فلسطین میں پرامن مظاہرین پر اسرائیلی حملوں کی روس کی طرف سے شدید مذمت

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 11th April 2018, 12:03 AM | عالمی خبریں |

ماسکو 10 اپریل ( ایس او نیوز؍آئی این ایس انڈیا) روسی وزارت خارجہ نے فلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پر اسرائیلی فوج کی جانب سے طاقت کے استعمال کی شدید مذمت کرتے ہوئے صہیونی فوج کی کارروائیوں کو مسترد کردیا ہے۔

نامہ نگار کے مطابق روسی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ صہیونی فوج کا غزہ میں پرامن شہریوں کے جلوسوں پر طاقت کا وحشیانہ استعمال قطعا ناقابل قبول ہے۔ ہم فلسطینیوں اور اسرائیلیوں دونوں پر زور دیتے ہیں کہ وہ معاملے کی کشیدگی کی خطرناک سطح کی طرف نہ لے جائیں۔بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ماسکو گزہ میں حالیہ ایام میں پرامن فلسطینی مظاہرین پر اسرائیلی حملوں کی تحقیقات میں مدد کے لیے تیار ہے۔ حال ہی میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹیرس نے بھی غزہ میں پرامن مظاہرین کی شہادتوں کی آزادانہ تحقیقات کا مطالبہ کیا تھا۔خیال رہے کہ 30 مارچ کو فلسطین میں یوم الارض کے موقع پر لاکھوں فلسطینیوں نے مشرقی سرحد کی طرف مارچ کیا۔ اسرائیلی فوج نے پرامن مظاہرین پرگولیاں چلائیں جس کے نتیجے میں ڈیڑھ درجن فلسطینی شہید ہوگئے تھے۔ دوسرے جمعہ کو دوبارہ طاقت کا استعمال کیا گیا جس میں مزید ایک درجن فلسطینی شہری شہید ہوگئے۔ قابض فوج کی فائرنگ اور شیلنگ کینتیجے میں 3 ہزار فلسطینی زخمی ہوچکے ہیں۔

ایک نظر اس پر بھی

نیویارک کے مرکزی علاقے میں زیر زمین بھاپ پائپ لائن پھٹنے سے دھماکے

نیویارک شہر کے فائر ڈپارٹمنٹ نے کہا ہے کہ مین ہیٹن کی گلیوں میں زیر زمین گزرنے والا ایک ہائی پریشر بھاپ کا پائپ پھٹ گیا جس کے نتیجے میں ففتھ ایونیو کے مرکز میں واقع ایک سوراخ سے بھاپ نکل کر ہوا میں پھیلنا شروع ہو گئی۔

ترک بچوں اور خواتین کا جنسی استحصال کرنے والا خود ساختہ مذہبی رہنما گرفتار

استنبول کی ایک عدالت نے بزعم خود ایک اسلامی فرقے کے رہنما اور ٹی وی پر تبلیغ کرنے والی شخصیت عدنان اوکتار کو 115 دیگر پیروکاروں سمیت مختلف الزامات کی مزید تفتیش کے لئے پولیس کے حوالے کر دیا ہے۔ عدنان اوکتار پر جرائم پیشہ گینگ قائم کرنے، دھوکادہی اور جنسی استحصال کے الزامات ہیں۔

مقتدیٰ الصدر نے مظاہرین کی حمایت کردی ،نئی حکومت کی تشکیل مُوَخَّر کرنے کا مطالبہ

عراق کے سرکردہ شیعہ لیڈر مقتدیٰ الصدر نے ملک کے جنوبی صوبوں میں احتجاج کرنے والے مظاہرین کی حمایت کردی ہے او ر تمام متعلقہ سیاست دانوں پر زور دیا ہے کہ وہ مظاہرین کے بہتری شہری خدما ت کی فراہمی کے مطالبات پورے ہونے تک نئی حکومت کی تشکیل کے لیے مذاکرات کا سلسلہ معطل کردیں ۔