ڈاکٹر زاہد تماپوری این سی پی یو ایل (مرکزی کونسل برائے فروغ اردو) کے رکن نامزد ، گلبرگہ ، بنگلور ، تماپور ۔ شوراپور ، رام نگر اور دیگر مقامات کے محبان اردو کی جانب سے مبارک باد

Source: S.O. News Service | By Jafar Sadique Nooruddin | Published on 9th December 2018, 1:20 AM | ریاستی خبریں | ملکی خبریں |

بنگلور:8/دسمبر (ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا) ڈاکٹر زاہد تماپوری متوطن گلبرگہ حال مقیم بنگلور کو مرکزی وزارت برائے فروغ انسانی وسائل حکومت ہند کے محکمہ ہائیر ایجوکیشن کی تشکیل جدید میں تین سال کی مدت کے لئے اردو اسکالرس کے ذمرہ سے گورننگ کونسل کا رکن نامزد کیا گیا ہے ۔ ڈاکٹر زاہد تماپوری ریاست کرناٹک کے اردو اسکالرس میں شمار کئے جاتے ہیں ۔ انھوں نے گلبرگہ یونیورسٹی سے 1987میں قائد ملت نواب بہادر یار جنگ پر پی ایچ ڈی حاصل کی ہے۔ قائد ملت بہادر یادر جنگ ایم آئی ایم کے بانی اور اس کے پہلے صدر رہے ہیں ۔ اپنے مقالہ میں انھوں نے ''خطابت''کو فنون لطیفہ کی شاخ قرار دیا ہے۔ وہ اپنے اسکول ، کالج اور یونیورسٹی کے زمانہ سے ہی تقریری مقابلہ جات میں حصہ لے کر مسلسل انعامات حاصل کرتے رہے ہیں ۔ شوراپور پربھو کالج کے میرٹ اسٹوڈینٹ رہے ہیں ۔ 1995میں قائد ملت نواب بہادر یار جنگ کی طرز پر ڈاکٹر زاہد تماپوری نے شہر گلبرگہ میں درس اقبال ؒ کی محافل کا انعقاد کرکے اقبالیات کے میدان میں بر صغیر میں نئی تاریخ رقم کی ہے ۔یاد رہے کہ درس اقبال کے پہلے اجلاس کی صدارت قائد محترم قمر الاسلام صاحب مرحوم نے فرمائی تھی ۔ جس کا انعقاد فارن ہائی اسکول گلبرگہ کے وسیع و عریض ہال میں کیا گیا تھا اور بعد میں اس کے کئی اجلاس غالب ہال نیشنل کالج میں بھی منعقد کئے گئے تھے ۔ ڈاکٹر اہد تماپوری نے رحمت العالمین کے جلسہ سے قبل محترم قمر السلام صاحب اور قیصر محمود منیار مرحوم سابق رکن اسمبلی گلبرگہ کی نگرانی میں محترم سید غوث خاموشی مرحوم کی ہدایت پر اسلامک اسٹڈیز سرکل کے زیر اہتمام سیرت رسول ﷺ پر طلبا گلبرگہ کے لئے تقریری اور تحریریمقابلہ جات کا اہتمام کیا جن میں سینکڑوں طلبا اردو نے حصہ لیا ۔ ڈاکٹرزاہد تماپوری نے آل انڈیا ریڈیو اور دور درشن کے پروگراموں میں شرکت کرکے اپنی صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا ۔ اس کے علاوہ اسکولس ، کالجوں اور یونیورسٹی میں سیمینارس و سمپوزئیمسؤمیں کامیابی کے ساتھ حصہ لیا ۔ ڈاکٹر زاہد تماپوری کے رکن گورننگ کونسل فروغ اردو NCPULکی نامزدگی پر ان کے قریبی دوست خالد احمد تالی کوٹی اور ان کے فرزند بین الاقوامی شہرت یافتہ کیانسر کے مشہور سرجن ڈاکٹر ماجد احمد تالی کوٹی، نذیر استاد تماپوری ، سینئیر صحیفہ نگاران ایم اے حکیم شاکر، محبوب علی، کے علاوہ ان کے دوست احباب ، اہل تماپور و شوراپؤور ، یادگیر ، شاہپور،کولارشموگہ ، رام نگرم اور بنگلور نے بھی مبارک باد دی ہے۔ 

