نوٹ بندی کا مقصد بیکار ہو جائے گا پرانے نوٹ جمع کرانے کا دوبارہ موقع دینے سے حکومت کا صاف انکار،سپریم کورٹ میں داخل کیاحلف نامہ

Source: S.O. News Service | By Sheikh Zabih | Published on 17th July 2017, 9:33 PM | ملکی خبریں |

نئی دہلی18جولائی(ایس اونیوز/آئی این ایس انڈیا)مرکزی حکومت نے پرانے نوٹ تبدیل کرنے کے لیے ایک اور موقع دینے سے صاف انکارکردیاہے۔سپریم کورٹ میں داخل حلف نامے میں مرکز نے کہا کہ اگر 500اور 1000روپے کے پرانے نوٹ جمع کرانے کا دوبارہ موقع دیاگیاتوکالے دھن پر قابو پانے کے لئے کی گئی نوٹ بندی کا مقصد ہی بیکار ہو جائے گا۔ایسے میں گمنام لین دین اور نوٹ جمع کرانے میں کسی دوسرے شخص کا استعمال کرنے کے معاملے بڑھ جائیں گے اور سرکاری محکموں کو یہ پتہ لگانے میں دقت ہو گی کہ کون سے کیس حقیقی ہیں اور کون سے فرضی ہیں۔حکومت نے کہا کہ 1978میں ہوئی نوٹ بندی میں نوٹ جمع کرانے کے لئے صرف 6دن دیے گئے تھے جبکہ اس بار حکومت نے 51دن دیے جو کافی ہیں۔

نوٹ بندی کے وقت چھوٹ دیے جانے کی وجہ سے پٹرول پمپ، ریلوے، ایئر لائنز بکنگ اور ٹول پلازہ پر جم کر کالے دھن کا استعمال کیاگیا۔دراصل 4جولائی کومفادعامہ درخواستوں پر سماعت کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے مرکزی حکومت اور ریزرو بینک سے پوچھا تھا کہ جو لوگ نوٹ بندی کے دوران دیے وقت میں پرانے نوٹ جمع نہیں کرا پائے ان کے لئے کوئی ونڈوکیوں نہیں ہوسکتی؟۔ کورٹ نے کہا تھاکہ جو لوگ جائز وجوہات کے چلتے روپے بینک میں جمع نہیں کرا پائے، ان کی جائیداد حکومت اس طرح نہیں چھین سکتی ہے۔ایسے لوگوں کو پرانے نوٹ جمع کرانے کا صحیح وجہ موجود ہے، انہیں موقع دیاجاناچاہئے۔کورٹ نے یہ بھی کہا تھا کہ اگر کوئی جیل میں ہے تو وہ کس طرح روپے جمع کرائے گا۔حکومت کو چاہئے کہ ایسے لوگوں کے لئے کوئی نہ کوئی ونڈو ضرور دینی چاہئے۔مرکزی حکومت نے اس کے لئے دو ہفتے کا وقت مانگا تھا کہ کیا وہ 9نومبر، 2016سے 30دسمبر، 2016کے درمیان پرانے نوٹوں کو جمع کرنے کی کھڑکی ایک بار دوبارہ کھولنے کے لیے تیار ہے۔
 

ایک نظر اس پر بھی

بہار کے بعد اب یوپی میں بی جے پی کا آپریشن؛ ایس پی اور بی ایس پی دونوں پارٹیوں کے ممکنہ اتحادکوروکنے کی ہرممکن ہوگی کوشش

 بہار میں قلعہ فتح کرنے کے بعد اب بی جے پی کا اگلا نشانہ یوپی ہوگا۔یوپی میں اپوزیشن کے ممکنہ مہاگٹھ بندھن کومنہدم کرنااب بی جے پی کی ترجیح ہے۔نتیش کمارکی حلف برداری کی تقریب کے فوراََبعدیوپی کے وزیراوربڑے لیڈرسددھارتھناتھ سنگھ نے ٹویٹ کرکے اس کا اشارہ کر دیاہے۔

یوپی اسمبلی سے ایس پی اوربی ایس پی ممبران کاواک آؤٹ

 اترپردیش قانون ساز کونسل میں آج ایس پی اوربی ایس پی ممبران نے مختلف مسائل کو لے کر ایوان سے واک آؤٹ کیاہے۔وقفہ صفرکے دوران ایس پی ارکان نے التواء کی تجویزکے ذریعے ریاست میں اساتذہ کے ایڈجسٹمنٹ کا معاملہ اٹھا۔ایس پی ارکان نے کہا کہ پچھلی ایس پی حکومت نے 12ہزار 460بی ٹی سی اساتذہ ...

لالویادوکے خاندان کے خلاف کارروائی کاسلسلہ جاری ای ڈی نے لالویادو، رابڑی،تیجسوی سمیت متعددلیڈروں پر منی لائونڈرنگ کاکیس درج

بہارمیں لالویادو خاندان پرایک اور بحران گہراگیاہے۔ رانچی اور پوری کے ہوٹلوں کو لیز پر دینے کے معاملے میں لالو، رابڑی اورتیجسوی یادو سمیت کئی لوگوں پر کیس درج کیاہے۔

ارون جیٹلی اورکے سی سی تیاگی شرد یادوکو منانے میں مصروف ،مرکزی وزارت پرڈیل ممکن؛ نتیش کمارکواسمبلی میں آج جمعہ کو ثابت کرنا ہوگا اکثریت

نتیش کمار کے مہاگٹھ بندھن چھوڑنے کے بعد بی جے پی کے ساتھ ملنے پر پارٹی کے سینئر لیڈر شرد یادو ناراض ہیں۔انہوں نے نتیش کمار سے اس فیصلے کے خلاف اپنا موقف بتا دیاہے۔جے ڈی یوکے دوسرے سینئر رہنما علی انور نے تو پارٹی کے فیصلے کے خلاف کھل کر بولا بھی ہے اور شرد یادو سے ملنے کے بعد کہا ...

28 جولائی کو بستر آئیں گے راہل گاندھی

کانگریس نائب صدر راہل گاندھی28جولائی کودوروزہ قیام پربسترپہنچیں گے۔راہل گاندھی اس دوران بہت سے پروگراموں میں شامل ہوں گے۔کانگریس جنرل سکریٹری اور چھتیس گڑھ انچارج پی ایل پنیا نے آج یہاں ایک پریس کانفرنس میں بتایاکہ گاندھی 28تاریخ کوبسترضلع کے ہیڈ کوارٹر جگدل پور پہنچیں گے۔