ریاستی حکومت مفت گیس اسٹو کی اسکیم متعارف کرائے گی: قادر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2017, 11:33 AM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،9؍جنوری(ایس او نیوز) مرکزی حکومت کی اوجول اسکیم کے تحت ایل پی جی گیس کنکشن حاصل کرنے والے مستحقین کو ریاستی حکومت کی طرف سے مفت گیس کاچولہا فراہم کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔یہ اعلان آج وزیر برائے شہری رسد وخوراک یوٹی قادر نے کیا۔ انہوں نے کہاکہ اوجول اسکیم کے مستحقین کو اسٹو کے ساتھ ریگولیٹر اور ربر پائپ بھی مفت دیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ سدرامیا نے اس اسکیم کے نفاذ کو منظوری دے دی ہے۔ آج سے آن لائن اے پی ایل راشن کارڈ کی فراہمی کی اہم اسکیم کا آغاز کرنے کے بعد ایک اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے یوٹی قادر نے کہاکہ ریاست میں مرکزی حکومت کی اوجول اسکیم کو بہت جلد شروع کردیا جائے گا۔اس اسکیم کی شروعات کیلئے مرکزی وزیر پٹرولیم دیویندر پردھان کی تاریخ کا انتظار ہے۔ اس اسکیم کے تحت مرکزی حکومت مستحقین کو مفت ایل پی جی سلینڈر فراہم کررہی ہے،لیکن اسٹو کے بغیر مستحقین ان سلینڈروں کا کیا کریں گے؟۔ اسی لئے ریاستی حکومت نے اپنے صرفہ سے اسٹو اور ریگولیٹر مہیا کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔وزیر موصوف نے کہاکہ اوجول اسکیم کے تحت ایل پی جی سلینڈر حاصل کرنے کیلئے اب تک تین لاکھ سے زائد عرضیاں موصول ہوچکی ہیں۔ اس موقع پر انہوں نے کہاکہ آن لائن اے پی ایل راشن کارڈ حاصل کرنے کی سرکاری اسکیم آج سے شروع ہوچکی ہے۔ اے پی ایل کارڈ حاصل کرنے والے آن لائن ہی اپنا آدھار نمبر درج کرکے فوری طور پر عارضی کارڈ حاصل کرسکتے ہیں۔ 15 دنوں کے اندراسپیڈ پوسٹ کے ذریعہ ان کے گھر پر راشن کارڈ فراہم کردیا جائے گا ،جسے وہ 100 روپے ادا کرکے حاصل کرسکتے ہیں۔ اس کارڈ کی فراہمی کا سلسلہ باضابطہ آگے بڑھاتے ہوئے قادر نے کارڈ حاصل کرنے کی تمام تفصیلات پیش کیں۔ انہوں نے کہاکہ ریاست کے کسی بھی حصہ سے اے پی ایل راشن کارڈ کیلئے عرضی درج کی جاسکتی ہے۔ فوری طور پر انہیں عارضی راشن کارڈ جاری کردیا جائے گا۔اسی کا استعمال کرکے وہ راشن کی خریداری بھی کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اس سے پہلے اے پی ایل کارڈ حاصل کرنے کیلئے جو 16شرائط تھیں ان تمام کو ختم کردیا گیا ہے، صرف آدھار نمبر دے کر کارڈ حاصل کیا جاسکتاہے۔ اس کارڈ میں مزید نام جوڑنے یا ہٹانے کی سہولت بھی مہیا کرائی گئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگلے پندرہ دنوں کے اندر بی پی ایل راشن کارڈوں کیلئے بھی آن لائن عرضیاں داخل کرنے کا سلسلہ شروع کردیا جائے گا۔ دیہی علاقوں میں عوام متعلقہ گرام پنچایتوں کے ذریعہ عرضیاں داخل کرسکتے ہیں، جبکہ شہری علاقوں میں بنگلور ون سے عرضیاں داخل کی جاسکتی ہیں۔راشن کی دکانوں سے بھی آن لائن عرضیاں داخل کرنے کی سہولت دستیاب رہے گی۔ بی پی ایل کارڈ میں شامل ہونے والے تمام افراد کا آدھار نمبر اور بائیو میٹرک تفصیلات فراہم کرنا لازمی قرار دیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

چنتامنی: دلت کے علاقوں میں غیر قانونی شراب پر پابندی لگائی جائیگی :منجولکشیا

حلقہ کے مختلف دلت طبقہ زندگی بسر کرنے والے علاقوں میں غیر قانونی شراب فروخت کرنے والوں پر سختی کے ساتھ قانونی کارروائی کی جائیگی دلت علاقوں میں غیر قانونی شراب فروخت پر پابندی لگانے کے لئے دلت طبقہ محکمہ ایکسائز کا ساتھ دینا ہوگا اُسی وقت غیر قانونی شراب پر پابندی لگانے میں ...

تلنگانہ حیدرآباد میں منعقدہ تین روزہ دعوت اسلامی اجتماع کے لئے چنتامنی سے دو ہائی ٹیک لکثری بسوں کا انتظام

ہم بے قصور ہیں انسانیت کے ناطہ عوام کی خدمت کرنا قصور نہیں ہے خدمت خلق سے خدااور رسول ؐکی رضا مندی حاصل کی جاسکتی ہے اور عوامی خدمات کے ذریعہ ہی ملک کی ترقی ممکن ہوسکتی ہے ان خیالات کااظہار وارڈ نمبر 17کے کونسلر محمد شفیق نے کیا ۔

26؍ فروری کو ریاستی کانگریس رابطہ کمیٹی کا اجلاس،برگشتگی اور دیگر امور پر تفصیلی بحث ہوگی

ریاستی کانگریس میں داخلی انتشار اور سینئر لیڈروں کے پارٹی کو خیر باد کہنے کے سلسلے کو دیکھتے ہوئے مختلف مسائل پر تبادلۂ خیال کرنے اور کانگریس کی حکمت عملی کو راہ راست پر لانے کے مقصد سے 26؍ فروری کو کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی کی رابطہ کمیٹی کی میٹنگ طلب کی گئی ہے۔

ریت کا مسئلہ حل کرنے کا مطالبہ۔۔کاروار میں احتجاجی مظاہرہ

ضلع کاروار میں ریت کے سنگین مسئلے کو حل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے تعمیراتی مزدوروں،ٹھیکیداروں، انجینئروں اورریت فراہم کرنے والوں نے شہر میں زبردست احتجاجی مظاہرہ کیااور ضلع انتظامیہ کی معرفت حکومت کو میمورنڈم پیش کیا۔

تلنگانہ:بس میں اچانک لگی آگ، تمام مسافر محفوظ

لنگانہ میں منگل کو ایک لگژری بس کے 30مسافروں کی جان پر اس وقت خطرہ منڈلانے لگا تھا جب بس میں شارٹ سرکٹ سے آگ لگ گئی تھی۔واقعہ کی ویڈیو کو دیکھ کر معلوم ہوتا ہے کہ بس میں کافی تیز آگ لگی تھی۔