ایک نظر اس پر بھی

کاروار کائیگا جوہری توانی پلانٹ کا توسیعی منصوبہ۔ ماحولیات کے لئے فکر مند افراد کا احتجاج

ابھی دو تین دن ہی ہوئے ہیں جب کاروار میں واقع کائیگا جوہری توانائی کے مرکز میں موجود یونٹ نمبر 1میں مسلسل 941دنوں تک یورینیم کے بھاری پانی سے بجلی پیدا کرنے کا عالمی ریکارڈ قائم کیا گیا تھا۔ اس ریکارڈ سے دیسی ساخت کے اس پلانٹ کی بہترین اہلیت اور صلاحیت کا مظاہرہ ہواتھا۔

منشیات کے استعمال ،سڑکو ں پر تحفظ اور ماحولیاتی آلودگی سے متعلق بیداری کے لئے بزرگ سائیکل سوار کی مہم؛ بھٹکل میں ایک دن رکنے کے بعد گوا کے لئے روانگی

سڑکو ں پر تحفظ ، منشیات کے استعمال اور ماحولیاتی آلودگی سے متعلق عوام میں بیداری پیدا کرنے کے لئے اڑیسہ کے ایک بزرگ نے سائیکل پرسوارہو کر ملک کی 10 ریاستوں کا سفرکرنے کی مہم چلارکھی ہے۔ 

منگلورو: کانگریس ایم ایل اے کی آر ایس ایس لیڈروں کے ساتھ موجودگی ۔آپریشن کنول کا اشارہ تو نہیں!

ریاست کرناٹک کے مختلف علاقوں میں بی جے پی کی طرف سے آپریشن کنول کا راستہ اپنانے اور کانگریس و جنتادل ایس کی مخلوط حکومت کو گرانے کی سازشیں رچنے کی خبریں وقتاً فوقتاً سر اٹھاتی رہتی ہیں۔ اب تازہ ہوا منگلورو کے قریب کلاڈکا سے چلی ہے جہاں پر آر ایس ایس لیڈر کلاڈکا پربھاکر بھٹ کے ...

کاروار: کائیکا اٹامک پاور اسٹیشن نے مسلسل بجلی تیار کرنے کا ورلڈ ریکارڈ قائم کیا۔ وزیر اعظم مودی نے عملے کو دی مبارکباد

) کائیگا اٹامک پاوراسٹیشن(کے اے پی ایس)میں جوچار یونٹس بجلی تیار کررہے ہیں ان میں سے یونٹ نمبر1نے مسلسل 941 دنوں تک یورینیم کے بھاری پانی(ہیوی واٹر) سے بجلی تیار کرنے کا ورلڈ ریکارڈ بنایا ہے ، جس پر ملک کے وزیر اعظم نریندرمودی نے ہندوستان کے جوہری توانائی پروگرام پر کام کررہے ...

جے پی سی سے جانچ کرانے کا راستہ ا بھی کھلا ہے، عام آدمی پارٹی نے کہا،عوام کی عدالت اورپارلیمنٹ میں جواب دیناہوگا،بدعنوانی کے الزام پرقائم

آپ کے راجیہ سبھا رکن سنجے سنگھ نے کہا ہے کہ رافیل معاملے میں جمعہ کو آئے سپریم کورٹ کے فیصلے کے باوجود متحدہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) سے اس معاملے کی جانچ پڑتال کرنے کا اراستہ اب بھی کھلا ہے۔

رافیل پر سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ، راہل گاندھی معافی مانگیں: بی جے پی

فرانس سے 36 لڑاکا طیارے کی خریداری کے معاملے میں بدعنوانی کے الزامات پر سپریم کورٹ کی کلین چٹ ملنے کے بعد کانگریس پر نشانہ لگاتے ہوئے بی جے پی نے جمعہ کو کہا کہ کانگریس پارٹی اور اس کے چیئرمین راہل گاندھی ملک کو گمراہ کرنے کیلئے معافی مانگیں۔