ہوسپیٹ کے رکن اسمبلی آنند سنگھ کے خلاف غیرضمانتی وارنٹ جاری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th March 2019, 12:32 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 14؍مارچ(ایس او نیوز) خام دھات کی غیرقانونی منتقلی اور کارکن کنی معاملہ سے متعلق وجئے نگر(ہوسپیٹ)کے رکن اسمبلی آنندسنگھ کے خلاف غیرضمانتی وارنٹ جاری کیاگیاہے۔ عوامی نمائندوں کے خلاف کریمنل مقدمات کی سماعت کرنے والی خصوصی عدالت نے غیرضمانتی وارنٹ جاری کیاہے۔ بروز چہارشنبہ اس معاملہ کے اہم ملزمین جناردھن ریڈی، دست راست علی خان، ناگیندرا اور سریش بابو شنوائی کے لئے عدالت آئے ہوئے تھے۔ آنند سنگھ غیرحاضررہے، سماعت کے وقت آنند سنگھ کے وکیل نے اپنے موکل کو ذاتی طورپر حاضرہونے سے رعایت دینے کی عرضی داخل کی ہے، ریسارٹ میں ہوئے جھگڑے کی وجہ سے وہ زخمی ہیں اور اسپتال میں زیر علاج ہیں۔ اس لئے آنند سنگھ کو حاضرہونے سے رعایت دی جائے۔ اس کی عرضی کے ساتھ وکیل نے اسپتال کی دستاویزات بھی پیش کیں۔ لیکن آنند سنگھ حملہ کا شکار ہونے سے پہلے بھی عدالت میں حاضرنہیں ہوئے تھے ،جج نے آنند سنگھ کے سابق رویہ پر بھی اعتراض کیا اور کہا کہ اس وقت عدم حاضری کی کیاوجہ تھی؟ یہ کہتے ہوئے غیرضمانتی وارنٹ جاری کرنے کی ہدایت دی

ایک نظر اس پر بھی

بنگلورنارتھ حلقہ سے کانگریس ٹکٹ دی جائے ورنہ بنگلور سنٹرل سے آزاد امیدوار بن جاؤں گا: ایچ ٹی سانگلیانہ

نگلورنارتھ لوک سبھا حلقہ سے مجھے کانگریس کی ٹکٹ دی جائے۔ پارٹی ہائی کمان اگر شام تک فیصلہ نہیں کرے گا تو آزاد امیدوار کے طورپر انتخابی میدان میں اتر جاؤں گا۔ یہ باتیں سابق رکن پارلیمان ایچ ٹی سانگلیانہ نے کانگریس قائدین کو انتباہ دیتے ہوئے کہیں۔

جے ڈی ایس نے بنگلورنارتھ کانگریس کے لئے چھوڑدیا بی یل شنکر کو میدان میں اتارے جانے کا امکان

کرناٹک میں لوک سبھا انتخابات کے پہلے مرحلہ کے کاغذات نامزدگی داخل کرنے کے لئے صرف ایک دن باقی ہے۔ کانگریس نے آج کہاہے کہ مخلوط پارٹنر جے ڈی ایس نے بنگلور نارتھ حلقہ کی سیٹ کانگریس کے لئے چھوڑ دی ہے۔

سابق ماہی گیر وزیر پرمود مادھوراج نےملپے سے سات ماہی گیروں کے ساتھ بوٹ کی گم شدگی کے لئے نیوی کو قرار دیا ذمہ دار

اڈپی اورچکمگلورو سیٹ سے جنتادل اور کانگریس کے مشترکہ امیدوار اور سابق وزیر ماہی گیری پرمود مادھو راج نےسات ماہی گیروں کے ساتھ سوورنا تریبھوجا نامی کشتی کی گم شدگی کے لئے بحری فوج کو ذمہ دار قرار دیا ہے۔

انتخابات کیلئے سرمایہ اکٹھا کرنے اولاٹیکسی پرپابندی عائد کی گئی تھی۔ گوڑا

مرکزی وزیر ڈی وی سداننداگوڑا نے الزام لگایا ہے کہ انتخابات کے لئے سرمایہ توقع کے مطابق جمع نہ ہونے کی وجہ سے کانگریس ۔ جنتادل (یس) مخلوط حکومت نے اولا ٹیکسی خدمات پر6؍ماہ کے لئے پابندی عائد کی تھی۔