کرناٹک انتخابات کے ختم ہوتے ہی تیل کمپنیوں نے بڑھائے پٹرول-ڈیزل کے دام

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 14th May 2018, 9:41 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی:14/مئی (ایس اونیوز /آئی این ایس انڈیا)کرناٹک اسمبلی انتخابات کے پیس منظر میں لیڈران کی ہذیان گوئی اور الزام تراشیوں کے ’ناٹک‘ کے بعد عوام کو اب پھر ایک با ر اپنی جیب ڈھیلی کرنی پڑرہی ہے۔واضح ہوکہ اسمبلی ا نتخابات کی ووٹنگ ہونے کے بعد پیٹرول کی قیمت میں 17 پیسے جبکہ ڈیزل کی قیمت میں 21 پیسے اضافہ کیا گیا ہے۔ تیل کمپنیوں نے تقریبا 20 دن بعد پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں تبدیلی کی ہے۔ پچھلی بار23اپریل 2018 کو تیل کمپنیوں میں پیٹروکیمیکل مصنوعات کے دام بڑھائے تھے۔نان برانڈیڈپٹرول کے بعد74.63روپے فی لیٹرسے بڑھا 74.80 روپے فی لیٹر کیا گیا ہے جبکہ نان برانڈیڈڈیزل کے دام 65.93 روپے فی لیٹرسے بڑھاکر66.14 روپے فی لیٹر کردیا گیا ہے۔ واضح ہو کہ انڈین آئل کارپوریشن (آئی او سی) کے چیئرمین سنجیو سنگھ نے کہا تھا کہ پٹرول،ڈیزل کی قیمتوں میں 24 اپریل سے نہ بدلنے کا مقصد مستحکم بنانے کے تحت اٹھایا گیا قدم ہے۔ انہوں نے کہا کہ کرناٹک انتخابات کے وقت یہ ہونا محض اتفاق ہے۔ انہوں نے کہا کہ قیمتیں مستحکم کرنے سے پہلے ہر روز یہ 25-35 پیسے گھٹ  بڑھ رہی تھی۔ اس سے ہر 15 دن میں ایندھن کی قیمتیں 2-3 روپے بدل جاتی تھیں۔ انہوں نے نامہ نگاروں سے کہاکہ ہمارا خیال ہے کہ یہ غیر حقیقی ہے۔ چنانچہ ہم نے اسے مستحکم کرنے کا فیصلہ کیا۔ اتفاق سے یہ کچھ ریاستوں کے انتخابات سامنے آگئے، یہ طے نہیں ہے۔ قابل ذکرہے کہ امریکہ اورایران کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کی وجہ سے بین الاقوامی مارکیٹ میں خام تیل کی قیمت میں اضافہ ہوا ہے۔ امریکی صدرڈونالڈ ٹرمپ کے ایران کے ساتھ نیوکلیئرمعاہدہ توڑنے کے اعلان کے بعدبدھ کوبرینٹ کروڈ کی قیمت فی بیرل77ڈالرسے زیادہ ہوگئی۔ یہ نومبر 2014 کے بعد پہلی بار ہے جب خام تیل کی قیمت 77 ڈالر فی بیرل سے زیادہ ہوگئی ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

تمل ناڈو کے سلیم ضلع میں زلزلہ کے معمولی جھٹکے 

تمل ناڈو میں سلیم ضلع کے کئی حصوں میں آج 3.3 شدت کا زلزلہ آیا جس سے خوف زدہ ہوکر لوگ سڑکوں پر نکل آئے۔حکام نے بتایا کہ زلزلے سے کسی طرح کے جان و مال کے نقصان کی خبر نہیں ہے۔انہوں نے بتایا کہ صبح قریب سات بج کر 50 منٹ پر توتی پتی ، اما پٹئی ، اوملور، تھرامنگلم اور کنن گوریچی میں کچھ ...

مطلقہ کے نان و نفقہ کا انتظام ہوتو طلاق ثلاثہ بل کی حمایت کریں گے : کانگریس 

تین طلاق کے مسئلے پر کانگریس نے مرکزی حکومت کے سامنے خواتین گزارہ بھتہ دینے کی شرط رکھ کر پی ایم نریندر مودی کے داؤ پر پانی پھیر دیا ہے۔ دراصل مودی مسلسل تین طلاق کے معاملے پر کانگریس کی طرف سے حمایت نہیں دیے جانے کو لے کر نشانہ لگاتے رہے ہیں ۔حال ہی میں راہل گاندھی نے مودی کو خط ...

بی جے پی کی شکست کے لیے ہم کسی بھی پارٹی سے اتحاد کے لیے تیارہیں : مایاوتی 

بی جے پی کو شکست دینے کے لئے بی ایس پی کسی بھی پارٹی سے اتحاد کو تیار ہے۔ اس فیصلے کا اعلان خود مایاوتی نے کیا۔ دہلی میں ان کے گھر پر ملک بھر سے آئے بی ایس پی کے کو آرڈنیٹر کی میٹنگ ہوئی۔ مایاوتی نے بی ایس پی لیڈروں کو میڈیا سے دور رہنے کی صلاح دی ہے۔ انہوں نے خبردار کرتے ہوئے کہا ...

تمام حزب اختلاف جماعتیں مل کر بی جے پی کوشکست دیں گی :راہل گاندھی

کانگریس ورکنگ کمیٹی کی میٹنگ میں پارٹی صدر راہل گاندھی نے 2019 کی حکمت عملی اور الیکشن جیتنے کے نکات پر گفتگو کی۔ انہوں نے کہا کہ آج پارٹی کے لوگوں نے مل کر بی جے پی اور وزیر اعظم نریندر مودی کو شکست دینے کے لئے واضح طور پر غور وخوض کیا ہے کہ حزب اختلاف کی تمام جماعتیں مل کر انہیں ...

اقلیتی طالبات کو مرکزی حکومت نے دیا یہ بڑا تحفہ

مرکزی اقلیتی کام وزارت کی جانب سے اسکولی طالبات کو دی جانے والی اسکالر شپ کے لئے مقررہ بجٹ میں اس بار تقریبا 15 فیصد تک کا اضافہ کا فیصلہ کیاگیا ہے۔ وزارت کی ماتحت ادارے مولانا آزاد ایجوکیشن فاؤنڈیشن نے اسکولی طالبات کے لئے چلائی جانے والی اپنی ’بیگم حضرت محل قومی اسکالرشپ ...

لوک سبھا انتخابات سے قبل پارٹی مضبوط کرنے میں مصروف کانگریس 

لوک سبھا انتخابات سے پہلے کانگریس نے بہار میں عوام کی سطح پر تنظیم کو مضبوط بنانے کی کوشش شروع کی ہے جس کے تحت وہ ریاست کے ہر گاؤں میں کمیٹی کا قیام اور پنچایت صدر کی تقرری کرنے جا رہی ہے۔ اس کے ساتھ ہی کانگریس نے ممبران اسمبلی اور قانون ساز کونسل اراکین کو ضلع چارج کی ذمہ داری ...