ہوسپیٹ کے رکن اسمبلی آنند سنگھ کے خلاف غیرضمانتی وارنٹ جاری

Source: S.O. News Service | By Shahid Mukhtesar | Published on 14th March 2019, 12:32 PM | ریاستی خبریں |

بنگلورو، 14؍مارچ(ایس او نیوز) خام دھات کی غیرقانونی منتقلی اور کارکن کنی معاملہ سے متعلق وجئے نگر(ہوسپیٹ)کے رکن اسمبلی آنندسنگھ کے خلاف غیرضمانتی وارنٹ جاری کیاگیاہے۔ عوامی نمائندوں کے خلاف کریمنل مقدمات کی سماعت کرنے والی خصوصی عدالت نے غیرضمانتی وارنٹ جاری کیاہے۔ بروز چہارشنبہ اس معاملہ کے اہم ملزمین جناردھن ریڈی، دست راست علی خان، ناگیندرا اور سریش بابو شنوائی کے لئے عدالت آئے ہوئے تھے۔ آنند سنگھ غیرحاضررہے، سماعت کے وقت آنند سنگھ کے وکیل نے اپنے موکل کو ذاتی طورپر حاضرہونے سے رعایت دینے کی عرضی داخل کی ہے، ریسارٹ میں ہوئے جھگڑے کی وجہ سے وہ زخمی ہیں اور اسپتال میں زیر علاج ہیں۔ اس لئے آنند سنگھ کو حاضرہونے سے رعایت دی جائے۔ اس کی عرضی کے ساتھ وکیل نے اسپتال کی دستاویزات بھی پیش کیں۔ لیکن آنند سنگھ حملہ کا شکار ہونے سے پہلے بھی عدالت میں حاضرنہیں ہوئے تھے ،جج نے آنند سنگھ کے سابق رویہ پر بھی اعتراض کیا اور کہا کہ اس وقت عدم حاضری کی کیاوجہ تھی؟ یہ کہتے ہوئے غیرضمانتی وارنٹ جاری کرنے کی ہدایت دی

ایک نظر اس پر بھی

بی جے پی کے سینئر لیڈر آر اشوک نے سدارامیا اور کمار سوامی سے استعفیٰ کا مطالبہ کیا

وکھے درخت کے پتوں کی مانند جھڑرہے کانگریس اراکین اسمبلی کی آنکھوں میں اندھیراچھا گیا ہے۔ انہیں آگے کوئی راستہ نظر نہیں آرہا ہے۔ ریاست کے عوام نے مخلوط حکومت کی چڈی پھاڑدی ہے۔ اس قسم کی طنزیہ باتیں بی جے پی کے سینئر قائدآر اشوک نے کہیں۔

کرناٹک پبلک اسکولوں میں سرکاری اسکولوں کو ضم نہیں کیا جائے گا

سرکاری اسکولوں کو ضم کئے بغیر ہی کرناٹک پبلک اسکول چلانے کی تجویز محکمہ تعلیمات کے زیر غور ہے ۔ سرکاری نظام کے تحت ایک ہی پلاٹ فارم پر پہلی سے بارھویں جماعت تک کی تعلیم کی سہولت فراہم کرنے کے مقصد سے کرناٹک پبلک اسکولوں کا انعقاد 2018-19 سے ہی شروع ہوگیا تھا ۔

کمارسوامی نے وزیراعلیٰ کا عہدہ دیش پانڈے کو سونپنے کی رکھی تھی شرط ، کانگریس لیڈران رہ گئے دنگ؛ کماراسوامی کی قیادت پر ہی ظاہر کیا گیا اعتماد

لوک سبھا انتخابات میں کانگریس جے ڈی ایس اتحاد کی رسواکن شکست کے بعد کل وزیراعلیٰ کمار سوامی کی قیادت میں طلب کی گئی غیر رسمی کابینہ میٹنگ کے دوران وزیراعلیٰ کمار سوامی کی طرف سے استعفے کی پیش کش کے متعلق چند نئے انکشافات سامنے آئے ہیں۔