ہاردک کی ’مودی ہراؤ، دیش بچاؤ‘ریلی میں جانے کے فیصلے کو نتیش نے ملتوی کیا

Source: S.O. News Service | Published on 11th January 2017, 11:10 PM | ملکی خبریں |

پٹنہ، 11/جنوری(ایس او نیوز/آئی این ایس انڈیا)بہار کے وزیر اعلی نتیش کمار نے 28/جنوری کو گجرات میں پاٹیدار ریزرویشن تحریک کے محرک ہاردک پٹیل کی مجوزہ’مودی ہراؤ، دیش بچاؤ‘ریلی میں شامل ہونے کے لیے گجرات جانے کا فیصلہ فی الحال ملتوی کر دیا ہے۔جد یو ذرائع کے مطابق اترپردیش کے انتخابات میں مصروفیت کی وجہ سے گجرات جانے کے فیصلے کو کمار نے فی الحال ملتوی کر دیا ہے اور اس کی معلومات ہاردک پٹیل کو دے دی گئی ہے۔قابل ذکر ہے کہ ہاردک پٹیل نے گذشتہ دسمبر میں اپنے بہار دورے کے دوران نتیش کمار سے ملاقات کر کے انہیں گجرات میں منعقد ’مودی ہراؤ، دیش بچاؤ‘ریلی میں حصہ لینے کی دعوت دی تھی جس پرکمارنے اپنی رضامندی ظاہر کر دی تھی۔نتیش کمار نے بہار آنے پر ہاردک پٹیل کو سرکاری مہمان کا درجہ بھی دیا تھا۔وزیراعظم نریندر مودی کی مخالفت کرتے ہوئے ہاردک پٹیل 2017کے انتخابات میں بی جے پی کو اکھاڑپھینکنے کا اعلان کر چکے ہیں جس کے لیے وہ نتیش کمار کی حمایت حاصل کرنا چاہ رہے تھے۔اس درمیان جے ڈی یو کے جنرل سکریٹری کے سی تیاگی نے کہاکہ اگر پٹیل11/مارچ کے بعد ریلی کرتے ہیں تو اس میں نتیش کمار کے شامل ہونے کا امکان بن سکتا ہے۔
3

ایک نظر اس پر بھی

میزورم میں اسرائیلی اشتراک کے ساتھ زراعت کے پہلے علاقائی مرکز کا افتتاح 7 مارچ کو

بھارت میں اسرائیل کے سفیر ڈینئل کارمن نے آج یہاں شمال مشرقی خطے کی ترقی کے مرکزی وزیر مملکت ( آزادانہ چارج )وزیر اعظم کے دفتر ، عملے ، عوامی شکایات اور پنشن ، ایٹمی توانائی اور خلاء کے وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ سے ملاقات کی۔

کجریوال ایمانداراورمہذب آدمی ہیں،شتروگھن سنہانے گھیرا،نیرومودی کے معاملے کوچھپانے کے لیے چیف سکریٹری تنازعہ کھڑاکیاگیا

بی جے پی کے باغی لیڈر شتروگھن سنہا نے مبینہ طور پر بدھ کو کہا کہ بھگوا پارٹی پنجاب نیشنل بینک گھپلہ سے عوام کی توجہ ہٹانے کے لیے دہلی چیف سکریٹری معاملہ کو طول دے رہی ہے۔

دیوبند میں منایا جارہا ہے’’شریعت ہمارا اعزاز ہے‘‘ ہفتہ؛ اسلامک اکیڈمی کے ڈائرکٹر نے کی سراہنا؛ کہا ، پوری امت کی طرف سے فرض کفایہ

دفاع شریعت کے لئے معہد عائشہ صدیقہ قاسم العلوم للبنات دیوبند کی انتظامیہ اور فاضلات کی جانب سے ہفتہ ’’شریعت ہمارا اعزاز ہے ‘‘ پوری امت کی جانب سے فرض کفایہ ہے ،اور ملت کی خواتین میں شریعت کے حوالے سے بیداری لانے کی ایک عظیم کوشش ہے کیونکہ پچھلے کئی سالوں سے تحفظ حقوق نسواں کے ...