ریاستی حکومت مفت گیس اسٹو کی اسکیم متعارف کرائے گی: قادر

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 10th January 2017, 11:33 AM | ریاستی خبریں | ان خبروں کو پڑھنا مت بھولئے |

بنگلورو،9؍جنوری(ایس او نیوز) مرکزی حکومت کی اوجول اسکیم کے تحت ایل پی جی گیس کنکشن حاصل کرنے والے مستحقین کو ریاستی حکومت کی طرف سے مفت گیس کاچولہا فراہم کرانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔یہ اعلان آج وزیر برائے شہری رسد وخوراک یوٹی قادر نے کیا۔ انہوں نے کہاکہ اوجول اسکیم کے مستحقین کو اسٹو کے ساتھ ریگولیٹر اور ربر پائپ بھی مفت دیا جائے گا۔ وزیر اعلیٰ سدرامیا نے اس اسکیم کے نفاذ کو منظوری دے دی ہے۔ آج سے آن لائن اے پی ایل راشن کارڈ کی فراہمی کی اہم اسکیم کا آغاز کرنے کے بعد ایک اخباری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے یوٹی قادر نے کہاکہ ریاست میں مرکزی حکومت کی اوجول اسکیم کو بہت جلد شروع کردیا جائے گا۔اس اسکیم کی شروعات کیلئے مرکزی وزیر پٹرولیم دیویندر پردھان کی تاریخ کا انتظار ہے۔ اس اسکیم کے تحت مرکزی حکومت مستحقین کو مفت ایل پی جی سلینڈر فراہم کررہی ہے،لیکن اسٹو کے بغیر مستحقین ان سلینڈروں کا کیا کریں گے؟۔ اسی لئے ریاستی حکومت نے اپنے صرفہ سے اسٹو اور ریگولیٹر مہیا کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔وزیر موصوف نے کہاکہ اوجول اسکیم کے تحت ایل پی جی سلینڈر حاصل کرنے کیلئے اب تک تین لاکھ سے زائد عرضیاں موصول ہوچکی ہیں۔ اس موقع پر انہوں نے کہاکہ آن لائن اے پی ایل راشن کارڈ حاصل کرنے کی سرکاری اسکیم آج سے شروع ہوچکی ہے۔ اے پی ایل کارڈ حاصل کرنے والے آن لائن ہی اپنا آدھار نمبر درج کرکے فوری طور پر عارضی کارڈ حاصل کرسکتے ہیں۔ 15 دنوں کے اندراسپیڈ پوسٹ کے ذریعہ ان کے گھر پر راشن کارڈ فراہم کردیا جائے گا ،جسے وہ 100 روپے ادا کرکے حاصل کرسکتے ہیں۔ اس کارڈ کی فراہمی کا سلسلہ باضابطہ آگے بڑھاتے ہوئے قادر نے کارڈ حاصل کرنے کی تمام تفصیلات پیش کیں۔ انہوں نے کہاکہ ریاست کے کسی بھی حصہ سے اے پی ایل راشن کارڈ کیلئے عرضی درج کی جاسکتی ہے۔ فوری طور پر انہیں عارضی راشن کارڈ جاری کردیا جائے گا۔اسی کا استعمال کرکے وہ راشن کی خریداری بھی کرسکتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ اس سے پہلے اے پی ایل کارڈ حاصل کرنے کیلئے جو 16شرائط تھیں ان تمام کو ختم کردیا گیا ہے، صرف آدھار نمبر دے کر کارڈ حاصل کیا جاسکتاہے۔ اس کارڈ میں مزید نام جوڑنے یا ہٹانے کی سہولت بھی مہیا کرائی گئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ اگلے پندرہ دنوں کے اندر بی پی ایل راشن کارڈوں کیلئے بھی آن لائن عرضیاں داخل کرنے کا سلسلہ شروع کردیا جائے گا۔ دیہی علاقوں میں عوام متعلقہ گرام پنچایتوں کے ذریعہ عرضیاں داخل کرسکتے ہیں، جبکہ شہری علاقوں میں بنگلور ون سے عرضیاں داخل کی جاسکتی ہیں۔راشن کی دکانوں سے بھی آن لائن عرضیاں داخل کرنے کی سہولت دستیاب رہے گی۔ بی پی ایل کارڈ میں شامل ہونے والے تمام افراد کا آدھار نمبر اور بائیو میٹرک تفصیلات فراہم کرنا لازمی قرار دیا گیا ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

کرناٹکا میں پرائیویٹ ڈاکٹروں اور اسپتالوں سے متعلقہ بِل میں ترمیم۔ جیل کی سزا حذف کردی گئی

پچھلے کچھ دنوں سے حکومت کرناٹکا اور پرائیویٹ ڈاکٹروں کے درمیان جس بِل کو لے کر تنازعہ کھڑا ہوگیا تھا اس پر حکومت نے پسپائی اختیار کرتے ہوئے KPMEایکٹ کے ترمیم شدہ بل کوذرا نرم کرکے اسمبلی سیشن میں پیش کردیاہے اور مریض کے سلسلے میں ڈاکٹر یا اسپتال کی غلطی کے لئے 6مہینے سے 3سال تک ...

