جیتنے پر اوم پرکاش چوٹالہ ہی بنیں گے صوبہ کے وزیر اعلی: ابھے چوٹالہ

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 12th June 2018, 11:23 PM | ملکی خبریں |

جند 12جون ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا ) اسمبلی میں حزب اختلاف کے رہنما ابھے سنگھ چوٹالہ نے وزیر اعلی کے عہدے کے امیدوار کو لے کر چل رہی بات چیت پر فل اسٹاپ لگاتے ہوئے کہا کہ اسمبلی انتخابات میں جیتنے کی پوزیشن میں اوم پرکاش چوٹالہ ہی صوبہ کے وزیر اعلی بنیں گے۔ ابھے سنگھ چوٹالہ جیند میں جیل بھرو تحریک کے تحت جیند کی نئی اناج منڈی میں ہزاروں لوگوں کی گرفتاری کے بعد صحافیوں سے بات چیت کر رہے تھے۔انہوں نے دعوی کیا کہ اگلے سال ہونے والے لوک سبھا اور اسمبلی انتخابات میں ملک اور ریاست میں این ڈی اے کی کراری شکست طے ہے۔مرکزی حکومت کی طرف یو پی ایس سی سے باہر متحدہ سیکرٹریوں کی تقرری سے منسلک سوال پر ابھے چوٹالہ نے الزام لگایا کہ بی جے پی اہم عہدوں پر آر ایس ایس کے کارکنوں کو بٹھانا چاہتی ہے۔ ہریانہ میں سینئر آئی اے ایس افسر کی طرف سے خواتین افسر کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کے معاملے پر انہوں نے کہا کہ حکومت کو اس کی فوری طور پر انکوائری کرانی چاہئے اور جو بھی مجرم ہے، اس کو فوری طور پر سزا دینی چاہئے۔ چوٹالہ نے کہا کہ کانگریسی اپنا وجود بچانے کے لئے کہیں رتھ تو کہیں سائیکل سفر نکال رہے ہیں۔ ایس وائی ایل نہر کے مسئلے پر سپریم کورٹ کے احکامات کو نافذ کرنے کی بجائے مرکزی حکومت معاملہ ٹالنے کی کوشش کر رہی ہے۔

ایک نظر اس پر بھی

وزیراعظم مودی نے کابینہ سمیت سونپا صدرجمہوریہ کو استعفیٰ، 30 مئی کو دوبارہ حلف لینےکا امکان

لوک سبھا الیکشن کے نتائج کے بعد جمعہ کی شام نریندرمودی نے وزیراعظم عہدہ سے استعفیٰ دے دیا۔ ان کے ساتھ  ہی سبھی وزرا نے بھی صدرجمہوریہ کواپنا استعفیٰ سونپا۔ صدر جمہوریہ نےاستعفیٰ منظورکرتےہوئےسبھی سے نئی حکومت کی تشکیل تک کام کاج سنبھالنےکی اپیل کی، جسے وزیراعظم نےقبول ...

نوجوت سنگھ سدھوکی مشکلوں میں اضافہ، امریندر سنگھ نے کابینہ سے باہرکرنے کے لئے راہل گاندھی سے کیا مطالبہ

لوک سبھا الیکشن میں زبردست شکست کا سامنا کرنے والی کانگریس میں اب اندرونی انتشار کھل کرباہرآنے لگی ہے۔ پہلےسے الزام جھیل رہے نوجوت سنگھ سدھو کی مشکلوں میں اضافہ ہونےلگا ہے۔ اب نوجوت سنگھ کوکابینہ سےہٹانےکی قواعد نے زورپکڑلیا ہے۔

اعظم گڑھ میں ہارنے کے بعد نروہوا نے اکھلیش یادو پر کسا طنز، لکھا، آئے تو مودی ہی

بھوجپوری سپر اسٹار نروہوا (دنیش لال یادو) نے لوک سبھا انتخابات کے دوران سیاست میں ڈبیو کیا تھا،وہ بی جے پی کے ٹکٹ پر یوپی کی ہائی پروفائل سیٹ اعظم گڑھ سے انتخابی میدان میں اترے تھے لیکن اترپردیش کے سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو کے سامنے نروہا ٹک نہیں پائے۔