا کہ بنگلور سنٹرل ،بنگلور نارتھ اور بنگلور ساؤتھ لوک سبھا حلقوں میں ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے لئے ڈپٹی کمشنر آف پولیس (ڈی سی پی) سطح کے پولیس افسروں کی نگرانی میں پولیس کا سخت بندوبست کیاگیا ہے۔

کرناٹک میں انتخابات متحد ہوکر لڑنے کانگریس جے ڈی ایس کا فیصلہ 

اگلے لوک سبھا انتخابات کی تیاریوں کے درمیان کانگریس اور جے ڈی ایس کو مقامی سطحوں پر جن مشکلوں کاسامنا کرنا پڑرہاہے ان سے نپٹنے اور متحد ہوکر انتخابات لڑنے کے ساتھ ریاست میں زیادہ سے زیادہ سیٹوں پر کامیابی حاصل کرنے کے لیے آج کانگریس اور جے ڈی ایس قائدین کااعلیٰ سطحی اجلاس ہوا۔ ...

دھارواڑمیں زیر تعمیر عمارت گر گئی ، 2افراد ہلاک ، کئی زخمی 

دھارواڑ میں زیر تعمیر 5منزلہ عمارت بیٹھ گئی جس کے سبب 2افراد ہلاک اورکئی افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ملی ہے ۔ اس حادثے میں سلیم مکاندار (28)ہلاک ہوگئے ہیں ۔ دھارواڑ کے کمار میشورنگر میں زیر تعمیر کامپلکس گرگیا۔ ملبے کے نیچے دبے ہوئے افراد کو باہر نکالنے کے لیے محکمۂ پولیس ، فارئر ...