صنعتوں کے فروغ کے لئے سمٹ بہتر ذریعہ:دیش پانڈے کا بنگلور انٹرنیشنل ایگزی بیشن سنٹرمیں دوروزہ ’’وینڈرڈیولپمنٹ انوسٹرزسمٹ کا انعقاد

ریاستی وزیر برائے بڑی ودرمیانی صنعتیں آروی دیش پانڈے نے بتایاکہ درمیانی اورچھوٹی صنعتوں کو فروغ دینے کے مقصد سے 23اور 24نومبر شہر کے مضافات ٹمکور روڈ کے بنگلور انٹرنیشنل ایگزی بیشن سنٹر ( بی آئی ای سی) میں دوروزہ ’’وینڈرڈیولپمنٹ انوسٹرزسمٹ 2017‘‘ کااہتمام کیاگیاہے۔

حکومت کی اسکیموں کو عوام تک پہنچانا ہم سب کی ذمہ داری: چنتامنی ،چنسندرہ گرام پنچایت کی صدر کوثر شریف کا بیان

حکومتیں عوام کی فلاح بہبودی کے لئے بیشمار اسکیمیں بنائی ہے جو بھی لوگ ان اسکیموں کے بارے میں جانکاری رکھتے ہیں ان کو چاہئے کہ ان اسکیموں کے بارے میں عوام کو بھی معلومات کرائیں ان باتوں کااظہار خیال چنسندرہ گرام پنچایت کی صدر کوثر شریف نے کہی ۔

کاروار میں جلد شروع ہوگا اسکوبا ڈائیونگ کا تربیتی مرکز۔ ٹورزم کوملے گا فروغ

نوجوانوں میں دلچسپی کا سبب بننے والی اسکوبا ڈائیونگ کی تربیت کے لئے ضلع انتظامیہ نے کاروار میں ایک مرکز قائم کرنے فیصلہ کیا ہے۔ جس کی وجہ سے یہاں پر سیاحت کو بہت زیادہ فروغ امکانات پیدا ہوگئے ہیں۔

کرناٹکا میں پرائیویٹ ڈاکٹروں اور اسپتالوں سے متعلقہ بِل میں ترمیم۔ جیل کی سزا حذف کردی گئی

پچھلے کچھ دنوں سے حکومت کرناٹکا اور پرائیویٹ ڈاکٹروں کے درمیان جس بِل کو لے کر تنازعہ کھڑا ہوگیا تھا اس پر حکومت نے پسپائی اختیار کرتے ہوئے KPMEایکٹ کے ترمیم شدہ بل کوذرا نرم کرکے اسمبلی سیشن میں پیش کردیاہے اور مریض کے سلسلے میں ڈاکٹر یا اسپتال کی غلطی کے لئے 6مہینے سے 3سال تک ...

بھٹکل میں پرشورام اسپورٹس کلب کے زیر اہتمام 25اور26نومبر کو بین الاضلاع کبڈی ٹورنامنٹ کا انعقاد

پرشورام اسپورٹس کلب (ر) موڈ بھٹکل کے زیر اہتمام25اور26نومبر کو شہر کے گرو سدھیندرا کالج میدان میں اترکنڑا، شیموگہ ، اُڈپی اضلاع پر مشتمل بین الاضلاع کبڈی ٹورنامنٹ منعقد کئے جانے کی منتظمین نے پریس کانفرنس کے ذریعے جانکاری دی ۔

بھٹکل کے کتورچنما رہائشی اسکول میں16 بچوں کے بیمار پڑنے کا معاملہ: افسران نے کیا معائنہ؛ ہوسٹل میں غذا بالکل معیاری

تعلقہ کے پرورگا میں واقع سرکاری کتورچنما رہائشی اسکول کے ہاسٹل میں  16 بچے بیمار ہوکر سرکاری اسپتال میں داخل کئے جانے کی اطلاعات کے بعد  بھٹکل تعلقہ انتظامیہ کے آفسران نے متعلقہ اسکول پہنچ کر معائنہ کیا اور خود بھی بچوں کے ساتھ  دوپہر کے کھانے میں شریک ہوئے۔ بعدمیں ...