ہریانہ:بجرنگ دل کے غنڈوں کے ہاتھوں مسلم کاروباری کی پٹائی کے معاملے میں ایک اور شخص گرفتار

Source: S.O. News Service | Published on 16th July 2017, 10:16 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی،16/جولائی (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) امرناتھ یاتریوں پر حالیہ دہشت گردانہ حملے کے خلاف بجرنگ دل کے کارکنوں کے مظاہرے کے دوران زبردستی ’بھارت ماتا کی جے‘ کے نعرے لگانے سے انکار کرنے کی وجہ سے ایک مسلم تاجر کے ساتھ مار پیٹ کرنے نے کے الزام میں ایک اور شخص کو اتوار کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔پولیس نے یہ معلومات دی۔انہوں نے بتایا کہ حصار میں گاندھی ڈیری کالونی کے رہائشی کپل کو پنچکولہ سے گرفتار کیا گیاہے،ملزم کو یہاں ڈیوٹی مجسٹریٹ کے سامنے پیش کیا گیا جہاں سے اسے 14دن کی عدالتی حراست میں بھیج دیا گیا۔حصار کے رشی نگر کے رہائشی انل کمار(28)کو اسی معاملے میں بدھ کو گرفتار کیا گیا تھا۔بجرنگ دل کے کارکنوں نے امرناتھ دہشت گردانہ حملے کی مخالفت میں بدھ کو حصار میں ایک مسجد کے قریب مارچ نکالا تھا۔اتر پردیش میں سہارنپور کے ایک کاروباری اس دن مسجد میں نماز ادا کرنے آئے تھے، تبھی بھیڑ میں سے کسی نے اس سے نعرے لگانے کو کہا۔پولیس کے مطابق جب کاروباری نے منع کیا تو ہجوم میں سے کسی ایک نے مبینہ طور پر اسے تھپڑ مار دیا۔کاروباری نے تقریبا 100نامعلوم افراد کے خلاف شکایت درج کرائی تھی۔بجرنگ دل کے ایک لیڈر نے پہلے کہا تھا کہ تنظیم کے کسی بھی شخص نے کاروباری کو تھپڑ نہیں مارا تھا۔
 
 

ایک نظر اس پر بھی