صرف مسلمان ہی نہیں ہندو بھی بیف کھاتے ہیں، کرناٹک میں بیف پرپابندی کا نوٹیفکیشن جاری نہیں ہوگا: وزیراعلٰی سدرامیا

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 13th July 2017, 11:07 AM | ریاستی خبریں |

بنگلورو،12؍ جولائی (ایس او نیوز) کرناٹک کے وزیراعلی سدرامیا نے کہا کہ صرف مسلمان ہی نہیں ہندو بھی بیف کھاتے ہیں۔ بنگلورو میں عید ملن تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلی نے کہا کہ بیف پرپابندی کے سلسلے میں مرکزی حکومت کے نوٹفیکشن کو وہ جاری نہیں کریں گے۔ کرناٹک پردیش کانگریس کمیٹی کے اقلیتی شعبہ کے تحت منعقدہ عید ملن تقریب میں وزیراعلی نے کہا کہ ہرشہری کواپنی پسند کی غذا کھانے کا حق حاصل ہے۔ انہوں نے کہا کہ لوگ فرقہ پرست اور سماج دشمن طاقتوں سے باخبررہیں اور ریاست میں امن وامان برقراررکھیں

 سدرامیا نے کہا کہ اُنہوں نے بیف نہیں کھایا لیکن اگر وہ کھاتے ہیں توکسی کوسوال کرنے کا حق نہیں پہنچتا۔ وزیراعلی نے کرناٹک میں فرقہ وارانہ ہم آہنگی برقراررکھنے پرزوردیا۔ عید ملن پروگرام میں  وزیر اعلی  نے کہا کہ ساحلی علاقے اور چند دیگرعلاقوں میں فرقہ پرست طاقتیں امن وامان کو دھچکا پہنچانے کی کوشش کررہی ہیں۔ اُنہوں نے کہا کہ سماج دشمن اور فرقہ پرست طاقتوں سے لوگ خبرداررہیں۔ ہم پرانے قانون پرعمل کریں گےلیکن مرکز کے نوٹفیکشن کوجاری نہیں کریں گے۔ صرف مسلمان ہی بیف نہیں کھاتے۔ یہ بھی حقیقت ہے کہ سبھی مسلمان بھی بیف نہیں کھاتے اور سب ہندو  بھی نہیں کھاتے۔ انہوں نے کہا کہ چند ہندومسلمان بھی کھاتے ہیں  ۔ میں نے نہیں کھایا ہے۔ لیکن اگرکھانا چاہوں توکھاؤں گا ۔ آپ سوال کرنے والے کون ہوتےہیں؟

ایک نظر اس پر بھی

جے ڈی ایس ،بی جے پی کی مدد کر رہی ہے ، مودی نہیں بلکہ سدرامیا کھیل کو حقیقی طورپر تبدیل کرنے والے ہیں: کے سی وینوگوپال

اے آئی سی سی کے جنرل سکریٹری و انچارج کرناٹک کے سی وینوگوپال نے کہا ہے کہ جے ڈی ایس کی 12مئی کو ہونے والے انتخابات میں موجودگی صرف کانگریس کے ووٹوں کی تقسیم ہے اور ایچ ڈی دیوے گوڑا کی زیرقیادت پارٹی کا واحد نکاتی ایجنڈہ سدرامیا کو شکست دینا اور بی جے پی کی مدد کرنا ہے ۔